محکمہ زراعت نے کپاس کی ریکارڈ پید اوار حاصل کرنے کیلئے نئی حکمت عملی مرتب کرلی ..
تازہ ترین : 1

محکمہ زراعت نے کپاس کی ریکارڈ پید اوار حاصل کرنے کیلئے نئی حکمت عملی مرتب کرلی

ملتان ۔26دسمبر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 دسمبر2016ء)محکمہ زراعت نے کپاس کی ریکارڈ پید اوار حاصل کرنے کے لئے جدید خطوط اور تازہ تحقیق پر مبنی نئی حکمت عملی مرتب کرلی ہے۔زرعی ماہرین نے اس نئی حکمت عملی کو کپاس کے کاشتکاروں کے لئے خوش آئند قراد یا ہے ،یہ حکمت عملی چار مختلف مراحل پر مبنی ہے ،پہلا مرحلہ اقدامات برائے قبل از کاشت ،دوسر ا مرحلہ کا شت دوران کئے جانے والے اقدامات ،تیسر ا مرحلہ پھول اور پھل بنتے وقت کے اقدامات، چوتھا مرحلہ چنائی اور اس اس کے بعد کے اقدامات ہیں، ماہرین کے مطابق گلابی سنڈی کپاس کوصرف سنڈی کی حالت میں نقصان پہنچاتی ہے۔

سب سے پہلے سنڈی ڈوڈیوں پر حملہ آور ہوتی ہے۔ سنڈی پھول میں داخل ہو کر اس کی پتیوں کے سروں کو اپنے منہ سے نکلنے والے لعاب سے خوبصورتی سے بند کر لیتی ہے جس سے وہ مدھانی نما شکل اختیار کرلیتے ہیں لیکن جب فصل پر ٹینڈے بنتے ہیں تو یہ چھوٹے نرم ٹینڈوں میں سوراخ کر کے داخل ہوجاتی ہے اور اندر ہی اندربیجوں کو کھاتی رہتی ہے۔ٹینڈے میں سوراخ بند ہوجاتا ہے۔

متاثرہ ٹینڈا نرم ہو جاتا ہے اسی طرح سفید مکھی اور ملی بگ بھی کپاس کی فصل کے لئے نقصان دہ ہیں ،اس لئے ان کو محکمہ زراعت کے تجویز کردہ مرحلہ پر ہی تلف کرنے کی کوشش کرنی چاہیے، اس طرح اس حکمت عملی میں کسان کو کپاس کی پیداوار بہتر بنانے اور کپاس کو کیڑوں کے حملوں سے محفوظ رکھنے کے بارے دیگر اقدامات سے آگاہ کیا گیا ہے ،محکمہ زراعت کی اس چار نکاتی حکمت عملی مرتب کرنے کا مقصد کپاس کی پیداوار بڑھانا ہے ،محکمہ زراعت نے کپاس میں اضافہ کے لئے کسان دوست اقدامات کئے ہیں ، ماہرین نے اس چار نکاتی حکمت عملی کو موثر اور جاندار قرار دیا ہے ۔
وقت اشاعت : 26/12/2016 - 21:10:45

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں