طالبان دہشتگردوں کی کلاشنکوف اور ڈنڈار بردار شریعت کل بھی نامنظور تھی اورآج بھی ..
تازہ ترین : 1

طالبان دہشتگردوں کی کلاشنکوف اور ڈنڈار بردار شریعت کل بھی نامنظور تھی اورآج بھی نا منظور ہے ‘ الطاف حسین ،کراچی میں یکجہتی ریلی منعقد کر کے طالبان کی دہشت کا خاتمہ کر دیا، پنجاب کے عوام پاکستان کی سلامتی و بقا کیلئے کردار ادا کریں، قائد متحدہ قومی موومنٹ ۔ تفصیلی خبر

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔25 فروری ۔2014ء)متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین نے کہا ہے کہ طالبان دہشتگردوں کی شریعت کلاشنکوف بردار شریعت کسی قیمت پر قبول نہیں،،عوام 9مارچ کو لاہور میں روحانی اجتماع کو تاریخ کا سب سے بڑا اجتماع ثابت کر دیں،اللہ تعالی کی وحدانیت،ختم نبوت اورقرآن مجیدپرہماراکامل ایمان ہے۔پنجاب ہاوس لاہورمیں ایم کیوایم کے ذمہ داران اور کارکنان سے ٹیلیفون پر گفتگو کرتے ہوئے الطاف حسین نے مزید کہا کہ طالبان دہشتگردوں کی شریعت کل بھی نامنظور تھی اورآج بھی نا منظور ہے۔

یم کیو ایم نے کراچی میں یکجہتی ریلی منعقد کر کے طالبان کی دہشت کا خاتمہ کر دیا، پنجاب کے عوام پاکستان کی سلامتی و بقا اور ترقی وخ وشحالی کے لیے کردار ادا کریں۔کالعدم تحریک طالبان کی کلاشنکوف اور ڈنڈا بردار شریعت کو کسی بھی قیمت پر قبول کرنے کے لئے تیار نہیں ہیں۔پاکستان میں طالبان کے خوف و دہشت کے باعث کوئی ان کے خلاف بات کرنے کو تیار نہیں تھا لیکن میں نے اس خاموشی کے قفل کو توڑا اور کراچی میں یکجہتی ریلی منعقد کرکے طالبان کی دہشت کاخاتمہ کردیا۔

انہوں نے کہاکہ مسلح افواج ، رینجرز، ایف سی اورپولیس کے افسران واہلکاروں اور شہریوں کے گلے کاٹنے، معصوم بچیوں کو کوڑے مارنے، شادی کے موقع پر تالیاں بجانے کی پاداش میں انہیں قتل کرنے اور مساجد وامام بارگاہوں میں نمازیوں کو بم دھماکے کرکے قتل کرنے والے وحشی درندے ہیں اور ان وحشی درندوں کی خودساختہ شریعت کو ماننے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔

الطاف حسین نے کہاکہ اللہ تعالی کی وحدانیت، ختم نبوت اور قرآن مجید پرہمارا کامل ایمان ہے۔ طالبان کی شریعت کل بھی ہمیں نامنظور تھی اور آج بھی نامنظور ہے۔ انہوں نے کہا کہ صوبہ پنجاب بالخصوص ایم کیوایم لاہور زون کے تمام ذمہ داران، کارکنان اور ہمدرد عوام سے اپیل کی کہ وہ 9 مارچ کو لاہور میں ایم کیوایم کے تحت روحانی اجتماع کی کامیابی کیلئے بڑھ چڑھ کرمحنت ولگن سے کام کریں اور پاکستان کی سلامتی وبقا اور ترقی وخوشحالی کیلئے اپنا بھرپور کردار ادا کریں۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 25/02/2014 - 20:31:26

اپنی رائے کا اظہار کریں