کراچی،پاکستان بازار میں خاتون کے قتل میں ملوث4نابالغ لڑکوں کوعدالت میں پیش کردیا ..
تازہ ترین : 1

کراچی،پاکستان بازار میں خاتون کے قتل میں ملوث4نابالغ لڑکوں کوعدالت میں پیش کردیا گیا

کراچی ( اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔17مارچ۔2015ء )اورنگی ٹاؤن کے علاقے پاکستان بازار میں خاتون کے قتل میں ملوث4 نابالغ لڑکوں کوعدالت میں پیش کردیا گیا،چاروں میں سے ایک کو خاتون نے ہی پالا پوسا تھا، ایک لڑکے نے عدالت کے روبرو جرم کا اعتراف کرلیا،اس سے قبل مقدمے کو اے کلاس کردیا گیا تھا۔ تفصیلات کے مطابق تھانہ پاکستان بازار نے خاتون کے قتل میں ملوث 13اور 14سالہ زبیر الدین عرف نامی ، محمد عالم ، صالم اور زوہیب کو جوڈیشل مجسٹریٹ غربی صدرالدین بوہیو کے روبرو پیش کیا اس موقع پر14سالہ ملزم زبیر الدین عرف نومی نے اپنے جرم کا اعتراف کرتے ہوئے ضابطہ فوجداری کے ایکٹ 164کے تحت اقبالی بیان میں عدالت کو بتایا کہ مقتولہ فیروزہ بے اولاد تھی جس نے انھیں پالا پوسا تھا ، عدالت میں موجود اس کے دوست تھے جو اکثر گھر آیا کرتے تھے ۔

گھر میں دولت اور قیمتی سامان دیکھ کر لالچ آگئی تھی اور منصوبہ بندی کے تحت 7جنوری کو قتل کیا تھا منصوبہ بندی کے تحت نشہ آور اشیا سے خاتون کو بے ہوش کیا،اسے رسیوں سے باندھا تھااور اس نے گلا دبا کر قتل کیا تھا ، گھر سے لیپ ٹاپ،ہینڈ کیمرا ، موبائل فونز،طلائی زیورات اور ڈھائی لاکھ روپے لوٹ کر فرار ہوگئے،بعدازاں پولیس نے انھیں گرفتار کرلیا تھا،پولیس کے مطابق ملزمان نے چوری کیے ہوئے موبائل فون سے رابطے کیے جسے سی پی ایل سی کی مدد سے تلاش کیا تھا ۔

استغاثہ کے مطابق 11جنوری کو پاکستان بازار کے علاقے کے ایک مکان سے 4روز پرانی لاش برآمد ہوئی تھی پولیس نے مقدمہ درج کیا تاہم کوئی شواہد اور ملزمان کی عدم گرفتاری پر مقدمے کو اے کلاس کردیا تھا ملزمان کی گرفتاری کے بعد عدالت نے مقدمے کا چالان جمع کرانے کا حکم دیا ہے ملزمان کے خلاف تھا نہ پاکستان بازار میں مدعی عالم وارث کی مدعیت میں مقدمہ درج ہے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 17/03/2015 - 14:14:45

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں