مشرف حکومت یا عدالت کی نہیں اللہ کی پکڑ میں ہیں، پاکستان کیساتھ افغانستان کا مستقبل ..
تازہ ترین : 1

مشرف حکومت یا عدالت کی نہیں اللہ کی پکڑ میں ہیں، پاکستان کیساتھ افغانستان کا مستقبل بھی داؤ پرلگادیا‘ خواجہ سعد رفیق، آئین شکن کو کسی صورت معاف نہیں کیا جا سکتا،مشرف کو آزا د عدلیہ پر یقین رکھنا چاہیے‘ وفاقی وزیر یلوے

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔31 جنوری ۔2014ء)وفاقی وزیرریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ پرویز مشرف حکومت یا عدالت کی نہیں بلکہ اللہ کی پکڑ میں ہیں، ان کے خلاف بہت سے الزامات ہیں جس پر کئی مقدمے چلنے چاہئیں، آئین شکن کو کسی صورت معاف نہیں کیا جا سکتا۔ اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر ریلو ے خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ پرویز مشرف کے وکلا ء فوج کا نام لیکر رعایت حاصل کرنے میں ناکام رہے ہیں، مشرف کیخلاف صرف بغاوت ہی نہیں اور بہت سے بھی الزامات ہیں ان پر کئی مقدمات چلنے چاہئیں، مشرف کی بزدلانہ پالیسیوں نے ملک کو نقصان پہنچایا، لال مسجد، اکبر بگٹی کی شہادت مشرف کے سر جاتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ مشرف جان لیں اللہ کی پکڑ بہت سخت ہے ان کا مقدمہ آزاد عدلیہ کے سامنے ہے، پرویز مشرف کو عدلیہ کی آزادی پر یقین رکھنا چاہیے اب مشرف جانیں اور آزاد عدلیہ جانے۔ خواجہ سعد رفیق کا مزید کہناتھاکہ آئین شکنوں کو کسی صورت معاف نہیں کیا جا سکتا۔ خواجہ سعد رفیق کا کہنا تھا کہ فرد واحد نے متعلق العنان حکمرانی کے لئے پاکستان کے ساتھ ساتھ افغانستان کو بھی دا ؤپر لگایا، پرویز مشرف کو کوئی حق نہیں تھا کہ افغانستان کی آزادی سلب کرتے، پاکستان تو پھر بھی سنبھل گیا مگرافغانیوں کی قسمت کا فیصلہ ابھی باقی ہے۔

انہوں نے کہا کہ بنگلہ دیش میں حسینہ واجد پاکستان کے حامیوں کو سزائیں دے کر اپنی سیاست کیلئے انصاف کا خون کر رہی ہیں، ان کے اقدامات کو بنگلہ دیش کے عوام کی حمایت حاصل نہیں، ہمیں ان کے رویے پر تشویش ہے جس کی مذمت کرتے ہیں۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 31/01/2014 - 20:54:24

اپنی رائے کا اظہار کریں