کراچی سٹاک مارکیٹ میں شدید مندی رہی، ساڑھے 3 کھرب ڈوب گئے
تازہ ترین : 1

کراچی سٹاک مارکیٹ میں شدید مندی رہی، ساڑھے 3 کھرب ڈوب گئے

کراچی (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار29مارچ ۔2015ء) کراچی سٹاک مارکیٹ میں گزشتہ ہفتے تمام کاروباری دنوں کے دوران مندی کے بادل چھائے رہے جس کی وجہ سے کے ایس ای 100 انڈیکس 18 بالائی حدوں سے گر گیا اور31800 پوائنٹس کی سطح سے کم ہوکر 29900 پوائنٹس کی کم ترین سطح پر بند ہوا۔ گزشتہ کاروباری ہفتے کے دوران شدید مندی کے رجحان کے سبب سرمایہ کاروں کے ساڑھے تین کھرب روپے ڈوب گئے ، سٹاک ماہرین کے مطابق مارکیٹ پہلے ہی غیر ملکی سرمایہ کاروں کی جانب سے سرمائے کے انخلا اور لوکل فنڈز کی جانب سے بڑے پیمانے پر فروخت کے باعث دباؤ کا شکار تھی ایسے موقع پر ایشیائی ترقیاتی بینک اور عالمی مالیا تی فنڈ کی رواں مالی سال پاکستان کے لئے معاشی ترقی کا5.1فیصد مقررہ ہدف حاصل نہ ہونے کی پیش گوئی نے سرمایہ کاروں کو مارکیٹ سے مزید دور کر دیا ۔

موڈیز کی جانب سے پاکستا ن کی کریڈٹ ریٹنگ مستحکم سے مثبت کئے جانے کے اثرات بھی مارکیٹ میں مندی کے تسلسل کو ختم نہ کر سکے ۔ماہرین کے مطابق مڈل ایسٹ بحرا ن کی وجہ سے عالمی سٹاک مارکیٹ اور تیل کی قیمتو ں میں کمی کے خدشات مارکیٹ پر اثر انداز ہو رہے ہیں جبکہ سیاسی عدم استحکام اورکراچی آپریشن کے ردعمل میں کسی ناخوشگوار واقعہ کے رونما ہونے کے خدشات پر سرمایہ کار تذبذب کا شکار ہیں اسی وجہ سے وہ کاروبار میں خاص دلچسپی نہیں لے رہے تاہم مارکیٹ کو سہارا دینے کی غرض سے حکومتی مالیاتی اداروں ،مقامی بروکریج ہاؤسز اور دیگر انسٹی ٹیوشن کی جانب سے سیمنٹ ،بینکنگ ،توانائی اورفرٹیلائزر سیکٹر زمیں خریداری دیکھی گئی جس کی وجہ سے گزشتہ ہفتے ٹریڈنگ کے دوران کے ایس ای 100انڈیکس 32075.72پوائنٹس کی بلند سطح پر بھی دیکھا گیا لیکن کاروباری سیشن کے اختتام تک تیزی کے اثرات مندی میں تبدیل گئے ۔

گزشتہ ہفتے زیادہ سے زیادہ 25کروڑ 83لاکھ 24ہزار حصص کا کاروبار ہوا اور ٹریڈنگ ویلیو 12ارب روپے ریکارڈ کی گئی جبکہ کم سے کم کاروباری لین دین 9کروڑ 92لاکھ 6ہزار حصص رہا اور ٹریڈنگ ویلیو 6ارب روپے تک محدود رہی۔ مجموعی طور پر 1392کمپنیوں کا کاروبار ہوا جن میں سے 254کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں اضافہ، 1057میں کمی اور 81 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔ کاروبار کے لحاظ سے پاک الیکٹرون، جہانگیر صدیقی، میپل لیف، بینک آف پنجاب، کے الیکٹرک، اینگرو کارپوریشن اور ٹی آر جی پاک لمیٹڈ سرفہرست رہے ۔

وقت اشاعت : 29/03/2015 - 22:40:44

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں