گاڑیوں کی کمپیوٹرائزڈ نمبر پلیٹو ں اور رجسٹریشن کے نئے نظام کا آغاز لاہور سے کر ..
تازہ ترین : 1

گاڑیوں کی کمپیوٹرائزڈ نمبر پلیٹو ں اور رجسٹریشن کے نئے نظام کا آغاز لاہور سے کر دیا گیا، چوہدری پرویز الٰہی، دسمبر 2007 ء تک صوبے کے تمام اضلاع میں گاڑیوں کی کمپیوٹرائزڈ نمبر پلیٹوں کا کام مکمل کر لیا جائے گا ، وزیر اعلیٰ پنجاب کا گاڑیوں کی کمپیوٹرائزڈ نمبر پلیٹوں اور رجسٹریشن کے نئے نظام کے منصوبے کی افتتاحی تقریب سے خطاب

لاہور( اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔19ستمبر۔2006ء) وزیر اعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الٰہی نے کہا ہے کہ موٹر گاڑیوں کی کمپیوٹرائزڈ نمبر پلیٹو ں اور رجسٹریشن کے نئے نظام کا آغاز لاہور سے کر دیا گیا ہے اور 3 ماہ کے اندر اس کا دائرہ کار پنجاب کے دیگر بڑے شہروں گوجرانوالہ ، فیصل آباد ، راولپنڈی ، ملتان اور بہاولپور تک پھیلا دیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ دسمبر 2007 ء تک صوبے کے تمام اضلاع میں گاڑیوں کی کمپیوٹرائزڈ نمبر پلیٹوں کا کام مکمل کر لیا جائے گا جس سے گاڑیوں کی چوری کے واقعات کی روک تھام میں مدد ملے گی ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز موٹر گاڑیوں کی کمپیوٹرائزڈ نمبر پلیٹوں اور رجسٹریشن کے نئے نظام کے منصوبے کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صوبائی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی عبدالعلیم خان اور چیف سیکرٹری پنجاب سلمان صدیق نے بھی تقریب سے خطاب کیا ۔ صوبائی وزراء ، سیکرٹری انفارمیشن ٹیکنالوجی نذیر سعید او رسیکرٹری ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن جاوید اسلم اس موقع پر موجود تھے ۔

وزیر اعلیٰ پنجاب نے کہا کہ موٹر ٹرانسپورٹ مینجمنٹ سسٹم کے تحت کمپیوٹر ائزڈ نمبر پلیٹوں اور رجسٹریشن کے منصوبے پر عملدرآمد سے محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کی کارکردگی میں بہتری آئے گی اور عوام کے قیمتی وقت کی بچت کے علاوہ رجسٹریشن کا نظام شفاف ہو گا ۔ وزیر اعلیٰ پنجاب نے کہا کہ گڈ گورننس کے تقاضوں کے عین مطابق انفارمیشن ٹیکنالوجی سیکٹر کو مضبوط کیا جا رہا ہے اور ہر شعبے میں بہتری کے لئے اصلاحات کی گئی ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ صوبے میں آئی ٹی سیکٹر کی ترقی کیلئے نمایاں خدمات سرانجام دے رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ لاہو ر میں 2.5 بلین روپے کی لاگت سے سافٹ ویئر انفارمیشن ٹیکنالوجی پارک قائم کیا جا رہا ہے جس سے براہ راست 10 ہزار ملازمتوں کے علاوہ ہزاروں کی تعداد میں بالواسطہ روزگار کے مواقع فراہم ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ اس پارک میں کال سنٹرز، بزنس پراسس سنٹرز قائم کئے جا رہے ہیں جس سے جدید انفارمیشن ٹیکنالوجی کے عالمی رابطوں کا عمل مضبوط ہو گا اور صوبے میں غیر ملکی سرمایہ کاری بڑ ھے گی۔

وزیر اعلیٰ پنجاب نے کہا کہ لینڈ ریکارڈ مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم کے تحت ریونیو ریکارڈ کو کمپوٹر ائزڈ کیا جارہا ہے جس سے عوام کو پٹواری کلچر اور ریونیو ملازمین کے اختیارات کے ناجائزاستعمال سے نجات ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ اس نظام سے عوام کو ریونیو سے متعلقہ تمام دستاویزات آسانی سے دستیاب ہوں گی اور جائیدادوں کی خرید و فروخت میں ہونے والی بدعنوانیوں کا خاتمہ ممکن ہوسکے گا۔

انہوں نے کہا کہ برٹش ٹیلی کام کے تعاون سے پنجاب ہائی وے پٹرول کی کمپیوٹر ائزیشن کا آغاز کیا جارہا ہے۔ وزیر اعلیٰ نے گاڑیوں کی کمپیوٹرائزیشن میں استعمال ہونے والے آلات کا معائنہ کیا ۔ اس موقع پر وزیر اعلیٰ پنجاب کی گاڑی کو کمپیوٹر ائزڈ نمبر پلیٹ لگائی گئی ۔صوبائی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی عبدالعلیم خان نے کہا کہ کمپیوٹرائزڈ نمبر پلیٹوں اور رجسٹریشن کے نئے نظام سے عوام کو سہولتیں میسر آئیں گی اور گاڑیوں کی چوری کے واقعات میں کمی آئے گی۔ چیف سیکرٹری پنجاب سلمان صدیق نے کہا کہ وزیر اعلیٰ کے وژن 2020ء کے مطابق ہر شعبے میں کی گئی اصلاحات کے نتائج تیزی سے سامنے آرہے ہیں۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 19/09/2006 - 21:55:15

اس خبر پر آپ کی رائے‎