بند کریں
اتوار اپریل

حالیہ تبصرے

Shahamil 01-04-2017 18:24:14

Sir Ap Mqm ko kitna bura khley lekin aap awam me jaker wahi ki poochey awam aaj bhi altaf ke sath hn qaser aap ka nai aap ki stablishment ka hn q ke aap ke airport say leker gov ke chotey chotey office chek keroo kitne mujhir gov job per hn 2 % bi nai milley gay me ne aaj tak passaned nai ki mqm lekin wo baat sai kehta hn ke job q nai dey tey hum ko kab pakistani samjha aap sabit keroo sirf karachi ke logoo ko lota hyn

  مضمون دیکھئیے
shahbaz 20-03-2017 03:10:57

Such a negative thought. bhai taliban ko support kar rhy ho kya? woh b tu yehi chahty thy k operation na ho.

  مضمون دیکھئیے
princesmaria 15-03-2017 12:44:33

salam supppprrrrrr information bht allah khuda sb ko naiki k rasty mn chalayen r badi k kamon sa dur rakhen r khuda pak sa duwa ha k hmn apny un bandon jsa bna da jo usy r usk rasol s ko pasand hon Amen suma ameen

  مضمون دیکھئیے
hammad 11-03-2017 15:52:52

molvi who jahan per hai teri sooch bhi nahien ja sakti.waisay inthai chawal tehreer hai lagta kau kisi primiary fail mulla nay likhi hai .

  مضمون دیکھئیے
QAZI SEHBA 02-03-2017 14:14:58

thanks to god that staff is uneducated because if they are educated then the situation will be worse then this. This is all white collar job crime and have no advance ability to work in secure area to work with all. All will be in hell those who is responsible for others life.

  مضمون دیکھئیے
Muhammad Kashif Saleem 23-02-2017 09:58:41

Dear Badar Saeed, you have forgotten to mention Zulfiqar Cheema, is there any particular reason for that.

  مضمون دیکھئیے

سیاسی مضامین

وزیراعظم سے استعفیٰ کی طلبگار اپوزیشن مایوسی کا شکار

3 اپریل 2016ء کو ”دی انٹرنیشنل کنسورشیئم آف انوسٹی گیشن جرنلسٹس“ (آئی سی آئی جے) نے پانامہ پیپرز لیکس کے ذریعے دنیا بھر کی بہت سی شخصیات کے بارے میں انکشافات کئے تھے۔ پاکستان کی سیاست میں احتجاج کے بل بوتے پر وزیراعظم نواز شریف کو مستعفی ہونے پر مجبور کرنے کے مطالبات کرنے والی ”اپوزیشن“ مسلسل ناکامیوں کے بعد جب مایوسی کا شکار ہو چکی تھی

تاریخ اشاعت: 2017-04-22

وزیراعظم نااہلی سے بچ گئے

سپریم کورٹ آف پاکستان میں پانامہ پیپر لیکس سے متعلق فیصلہ پاکستان کی عدالتی اور سیاسی تاریخ کے اہم دن کے طور پر یاد رکھا جائے گا کیونکہ معاملہ ملک کے وزیر اعظم اور ان کی فیملی کے حوالے سے ہے فیصلہ پانچ رکنی لارجر بنچ کے سربرا جسٹس آصف سعید خان کھوسہ نے پڑھ کر سنایا۔فیصلہ تین اور دو کی اکثریت سے دیا گیا

تاریخ اشاعت: 2017-04-22

وفاق سے کشیدگی۔۔پی پی نے سندھ کارڈ لہرا دیا

کراچی میں ایک بار پھر سندھ حکومت اور وفاق کے درمیان رینجرز کے خصوصی اختیارات کی آنکھ مچولی شروع ہو گئی ہے۔ یہ فلم ہر تین ماہ کے بعد چھوٹی اسکرین پر شروع ہو جاتی ہے اور ہر بار کچھ لو اور کچھ دو‘ کے اصول پر ختم ہو جاتی ہے۔ اب ایک بار پھر پیپلز پارٹی کے دلیر رہنماء آصف علی زرداری نے نہ صرف حکمرانوں کو یہ اصول یاد دلایا ہے

تاریخ اشاعت: 2017-04-21

ملک کی خوشحالی۔۔حکومت کا بڑا ہدف

عالمی سطح پر بھی اب ہمیں ان ملکوں کی صف میں شامل کیا جاتا ہے جن ملکوں نے سخت نامساعد حالات میں بھی بڑی محنت کرکے اداروں کو مضبوط کرکے معاشی اور تجارتی اہداف کو چھوا کیونکہ جن داخلی مسائل سے ہم نبرد آزما ہیں ایسے حالات میں بھی کوئی بھی ملک ہو اپنے ہاتھ کھڑے کر دیتا۔ لیکن ہماری قیادت اور پاک فوج کے حرکت میں آنے کی وجہ سے اب ملکی حالات معمول پر آرہے ہیں

تاریخ اشاعت: 2017-04-21

این اے 148 کی بدلتی ہوئی سیاسی صورتحال

عام انتخابات کاشور پیدا ہوتے ہی این اے 148 میں عام انتخابات کی تیاریاں اب سے ہی شروع ہو چکی ہیں۔ سیاستدان حلقہ میں لوگوں کے دکھ درد میں بڑھ چڑھ کر شامل ہو رہے ہیں۔ موجودہ ایم این اے ملک عبدالغفار ڈوگر نااہل کیس کی درخواست مسترد ہونے پر حلقہ میں ن لیگ متحد ہوئی ہے

تاریخ اشاعت: 2017-04-18

پوری قوم کی نظرین پاناماکیس پر لگی ہیں

فیصلہ کس سیاستدان کواپنے ساتھ بہالے جائے گا

تاریخ اشاعت: 2017-04-17

پیش آمدہ چیلنج اور درپیش خطرات

اس کے باوجود کہ ابھی الیکشن میں ایک سال باقی ہے لیکن ابھی سے سیاسی محاذ پر گرما گرمی دیکھنے میں آرہی ہے۔ ایک طرف زرداری جو سب پر بھاری ہیں اپنی مردہ پیپلزپارٹی میں جان ڈالنے کی ناکام کوشش کر رہے ہیں تو دوسری طرف میاں نواز شریف جنہوں نے 1998 ء کے بعد سے سندھ میں جانا بھی بھول گئے تھے۔ اب ان کو بھی بقول مولابخش چانڈیو سندھ کی یاد آنے لگی ہے۔ عمران خان نے شاید قسم کھا رکھی ہے

تاریخ اشاعت: 2017-04-12

پاکستان کے عوام اور سیاسی تماشے

پاکستان میں اتنی تعداد میں سیاسی جماعتیں موجود ہیں کہ ان کی صحیح تعداد کا شاید ہی کسی پاکستانی کو علم ہو بہرحال اتنی وافر تعداد میں سیاستدانوں کو اپنا کھیل کھیلنے کیلئے ایک وسیع میدان کی ضرورت ہے۔ جبکہ پاکستان اپنی بڑی سیاسی آبادی کیلئے ایک چھوٹا ملک ہے اگر سیاستدانوں کی باہر کی منڈیوں میں خرید و فروخت کا رواج ہوتا تو پاکستان اپنی جمہوری اور سیاسی صنعت سے بہت بڑا زرمبادلہ کما سکتا تھا

تاریخ اشاعت: 2017-04-12

پی پی پی ا ورن لیگ کی انتخابی مہم

پچھلے دنوں نوڈیرو میں پی پی پی کے عوامی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے اعتزاز احسن نے اپنی انتہائی مدبرانہ فہم و فراست سے کہا کہ ” آج ملک میں کوئی اور تو اتنا محفوظ نہیں جنتا کہ پا نا ما لیکس کا فیصلہ محفوظ ہے“ ۔جلسے میں عوامی توجہ حا صل کرنے اور تالیاں بجوا نے کے لئے اعتزاز احسن نے یہ بات کہنے کو تو کہہ دی مگر انہیں خو د بھی یہ معلوم ہونا چا ہئے کہ کچھ معاملات اپنی اہمیت کے لحاظ سے بہت زیادہ خا ص ہوتے ہیں

تاریخ اشاعت: 2017-04-11

اپنا وزیراعظم منتخب کروانے کا دعویٰ معنی خیز

پچھلے ڈیڑھ ماہ سے پوری قوم پانامہ پیپرز لیکس پر سپریم کورٹ کے فیصلے کا انتظار کر رہی ہے جب کہ سیاسی جماعتوں کی بے تابی دیدنی ہے اپوزیشن کی جماعتیں جو انتخابی معرکہ میں تو مسلم لیگ(ن) کو شکست نہ دے سکیں وہ” عدالتی فیصلہ “کے ذریعے شریف خاندان کو ملکی پالیٹکس سے آؤٹ کرنے کی خواہش مند نظر آتی ہیں۔ پچھلے چند دنوں سے حکومت اور اپوزیشن کے درمیان محاذ آرائی میں بھی شدت پیدا ہو گئی ہے

تاریخ اشاعت: 2017-04-10

آئندہ حکومت سازی کے لئے منصوبہ بندی شروع

گڑھی خدا بخش میں سابق صدر آصف علی زرداری کی تقریر کے بعد سیاسی حلقوں میں یہ بات موضوع بحث بن گئی کہ آئندہ حکومت کون بنائے گا۔ سابق صدر نے گڑھی خدا بخش میں پہلی بار مختصر تقریر کی لیکن بلاول بھٹو وزیراعظم پر خوب گرجے برسے۔ آصف علی زرداری نے یہ اعلان کیا ہے کہ وہ آئندہ حکومت بناکردکھائیں گے۔ ایک جانب پیپلز پارٹی اپنی باری کی تیاری کررہی ہے دوسری جانب وہ تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان سے پریشان ہے

تاریخ اشاعت: 2017-04-10

ملتان جنوبی پنجاب کی سیاست کے میدان میں تبدیل

مفادات کی جنگ الجھے سیاستدان مخالفین پر حملوں میں مصروف

تاریخ اشاعت: 2017-04-08

فہرست 1 سے 12  تک   (695 ریکارڈز )