موجودہ حکمرانوں نے اہلسنت پر مظالم میں پرویز مشرف کو بھی مات کردیا ہے،علامہ اورنگزیب ..
تازہ ترین : 1

موجودہ حکمرانوں نے اہلسنت پر مظالم میں پرویز مشرف کو بھی مات کردیا ہے،علامہ اورنگزیب فاروقی،

دینی مدارس اور مذہبی طبقے کو کچلنے کی سازشیں کی جارہی ہے ، اہلسنت علماء کو چن چن کر شہید کیا جارہاہے ،صدر اہلسنت الجماعت

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔4مارچ۔2015ء)پنجاب میں صوبائی صدر مولانا اشرف طاہر سمیت اہلسنت رہنماؤں کی بلاجواز گرفتاری کی شدید لفظوں میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ موجودہ حکمرانوں نے اہلسنت پر مظالم میں پرویز مشرف کو بھی مات کردیا ہے ن لیگ اپنی سابقہ روش پر آگئی ہے دینی مدارس اور مذہبی طبقے کو کچلنے کی سازشیں کی جارہی ہیں کراچی سمیت ملک بھرمیں اہلسنت علماء کو چن چن کر ٹارگٹ کلنگ میں شہید کیا جارہاہے جس کی وجہ سے عوام اہلسنت میں احساس محرومی بڑھ رہا ہے حکومت ہوش کے ناخن لے مولانا اشرف طاہر سمیت تمام بے گناہ اہلسنت رہنماؤں کو فی الفور رہا کیا جائے اہلسنت کو دبانے کے لئے پولیس گردی کی بدترین روایات قائم کی جارہی ہیں دہشت گردی ،فرقہ واریت کے خلاف جدو جہد کرنے والے امن پسند علماء کرام کیخلاف جھوٹے مقدمات اوربلاجوازگرفتاریاں قومی ایکشن پلان کے خلاف سازش ہیں کراچی ،اسلام آبادسمیت ملک کے دیگر شہروں میں تسلسل کے ساتھ اہلسنت علماء کرام و کاکنوں کو دہشت گردی کانشانہ بنایا جارہاہے ہم آئے روزانہ جنازے اٹھارہے ہیں اسکے باوجودہمارے قائدین ملک کی سلامتی واستحکام خاطراسلام دشمن قوتوں کے ناپاک عزائم کوناکام بنانے کیلئے پیغام امن دے رہے ہیں تو دوسری طرف پنجاب بھر میں کارکنان کو امن کا درس دینے والے اورصبر کی تلقین کرنے والے محب وطن امن پسند قائدین کو گرفتار کیا جارہا ہے یہ کیسا انصاف ہے کہ قتل بھی ہم ہو رہے ہیں اور مجرم بھی ہمیں ہی ٹھہرایا جارہا ہے ان خیالات کا اظہار اہلسنت والجماعت کے مرکزی صدرعلامہ اورنگزیب فاروقی نے مجلس وحدت المومنین کے رہنماؤں سے ملاقات کے دوران گفتگوکرتے ہوئے کیا ان کا کہنا تھا کہ قائدپنجاب علامہ اشرف طاہر کی بلاجوازگرفتاری قابل مذمت ہے علامہ اشرف طاہر کو ہمیشہ امن پالیسی پر عمل پیرا اور کارکنان کو صبر کا درس دیتے ہی سناہے ایسی محب وطن پر امن قیادت کو بلاجواز گرفتار کرنا سراسر نا انصافی پر مبنی عمل ہے اہلسنت علماء کرام نے ہمیشہ دہشت گردی کے خلاف آواز بلند کرتے ہوئے حکومت اور انتظامیہ کے ساتھ ہر موقع پر تعاون کیا ہے اس کے باوجود ان کے خلاف جھوٹے مقدمات درج کرکے انہیں گرفتار کیا جارہاہے دہشت گردی کے خلاف قومی ایکشن پلان کی دھجیاں اڑانے کے مترادف ہے ہم حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ بلا جواز گرفتار پرامن قائدین ذمہ داران اور کارکنان کو فی الفور رہا کیا جائے یہ پر امن شہریوں کا بنیادی حق ہے ہم نے ہمیشہ حکومت اور قانون نافذ کرنے والے اداروں سے تعاون کیاحکومت اور ادارے بھی تعاون کا بدلہ تعاون کی صور ت میں دیں ۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 04/03/2015 - 20:31:44

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں