تازہ ترین : 1
Nimat .... aik amanat

نعمت ۔۔۔۔ ایک امانت

ہر امانت ایک ذمہ داری ہے۔ نعمتوں کا یہاں اور وہاں دونوں جہاں میں آڈٹ ہوتا ہے کہ کون سی نعمت کب، کیسے اور کہاں استعمال ہوئی

مصنف : ڈاکٹر اظہر وحید
نعمتیں سامانِ عیش و عشرت نہیں۔ نعمتیں امتحان ہوتی ہیں۔۔۔۔۔ کیونکہ نعمتیں بمنزلہِ امانت ہیں۔ ہر امانت ایک ذمہ داری ہے۔ نعمتوں کا یہاں اور وہاں دونوں جہاں میں آڈٹ ہوتا ہے۔ کون سی نعمت کب، کیسے اور کہاں استعمال ہوئی، اس کے تسلی بخش جواب پر بخشش منحصر ہے۔ مالک کی طرف سے طے شدہ اذن اور ضابطے کے خلاف کسی امانت پر متصرف ہونے والا امانت میں خیانت کا مرتکب ہوتا ہے۔
اپنے زیرِ تصرف مال، اسباب اور صلاحیتوں کو من چاہے طریق پر استعمال کرنے والا نعمتوں کو اپنا پیدائشی حق سمجھتا ہے۔۔۔۔۔۔ اور یہیں سے دوسروں کی حق تلفی کا امکان پیدا ہوتا ہے۔ دوسروں کا حق تلف کیا جائے تو نعمتیں سلب ہونے لگتی ہیں۔ سلب شدہ نعمتوں کی بحالی کیلئے نعمتوں میں ناجائز تصرف پر معافی اور دوسروں کی حق تلفی کی تلافی چاہیے۔
وقت اشاعت : 2017-12-04

(0) ووٹ وصول ہوئے

Dr. Azhar Waheed

مصنف کا نام : ڈاکٹر اظہر وحید

ڈاکٹر اظہر وحید کی مزید تحریریں پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے-

اپنی رائے کا اظہار کریں