دشمن طاقتیں دہشت گردی کے نام پر عالم اسلام کے خاتمے پر لگی ہوئی ہیں،مفتی محمدنعیم،
تازہ ترین : 1

دشمن طاقتیں دہشت گردی کے نام پر عالم اسلام کے خاتمے پر لگی ہوئی ہیں،مفتی محمدنعیم،

م حکمرانوں کے نااہلی کے باعث ماضی میں ہماری غلامی کرنے والے ہم پر حکمرانی کررہے ہیں،سیمینار سے خطاب

کراچی(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار . 9 مارچ 2015ء) جامعہ بنوریہ عالمیہ کے رئیس وشیخ الحدیث مفتی محمدنعیم نے کہاکہ دشمن طاقتیں دہشت گردی کے نام پر عالم اسلام کے خاتمے پر لگی ہوئی ہیں،مسلم حکمرانوں کے نااہلی کے باعث ماضی میں ہماری غلامی کرنے والے ہم پر حکمرانی کررہے ہیں، عالم اسلام کو متحد ہوکر اسلام کے خلاف سازشوں کوناکام بنائے، اسلامی معاشرت وثقافت کے خاتمے،مساجدومدارس پرنت نئی پابندیوں اورعلم دین پرپابندیاں لگانے والوں کوتوہین رسالت سے کوئی سروکارنہیں،وطن عزیز میں دینی طبقہ ، مدارس ،مساجد کے خلاف کاروائیاں قابل تشویش ہیں ، ملک کو سیکولر اسٹیٹ بنانے کیلئے مدارس اور مساجد کے خلاف اقدامات کیے جارہے ہیں،مذہبی طبقے کو مسلکی وفروعی اختلاف کو بالائے طاق رکھ کر متحد ہوکر میدان میں آنا ہوگا۔

پیر کو جامعہ بنوریہ عالمیہ کے رئیس وشیخ الحدیث مفتی محمد نعیم نے جامعة الدراسات اسلامیہ گلشن اقبال میں منعقدہ اتحاد امت سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا پوری دنیا میں امت مسلمہ کو فرقہ واریت کی آگ میں دھکیلنے کی کوششیں کی جارہی ہیں شام میں ہزاروں لوگوں کو بشارالاسد نے فرقہ واریت کی بنیادپر قتل کیااور مسلمانوں کی نسل کشی کی جارہی ہے،انہوں نے کہاکہ اہل مدارس نے کبھی مسلکی یا فرقہ واریت کا سبق نہیں دیا اور نہ ہی قرآن وسنت کی یہ تعلیمات ہیں بلکہ قرآن مجید نے ہمیں امت واحدہ کے لقب سے خطاب کیا اور اللہ تعالیٰ کا حکم ہے کہ ہم امت واحدہ بن جائیں اسی میں مسلمانوں کی عظیم کامیابی ہے، انہوں نے کہاکہ تاریخ گواہ ہے ہم جب تک متحد تھے یہ یورپ جن کی آج بدقسمتی سے ہمارے مسلم حکمران جی حضوری اور غلامی میں مصروف ہے وہ ہمارے غلام تھے۔

انہوں نے کہاکہ ملک کو سیکولر اسٹیٹ بنانے نہیں دیں گے اسمبلیوں میں قرآن وحدیث سے متصادم بل لائے جارہے ہیں ،گزشتہ روز پنجاب اسمبلی نے عائلی قوانین کے حوالے سے جو بل پیش کیا وہ سراسر قرآن وسنت کے منافی ہے،ہم سمجھتے ہیں کہ یہ تمام ترکوششیں ملک کو سیکولر اسٹیٹ بنانے کیلئے کی جارہی ہیں۔انہوں نے کہاکہ تمام مذہبی طبقے کو مسلکی ہم آہنگی کو فروغ دینا ہوگااور فروعی اور مسلکی اختلافات کو بالائے طاق رکھ کر اتحاد کے ذریعے سازشوں کو ناکام بنانا ہوگا۔

انہوں نے کہاکہ ان حکمرانوں سے کیا توقع کی جاسکتی ہے جو بیرونی جی حضوری پر پوری قوم کی خواہشات کا خون کررہے ہیں ، اقتدار کو حصول دولت عیش وعشرت کا ذریعہ بنا دیاہے، سینیٹ کے ووٹوں کی فروخت اور بولیاں جمہوریت کی حقیقت حکمرانوں کی نااہلی کا منہ بولتاثبوت ہے، جب حکمران ہی پیسے اور رشوت کے زور پر عہدہ حاصل کررہے ہوں تو پھر اس قوم کا خدا حافظ ہے، انہوں نے کہاکہ مدارس کو ملک میں دہشت گردی کے ذمہدار ٹہرا کرپابندیاں صرف مذہبی طبقے پر مسلط کی جارہی ہیں،ایسے میں اگر علماء کرام اور مذہبی طبقہ متحد نہ ہوا تو تاریخ کبھی معاف نہیں کرے گی۔

وقت اشاعت : 09/03/2015 - 21:27:29

اپنی رائے کا اظہار کریں