طالبان کمیٹی کی وزیرا عظم ،آرمی چیف اور ڈی جی آئی ایس آئی سے ملاقات کامطالبہ ہم ..
تازہ ترین : 1

طالبان کمیٹی کی وزیرا عظم ،آرمی چیف اور ڈی جی آئی ایس آئی سے ملاقات کامطالبہ ہم تک نہیں پہنچا ،آئیگا تو فیصلہ کرینگے ‘ پرویز رشید،ہم امن کی تلاش میں نکلے ہیں ہمیں اسکی منزل پر پہنچنا ہے ،گفتگو شروع ہوئے دو تین روز بعد نتائج کیلئے بیتابی اچھی بات نہیں ،سب پاکستان کے عدالتی نظام سے واقف ہیں کوئی بھی اس میں مداخلت نہیں کر سکتا ‘ وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات کی میڈیا سے گفتگو

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔8 فروری ۔2014ء)وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر پرویزرشید نے کہا ہے کہ حکومتی کمیٹی ابھی تک طالبان کی نامزد کردہ کمیٹی کی وزیرا عظم ،آرمی چیف اور ڈی جی آئی ایس آئی سے ملاقات کامطالبہ لے کر نہیں آئی ایسا مطالبہ آیا تو فیصلہ کرینگے ، ہم امن کی تلاش میں نکلے ہیں اور ہمیں اسکی منزل پر پہنچنا ہے لیکن گفتگو شروع ہوئے دو تین روز بعد نتائج کیلئے بیتابی اچھی بات نہیں ،سب پاکستان کے عدالتی نظام سے واقف ہیں کوئی بھی اس میں مداخلت نہیں کر سکتا ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے ہفتہ کے روز ایوان اقبال میں منعقدہ تقریب میں شرکت کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ پرویزرشید نے سوالات کے جوابات دیتے ہوئے کہا کہ طالبان اور حکومت کی جانب سے مذاکرات کے لئے کمیٹیاں بنائی گئی ہیں اور ہمیں انہیں گفتگو کے لئے موقع دینا چاہیے ، آپ کو سوالات اور مجھے جواب دے کر اس میں مداخلت نہیں کرنی چاہیے ۔

انہوں نے طالبان کی طرف سے شریعت کے نفاذ کے مطالبے کے سوال کے جواب میں کہا کہ جب رکاوٹ کا پل آئے گا تو ہم اسے دور کر لیں گے ابھی آپ کا سوال مفروضے پر مبنی ہے ۔ انہوں نے طالبان سے مذاکرات میں دوست ملک کو شامل کرنے کے حوالے سے کہا کہ ابھی دونوں کمیٹیوں میں بات چیت جاری ہے جب حکومتی کمیٹی کوئی سفارشات دے گی یا دونوں کسی نتیجے پرپہنچیں گے تو ہی کوئی بات ہو سکتی ہے اس لئے قبل از وقت اس طرح کی باتیں مناسب نہیں ۔

انہوں طالبان کی طرف سے وزیر اعظم ، آرمی چیف اور ڈی جی آئی ایس آئی سے ملاقات کے سوال کے جواب میں کہا کہ ابھی تک حکومت کی کمیٹی اس طرح کا کوئی مطالبہ لے کر نہیں آئی جب اس طرح کا کوئی مطالبہ آیا تو فیصلہ کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر امن کے لئے قدم بڑھتا ہے تو ہم دو قدم بڑھائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم گزشتہ کئی سالوں سے کہتے چلے آرہے ہیں کہ ہمیں اپنے ملک کو ٹھیک کرنا ہے اور کسی دوسرے ملک میں مداخلت نہیں کرنی چاہیے ۔

انہوں نے کہا کہ ملک میں قانون موجود ہے اگر کوئی قانون کی خلاف ورزی کرے گا تو قانون اسے اپنی گرفت میں لے گا ۔ انہوں نے پرویزمشرف کے معاملے پر سوال کے جواب میں کہا کہ آپ لوگ پاکستان کے عدالتی نظام سے واقف ہیں کوئی بھی پاکستان کے عدالتی نظام میں مداخلت نہیں کر سکتا ۔ انہوں نے بگ تھری کے حوالے سے سوال کے جواب میں کہا کہ اس پرپاکستان کا موقف آ چکا ہے اور پی سی بی کے گورننگ بورڈ کے سابقہ اجلاس میں موقف ا پنایا گیاتھا ۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 08/02/2014 - 19:48:49

اپنی رائے کا اظہار کریں