متحدہ پر صولت مرزا کی اہلیہ کی جانب سے لگائے الزامات پر فاروق ستار کی جانب سے ردعمل ..
تازہ ترین : 1
متحدہ پر صولت مرزا کی اہلیہ کی جانب سے لگائے الزامات پر فاروق ستار کی ..

متحدہ پر صولت مرزا کی اہلیہ کی جانب سے لگائے الزامات پر فاروق ستار کی جانب سے ردعمل سامنے آ گیا

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔30مارچ۔2015ء)‬‎ صولت مرزا کی اہلیہ کی جانب سے کیے گئے انکشافات اور ایم کیو ایم پر لگائے جانے والے الزامات پرایم کیو ایم کے رہنما فاروق ستار کا ردعمل سامنے آگیا ہے ۔فاروق ستار کا کہنا ہے کہ بیوی اپنے شوہر کی تابعداری کررہی ہے، میرا ان سے کسی قسم کا کوئی رابطہ نہیں ہے۔ صولت مرزا 1997,1998میں پارٹی کا کارکن رہا تھا مگر اس کے بعد اسے پارٹی سے نکال دیا گیا تھا۔

صولت مرزا کا کبھی بھی الطاف بھائی سے کوئی رابطہ نہیں ہوا، اس بات پر وہ الطاف بھائی کی تائید کرتے ہیں ۔جیل میں الطاف حسین کی سالگرہ اور ایم کیو ایم کے یوم تاسیس کی تقریب اور اس میں صولت مرزا کی موجودگی کی تصویروں پر فاروق ستار کا کہنا ہے کہ جیل میں ایسی کسی تقریب میں ایم کیو ایم کے اور بھی قیدی موجود تھے مگر ان میں سے صولت مرزا کو ہی لیکر ایشو بنایا جا رہا ہے۔

ان کاکہنا تھا کہ جیل میں ایسی تقریب کا ہونا ظاہر کرتا ہے کہ بے نظیر یا اس وقت کی موجودہ حکومت کی طرف اس تقریب کو منعقد کرنے کی اجازت ملی ہوگی۔ان کاکہنا تھا کہ چونکہ صولت مرزا کے پورے خاندان کا ایم کیو ایم سے تعلق تھا اس لیے ایم کیو ایم نے جو کیا اس کے خاندان کیلئے کیا، صولت مرزا کیلئے پارٹی کی جانب سے کچھ نہیں کیا گیا کیونکہ اسے پارٹی سے نکالا جا چکا تھا۔

وقت اشاعت : 30/03/2015 - 00:00:30

متعلقہ عنوان :

قارئین کی رائے :

  • Abdul Malik Says : 31/03/2015 - 22:10:22

    Farooq Sattar Sb,Mout ki saza ka mujrim jail mein cake kaat raha hai aur aap phir bhi kahtay hain kay taaluq nahein, Jhoot kay waqayee pair nahein hotay.

    Reply to this comment
  • WAQAR AHMED Says : 31/03/2015 - 13:52:29

    SIR , IF U R SAYING THAT U HAD BANNED OR DISLOCATED SOALAT MIRZA FROM PART THEN ON WHAT CHARGES AND IWAS IT NOT UR RESPONSIBLITY TO HAND THIS KIND OF TARGET KILLER TO POLICE . MEAN NOW IT IS ALL U PEOPLE ARE TRYING TO COVERING THE DAMAGE TO MQM BUT IT HAS DONE .NOW U R OVER AND IMRAN KHAN PARTY WILL PREVAIL IN KARACHI .

    Reply to this comment

اپنی رائے کا اظہار کریں