دینی مدارس کے خلاف قومی اسمبلی سے کوئی قانون پاس نہیں ہونے دیں گے ، مولانا فضل ..
تازہ ترین : 1

دینی مدارس کے خلاف قومی اسمبلی سے کوئی قانون پاس نہیں ہونے دیں گے ، مولانا فضل الرحمن ، مذاکرات کے لئے فوج سمیت تمام اداروں کو اعتماد میں لینا حکومت کی ذمہ داری ہے ، انٹرویو

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔8مارچ۔2014ء) جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ دینی مدارس کے خلاف قومی اسمبلی سے کوئی قانون پاس نہیں ہونے دیں گے ، مذاکرات کے لئے فوج سمیت تمام اداروں کو اعتماد میں لینا حکومت کی ذمہ داری ہے۔ایک انٹرویو میں مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ اگر حکومت کی جانب سے دینی مدارس کے خلاف کوئی قانون پیش کیا گیا تو جمعیت علمائے اسلام(ف) اس کی بھرپور مخالفت کرے گی اور اسمبلی سے مدارس کے خلاف قانون کو پاس نہیں ہونے دیں گے، مذاکرات سے متعلق مولانا فضل الرحمان نے کہاکہ حکومت کی جانب سے مذاکرت کے نام پر غیر سنجیدہ کام کیا گیا، مذاکرات کے لئے جے یو آئی (ف) نے قبائلی جرگے کی صورت میں پلیٹ فارم دیا جب کہ حکومت غیر ضروری مسائل کو چھیڑ رہی ہے۔

مولانا فضل الرحما ن نے کہا کہ مذاکرات کے لئے فوج سمیت تمام اداروں کو اعتماد میں لینا حکومت کی ذمہ داری ہے۔

وقت اشاعت : 08/03/2014 - 22:36:22

اپنی رائے کا اظہار کریں