بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ اگست

تازہ ترین خبریں

تحریک انصاف کا آزادی مارچ عمران خان کی قیادت میں اسلام آباد پہنچ گیا

یوم آزادی کے دن لاہور سے چلنے والا تحریک انصاف کا آزادی مارچ عمران خان کی قیادت میں دو دن کے طویل سفر کےبعد ہزاروں کارکنان کے ہمراہ اسلام آباد پہنچ گیا۔تحریک انصاف کا آزادی مارچ 14 اگست کے دن لاہور کے زمان پارک سے عمران خان کی قیادت میں روانہ ہوا جو پورا دن لاہور میں ہی موجود رہا، لاہور میں مارچ سست روی کا شکار ہوگیا قافلہ صبح چار بجے کے قریب لاہور شہر سے نکل کر کامونگی سے ہوتا ہوا گوجرانوالہ پہنچا جہاں قافلہ اپنے جوش وخروش سے آگے بڑھ رہا تھا کہ اس دوران تحریک انصاف اور مسلم لیگ (ن) کے کارکنان میں تصادم ہوگیا جس میں تحریک انصاف کے مارچ پر پتھراؤ کیا گیا جس کے نتیجے میں کئی کارکن بھی زخمی ہوگئے تاہم پولیس نے موقع پر پہنچ کر صورتحال پر قابو پایا جس کے بعد عمران خان نے آزادی مارچ کے شرکا کو تیزی سے آگے بڑھنے کی ہدایت کی اور آزادی مارچ کے شرکا پارٹی قائد کی ہدایت پر تیزی سے آگے بڑھتے ہوئے وزیرآباد، گجرات، کھاریاں، جہلم، دینہ، گوجر خان، مندرا اورسوہاوا سے ہوتے ہوئے ٹول پلازہ انٹرچینج کے ذریعے اسلام آباد میں داخل ہوئے

بین الاقوامی خبریں -

آج کا اخبار

آزادی و انقلاب مارچ اسلام آباد کیلئے چل پڑے ، نوازشریف سے استعفیٰ لینے اسلام آباد جارہا ہوں احتجاج کرنا ہمارا جمہوری حق ہے‘عمران خان،انقلاب کا مقصد غربت کا مکمل خاتمہ، ملک کے مظلوم ،محکوم اور مجبور عوام کو ان کے جائز حقوق دلوانا ہیں‘ طاہرالقادری

عمران خان نے کہا کہ آزادی کوئی پلیٹ میں رکھ کر پیش نہیں کرتا ،آزادی چھیننا پڑتی ہے،اس کیلیے لڑنا پڑتا ہے،گرمی کی فکر نہ کریں ، آپ کیساتھ اسلام آباد پہنچوں گا

لاہورہائیکورٹ کے فیصلے کے مطابق تحریک انصاف اور عوامی تحریک کو اسلام آباد میں جلسے کی اجازت دیدی ہے،چوہدری نثار ،اسلام آباد کی سیکورٹی بالعموم اور ریڈ زون کی سیکورٹی کو فول پروف بنایا گیا ہے،عمران خان کے اعلان کے مطابق 10لاکھ افراد کی سیکورٹی کا بندوبست مکمل کرلیا ہے، کسی نے ریڈلائن کو عبور کیا تو قانون اس کے خلاف بڑی تیزی سے حرکت میں آئے گا ،موجودہ سیاسی صورتحال میں تمام چھوٹی بڑی سیاسی جماعتوں نے آئین وقانون کیساتھ کھڑے ہوکر جمہوریت دوستی کا ثبوت دیا ہے،فوج کو موجودہ صورتحال میں گھسیٹنا زیادتی ہوگی،انہیں پوری قوم کی مدد کی ضرورت ہے،حکومت نے انتخابی اصلاحات کیلئے کافی حد تک ہوم ورک مکمل کرلیا ہے،تاہم اس میں تحریک انصاف سمیت دیگر سیاسی جماعتوں کی مشاورت سے مزید بہتری لائی جائے گی،تمام تر الزام،گالم گلوچ اور دیگرلعن طعن کو حکومت نے نظرانداز کرتے ہوئے تعمیری کردار ادا کیا ، پاکستان کو بنانا سٹیٹ کی طرح تماشا نہیں بننے دیں گے، ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب

عوامی اور فوجی قیادت کا ایک جگہ مل بیٹھنا ہی اصل انقلاب ہے ،نواز شریف، 10سال پائیدار امن کے مل جائیں تو پاکستان ترقی کی بلندیوں کو چھولے گا ، انقلاب اور آزادی مارچ کرنے والے مارچ کریں لیکن عوام کی خدمت پر بھی توجہ دیں،ترقی سے ہماری توجہ نہ ہٹائی جائے ،پاکستان کسی تخریب کاری کا متحمل نہیں ہوسکتا ،قائداعظم ریذیڈنسی کی اصل حالت میں بحال کے بعد افتتاح کے بعد تقریب سے خطاب

پاکستان کا 68 واں یوم آزادی ملی جوش و جذبے سے منایا گیا، ملک میں ہر طرف سبز ہلالی پرچموں کی بہار،شہر شہر ملی نغموں اور قومی ترانوں کی گونج نے سماں باندھ دیا ، یوم آزادی پر ملک بھر میں عام تعطیل رہی،فاقی دارالحکومت میں 31 جبکہ صوبائی دارالحکومتوں میں 21، 21 توپوں کی سلامی دی گئی،تحریک آزادی پاکستان کے شہدا کیلئے قرآن خوانی کا اہتمام ، مرکزی تقریب وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ہوئی وزیراعظم نواز شریف پرچم نے پرچم کشائی کی،ایوان صدر اسلام آباد میں ہونے والی پرچم کشائی کی تقریب میں صدر ممنون حسین، وزیراعظم نواز شریف، مسلح افواج کے سربراہان، اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق، وفاقی وزراء اور ارکان پارلیمنٹ نے شرکت کی،، آپریشن ضرب عضب کے شہداء کی یاد میں ایک منٹ کی خاموشی بھی اختیار کی گئی، آزادی کی تقریبات کیلئے جنوبی ایشیا کا سب سے بڑا سبز ہلالی پرچم اسلام آباد میں لہرایا گیا

کوئٹہ ایئربیس کے قریب راکٹ حملوں کے بعد فائرنگ، جوابی کارروائی میں 2 حملہ آور ہلاک

سیاستدان مہم جوئی نہ کریں تو پاکستان مثالی ترقی کرسکتا ہے،صدر ممنون حسین،قائداعظم کے سنہری اصولوں پر عمل کیا تو کامیابی ہمارا مقدر ہوگی،ملک کے حالات اس بات کے متقاضی ہیں کہ سیاست دان پھونک پھونک کر قدم اٹھائیں،منظم سازش کے دہشتگردی پھیلائی جا رہی ہے آپریشن ضرب عضب میں پوری قوم مسلح افواج کے ساتھ یکسو ہو کر کھڑی ہے، ملک کی تقدیر بدلنے والے منصوبوں میں کوئی رکاوٹ نہ ڈالی جائے،68ویں یوم آزادی کے موقع پر ایوان صدر میں پرچم کشائی کی تقریب سے خطاب

پنجاب حکومت نے پاکستان عوامی تحریک کو مشروط طور پر انقلاب مارچ کی اجازت دے دی، طاہر القادری کی قیادت میں انقلاب مارچ اسلام آباد کی طرف روانہ ،امن و امان کی یقین دہانی پر وزیر اعلیٰ پنجاب نے انقلاب مارچ کو مشروط اجازت دینے کا فیصلہ کیا

لاہور ہائیکورٹ کے3رکنی فل بنچ نے آ زادی اور انقلاب مارچ اور اسلام آباد دھرنے کے خلاف تفصیلی فیصلہ جاری کر دیا، احتجاج کرنیوالے کارکنوں اور ان کے لیڈروں کو آئین کی خلاف ورزی پر قانونی چارہ جوئی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے،عدالت

عوامی تحریک اور تحریک انصاف کے مطالبات غیر آئینی ہیں،شہبازشریف ،آزادی کے دن کو بھی متنازعہ بنا دیاگیا ہے،پی ٹی آئی جن کو چور کہتی تھی آج وہ ان کے ساتھ کنٹینر میں کھڑے ہیں،دونوں جماعتیں انتشارپھیلانا چاہتی ہیں عوام کی طاقت سے تمام دھرنوں کو ناکام بنائیں گے، بیان

چند ہزار لوگوں کی پی ٹی آئی کے لانگ مارچ میں شرکت سے دس لاکھ لوگ اکٹھے کرنے کے دعوی کی قلعی کھل گئی،رانا مشہود احمد خاں،پاکستانی قوم پرویز الہی اور شیخ رشید جیسے کرپٹ سیاست دانوں کا احتساب چاہتی ہے، ایسے سیاسی بونوں کی اصلیت سے لوگ آگاہ ہیں،متنازعہ ویڈیو کلپ کو اعلی عدالتیں جعلی قرار دے چکی ہیں،کیا میں چھلاوا ہوں جسے ایک ہی وقت میں تین مختلف ڈریس پہن کربات کرتے دکھایا گیا ہے،وزیر قانون پنجاب کی پریس کانفرنس

ہم روشن مستقبل کی بنیاد رکھنے جارہے ہیں،ایسی تبدیلی آئے گی جو پہلے کبھی کسی نے نہیں دیکھی، پرویزالٰہی

تحریک انصاف نے یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ ریڈ زون میں داخل ہونگے نہ ہی شہری زندگی آزادی مارچ سے متاثر ہوگی، خواجہ سعد رفیق

عمران خان اور طاہرالقادری نے ریڈ زون میں داخل نہ ہونیکی یقین دہانی کرائی ہے، گورنر پنجاب، دونوں جماعتوں کے مارچ ریڈ زون میں داخل نہیں ہوں گے، ہم سب کو ملک کا مفاد مقدم رکھنا چاہیئے، چوہدری محمد سرور

طاہر القادری اور عمران خان کو ہائی کورٹ کا تفصیلی فیصلہ بھی فراہم کردیا گیا ہے اب دونوں قائدین دس دس لاکھ کا مجمع اکٹھا کریں،سعد رفیق

حکومت پنجاب کا طاہرالقادری کے انقلابی مارچ کو بھی محفوظ راستہ دینے کا فیصلہ،حکومت پنجاب کسی کو بھی نہیں روکے گی، طاہر القادری ریڈ زون میں داخل نہیں ہونگے ۔چوہدری محمد سرور ، طاہر القادری سمیت دیگر نے معاہدہ کیاہے کہ وہ ریڈ زون میں داخل نہیں ہونگے، زیرو پوائنٹ پر رک جائینگے، دھرنے کے حوالے سے لاہور ہائی کورٹ نے جو حکم دیا وہ اس پر من وعن سے عمل ہوگا،گورنر پنجاب، گورنر سندھ کا ملکی سیاسی صورتحال اور لاہور اور اسلام آباد میں احتجاج پروفاقی وزیر داخلہ نثار احمد،گورنر پنجاب محمد سرور اور پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری سے ٹیلی فونک رابطہ

قائد اعظم ریذیڈنسی اپنی اصلی حالت میں بحال ہو گئی، آئی ایس پی آر ، پاکستان کو نقصان پہنچانے والے منصوبے خاک میں ملا دیں گے،میجر جنرل عاصم باجوہ

وزیرقانون پنجاب رانا مشہود ویڈیو کلپ معاملہ ، وزیراعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر اشفاق سرور نے تین رکنی کمیٹی تشکیل دے دی ،کمیٹی سات روز میں اپنی سفارشات وزیراعلیٰ شہباز شریف کو پیش کرے گی

پاکستان میں جمہوری حکومت کی مکمل حمایت کرتے ہیں، امریکا ،سیکریٹری جنرل اقوام متحدہ نے اپوزیشن کے احتجاج پر براہ راست تبصرے سے انکار کردیا

سعودی عرب نے پاکستانی،مصری فوج کو اس کی شمالی سرحد پر اسلامک اسٹیٹ کے عسکریت پسندوں کیخلاف تعیناتی بارے خبروں کی تردید کر دی

پاکستانی فوج نے چھ روز میں پانچویں بار سیز فائر کی خلاف ورزی کی، پونچھ سیکٹر میں بھارتی فوجی چوکیوں پر بلااشتعال فائرنگ کی ہے ،بھارت کا الزام

پی آئی اے کا طیارہ لیبیاء میں پھنسے 500 پاکستانیوں کو لے کر وطن واپس پہنچ گیا

ویڈیو قطعی طو رپر جعلی ہے،نجی چینل کو ہرجانے کا نوٹس بھجوا رہے ہیں ، رانامشہود ،اس ویڈیو کو 2012ء میں ایف آئی اے بھی جھوٹا قرار دے چکی ہے ،بیان

دو کی لڑائی میں تیسرے کوبیچ میں نہیں آنا چاہئے،اعتزاز احسن ،مارچ کی اجازت کے بعد اب ساری ذمہ داری عمران خان اور طاہر القادری کے کندھوں پرآگئی ہے،نجی ٹی وی پروگرام میں گفتگو

جشن آزادی پاکستان کے موقع پر ایل او سی پر تعینات پاک بھارت فوجیوں نے مٹھائیوں کا تبادلہ کیا گیا

پاکستان کی سرزمین اب بھی بھارت کے خلاف استعمال ہو رہی ہے،ترجمان بھارتی وزارت خارجہ

وفاقی حکومت نے تحریک انصاف کو آبپارہ چوک میں جلسہ کرنے کی اجازت دیدی، زیرو پوائنٹ کی بجائے آبپارہ چوک میں جلسہ کیلئے سٹیج سجا دیا گیا

اہم خبریں -قومی خبریں -بین الاقوامی خبریں -کھیل -

حالیہ تبصرے

ندیم احمد 26-03-2017 11:37:12

محترم : بصد احترام ۔ اسلامی اتحادی فوج کے سربراہ نہ بن کر کون سی مزید ترقی ہوگی

  مزید
کاشف 26-03-2017 08:47:37

اس خبر میں "اعزاز حاصل ہو گیا " کے الفاظ پر اعترض ہے ..... یہ بدکاری کے نتیجے میں پیدا ہونے والا بچہ ہے جس پر مقدّمہ بھی بن گیا ... الفاظ کا چناؤ سوچ کر کرنا چاہیے

  مزید
انورزیب 25-03-2017 21:52:34

میں تمہیں بہت پسند کرتا ہوں اور میں اپ کے ساتحہ شادی کرنا چاہتا ہوں

  مزید
اشفاق احمد 24-03-2017 21:14:20

ذرا نم ہو تو یہ مٹی بڑی زرخیز ہے ساقی

  مزید
عبدالباسط 23-03-2017 13:27:11

بہت اچھا ہے۔ مزید بہتری کی ذرورت ہے۔ خبر کو خوبصورت بنانے کے لیے حقاق ذروری ہیں۔

  مزید
Ashraf 22-03-2017 23:15:21

wrong, 1st is ABL wo offer

  مزید

ہماری ای میل لسٹ میں شامل ہوں

آج کا سوال

آج کا سوال
جوں جوں 14 اگست قریب آ رہی ہے۔ آزادی مارچ، انقلاب کے حوالے سے ملکی سیاست گرم ہوتی جا رہی ہے۔ دونوں اطراف سے رابطے جاری ہیں۔ آپ کے خیال میں کیا 14 اگست یا اس سے قبل کوئی تبدیلی پیش آ‌سکتی ہے؟
آپ اس سوال پر ووٹ دینے کے علاوہ اپنا تبصرہ بھی شامل کر سکتے ہیں۔
آزادی مارچ یا انقلاب ہوگا ہی نہیں، عمران خان اور طاہر القادری حکومت سے مفاہمت کر لیں گے۔
طاہر القادری اور عمران خان ملک میں نئی تبدیلی کا پیش خیمہ ثابت ہوں گے، 14 اگست سے قبل یا بعد میں تبدیلی ضرور آئے گی۔
نتائج
سوال پر رائے دیجئے۔

دوسرے قارئین کی رائے پڑھئیے۔