ملزم کوئی بھی ہو ،وی آئی پی طریقے سے تفتیش کی اجازت نہیں دیں گے‘ لاہور ہائیکورٹ ..
تازہ ترین : 1

ملزم کوئی بھی ہو ،وی آئی پی طریقے سے تفتیش کی اجازت نہیں دیں گے‘ لاہور ہائیکورٹ

لاہور( اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 3 فروری 2014ء)لاہور ہائیکورٹ نے سپنا خان بازیابی کیس کی تفتیش سی آئی اے کو دس روز میں مکمل کرنے کا حکم دیتے ہوئے قرار دیا ہے کہ ملزم کوئی بھی ہو وی آئی پی طریقے سے تفتیش کی اجازت نہیں دیں گے۔سوموار کے روز لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس خالد محمود خان نے کیس کی سماعت شروع کی تو عدالت کے روبرو درخواست گزار کے وکیل نے بتایا کہ پولیس سپنا خان اغوا ء کیس میں نامزد ملزم دوست محمد کھوسہ سے تفتیش نہیں کر رہی بلکہ انہیں پروٹوکول دیا جا رہا ہے۔

پولیس حکام نے بتایا کہ کیس کی تفتیش جاری ہے تفتیش مکمل کرنے کے لیے مہلت دی جائے۔عدالت نے استفسار کیا کہ دوست محمد کھوسہ کتنی مرتبہ تھانہ میں آئے پولیس نے بتایا کہ دوست کھوسہ تین مرتبہ بیان قلمبند کرانے کے لیے آئے ۔عدالت نے پولیس کو حکم دیا کہ اس کیس کو عام کیسز کی طرح ڈیل کیا جائے۔ملزم کوئی بھی ہو پروٹوکول طریقے سے تفتیش کی اجازت نے دیں گے ۔معزز عدالت نے سی آئی اے کو دس روز میں کیس کی تفتیش مکمل کرنے کا حکم دیتے ہوئے سماعت ملتوی کر دی۔

وقت اشاعت : 03/02/2014 - 16:17:04

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں