کمپیوٹرائزیشن آف لینڈ ریکارڈ کے تحت 102اراضی ریکارڈ سنٹرز کا قیام عمل میں آچکا ..
تازہ ترین : 1

کمپیوٹرائزیشن آف لینڈ ریکارڈ کے تحت 102اراضی ریکارڈ سنٹرز کا قیام عمل میں آچکا ‘ ترجمان

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔13اپریل۔2014ء)ترجمان پراجیکٹ مینجمنٹ یونٹ بورڈ آف ریونیو کے مطابق چیف سیکرٹری پنجاب اور سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو پنجاب ندیم اشرف کی رہنمائی کی بدولت پنجاب کی 102تحصیلوں میں اراضی ریکارڈ سنٹرز کے ذریعے عوام الناس کو اجراء فرد ملکیت اور تصدیق انتقالات کی کمپیوٹرائز سہولیات فراہم کی جارہی ہیں جبکہ رواں سال کے اختتام تک تمام تحصیلوں میں ان خدمات کا باقاعدہ آغاز کردیا جائے گا۔

اس سلسلے میں چیف سیکرٹری کی سربراہی میں ڈویژنل ہیڈ کوارٹرز میں متعلقہ اضلاع کے دی سی اوز کے ساتھ اجلاس میں دیگر امور کے علاوہ اس منصوبے پر عملدرآمد کی کارکردگی کا جائزہ اور مانیٹرنگ کی جاری ہے۔مزید بہتر بنانے کے اقدامات پر بھی غور کیا جارہاہے۔ انہوں نے کہا کہ سینئر ممبر بورڈ آف ریو نیو کی جانب سے عملہ مال کی جانب سے آنے والی پس و پیش کا سدباب کیا جارہاہے اور ان کی کارکردگی بہتر بنانے کے تمام ممکن اقدامات و راہنمائی فراہم کرنے بارے بھی تیز تر اقدامات جاری ہیں یہی وجہ ہے کہ لینڈ ریکارڈ مینجمنٹ اینڈ انفارمیشن سسٹم منصوبہ کو تمام اداروں بشمول محکمہ مال کا بھرپور تعاون حاصل ہے جس کی بدولت یہ منصوبہ تکمیل کی جانب رواں دواں ہے جس کے لیے پراجیکٹ مینجمنٹ یونٹ تمام انتظامی مشینری اور اداروں کا بے حد مشکور ہے۔

وقت اشاعت : 13/04/2014 - 17:08:15

اپنی رائے کا اظہار کریں