پاکستان سعودی عرب اور ایران کے در میان فریق نہ بنے، اسفند یار ولی
تازہ ترین : 1

پاکستان سعودی عرب اور ایران کے در میان فریق نہ بنے، اسفند یار ولی

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔05 جنوری۔2016ء) عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفندیارولی خان نے ایران اورسعودی عرب کے درمیان موجودتناؤکے خاتمے پرزوردیتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں ممالک باہمی تنازعات کو بات چیت کے ذریعے حل کریں۔منگل کو جاری بیان میں اسفندیارولی خان نے کہاکہ پاکستان دواسلامی ممالک کے درمیان فریق نہ بنے جب بھی پاکستان کسی اتحاد میں شامل ہوایافریق بناتوقوم کوخمیازہ بھگتناپڑا۔

افغانستان میں مداخلت کی وجہ سے پاکستان آج تک مشکلات کاشکارہے۔افغانستان،ہندوستان اورپاکستان کے درمیان حکومتی سطح پرامن کے قیام کیلئے کوششوں کوسبوتاژکرنیوالی قوتیں ایک بار پھرسازشوں میں مصروف ہیں ۔پارٹی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات زاہدخان کی طرف سے جاری کردہ بیان میں پارٹی سربراہ اسفند یار ولی خان نے پٹھان کوٹ ہندستان میں حملے اور بھارتی سفارتخانے مزار شریف افغانستان کے حملے بھی باہمی تعاون کو ختم کرنے کی کارروائیاں ہیں،تینوں ممالک کی منتخب عوامی حکومتیں جراتمندی سے کام لیکر بات چیت کے ذریعے ایسالائحہ عمل بنائیں تاکہ امن کی طرف کی گئی پیش قدمی کو روکانہ جا سکے، تینوں ممالک کے سربراہان کوچاہئے کہ امن کے دشمنوں کے مذموم عزائم کوناکام بنانے کیلئے مذاکرات کا عمل جاری رکھیں ۔

وقت اشاعت : 05/01/2016 - 16:36:47

اپنی رائے کا اظہار کریں