سندھ اسمبلی کا ایوان مچھلی بازاربن گیا ،اپوزیشن کا ایوان کو رولز سے ہٹ کر چلانے ..
تازہ ترین : 1

سندھ اسمبلی کا ایوان مچھلی بازاربن گیا ،اپوزیشن کا ایوان کو رولز سے ہٹ کر چلانے کا الزام

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔07 اپریل۔2015ء)سندھ اسمبلی کا ایوان منگل کو پھر مچھلی بازار بن گیا۔ فنکشنل لیگ کے شہر یار مہر نے اسپیکر آغا سراج درانی پر ایوان کو رولز سے ہٹ کر چلانے کا الزام لگادیا۔اس پراسپیکر نے کہاکہ وہ قواعد پر عمل نہیں کرتے تو ان کے خلاف تحریک عدم اعتماد لے آئیں۔سندھ اسمبلی کا اجلاس منگل کو بھی گزشتہ معاملات پر شروع ہوا اور بات وہیں سے آگے بڑھائی گئی جہاں ختم ہوئی تھی۔

اجلاس کے آغاز پر اسپیکر اسمبلی آغا سراج درانی نے کہاکہ اسمبلی میں گذشتہ روزافسوسناک واقعہ ہوا۔ایوان میں آئین کی کاپیاں پھاڑکراڑائی گئیں،جوشرمناک ہے۔ انہیں دنیا بھر سے فون آئے کہ ایوان میں شرمناک واقعہ ہوا۔آغا سراج نے شہریار مہر سے کہاکہ وہ ایوان سے معافی مانگیں۔اس پر شہر یار مہر کا کہنا تھاکہ ایوان کورولزکے مطابق نہیں چلایا۔

آغا سرا ج نے کہاکہ وہ رولز پر عمل نہیں کرتے ہوئے ان کے خلاف عد م اعتماد لے آئیں۔دونوں اراکین کیدرمیان تلخ جملوں کاتبادلہ ہوا اور دونوں جماعتوں ارکان میں بھی جملے بازی ہوئی ۔اجلاس سے پہلے اسمبلی کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے شہلا رضا نے کہاکہ ان کے پاس توجہ دلاو نوٹسز نمٹانے کے لیے صرف تیس منٹ ہوتے ہیں۔ادھر اسمبلی میں متحدہ قومی موومنٹ کے سید سردار احمد نے کہاکہ تحریک انصاف کے مستعفی ارکان کی اجلاس میں شرکت غیرآئینی ہے۔استعفوں کی منظوری کا باضابطہ اعلان کیا گیا، اس پر آغا سراج درانی کا کہنا تھاکہ انہوں نے استعفے منظور کرنے کا کہا مگر سیکیرٹری نے سماعت کا موقع دینے کی سفارش کی۔استعفے الیکشن کمیشن کو نہیں بھجوائے گئے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 07/04/2015 - 16:49:00

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں