بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
اتوار اگست

تازہ ترین خبریں

طاہر القادری نے 14اگست کو انقلاب مارچ کا اعلان کر دیا ، آزادی مارچ اور انقلاب مارچ ساتھ ساتھ چلیں گے ، ظلم کا خاتمہ کیا جائے گا ، طاہر القادری

پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ علامہ ڈاکٹر طاہر القادری نے 14 اگست کو انقلاب مارچ کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم کسی صورت ملک میں مارشل لا کا نفاذ نہیں چاہتے۔ ہم آئین، قانون اور جمہوریت نہیں بلکہ مارشل لا کیخلاف ہیں۔ ہم پاکستان میں حقیقی جمہوریت کے حامی ہیں۔ کسی صورت مارشل لا کی حمایت نہیں کرینگے۔پاکستان عوامی تحریک کے زیر اہتمام یوم شہداء کی تقریب سے خطاب میں ڈاکٹر طاہر القادری کا کہنا تھا کہ 14 اگست کو آزادی مارچ اور انقلاب مارچ اکھٹے چلیں گے اور حکمرانوں کے ظلم کا تختہ الٹ دیں گے۔ ظلم کے نظام کے خاتمے تک کوئی گھر واپس نہیں آئے گا۔ جو واپس آئے اسے بھی شہید کر دو۔ اگر میں شہید کر دیا جائوں تو میرے قتل کا بدلہ ''شریف برادران'' سے لیا جائے۔ ڈاکٹر طاہر القادری کا کہنا تھا کہ پاک فوج کے جوانوں نے دہشتگردی کیخلاف اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا۔ یوم شہداء پاک فوج کے شہیدوں کی یاد میں ہے۔ آج آپریشن ضرب عضب کے شہداء کو خراج عقیدت پیش کرنے کا دن ہے

قومی خبریں -بین الاقوامی خبریں -

آج کا اخبار

ملک سیاسی محاذآرائی کا متحمل نہیں ہوسکتا،انقلاب کے نام پر کسی کو رخنہ ڈالنے کی اجازت نہیں دیں گے، وزیراعظم نواز شریف،اگر کسی کو آپریشن پر تحفظات ہیں تو سننے کیلئے تیار ہیں، اس وقت ملک کو بہت سے چیلنجز درپیش ہیں، اگر کسی سیاسی جماعت کے کوئی جائر مطالبات ہیں اور وہ حکومت اور آئین کے زمرے میں آتے ہیں تو ان سے بات ہو سکتی ہے،ہم عمران خان سے بات چیت کرنے کو تیار ہیں،وہ ہمارے ساتھ بیٹھیں، کسی بھی ہچکچاہٹ کے بغیر ان کی بات سنیں گے،مسائل کے حل کے لئے سب کو دست تعاون بڑھانا چاہئے، قومی سلامتی کانفرنس سے خطاب

انہوں نے کہاکہ ہم نے گزشتہ دورحکومت میں بطورا پوزیشن ذمہ داری کا ثبوت دیا اور مجھے امیدہے کہ موجودہ حکومت بھی ذمہ داری کاثبوت دیگی

دہشتگردی کے خاتمے کیلئے طویل مدت حکمت عملی تشکیل دی جائے ،ریاست کو عسکریت پسندی کے مکمل خاتمے تک لڑنا ہوگا، قومی سلامتی کانفرنس کا اتفاق،کانفرنس میں مسلح افواج کی کامیابیوں کو خراج تحسین اور ملک کیلئے قربانیاں دینے والوں کو خراج عقیدت پیش کیا گیا ، مربوط اقدامات کے ذریعے دہشتگردوں کو رقوم کی فراہمی روکی جارہی ہے ، بے گھر ہونے والے لوگوں کیلئے تمام وسائل استعمال کئے جارہے ہیں،انہیں کسی صورت تنہا نہیں چھوڑینگے ، مسلح افواج آپریشن ضرب عضب میں عوام کے جان ومال کے تحفظ اور بڑا نقصان نہ ہونے کو یقینی بنانے کی پالیسی پر کاربند ہیں، وزیراعظم میاں محمدنواز شریف کی صدارت میں ہونے والی قومی سلامتی کانفرنس کے بعد جاری بیان، دہشتگرد بھاگ رہے ہیں، ان کا کمانڈ اینڈ کنٹرول سسٹم تباہ کردیا گیا، ڈائریکٹرجنرل ملٹری آپریشنز میجر جنرل عامرریاض کی سیاسی قیادت کو جاری آپریشن ضرب عضب کی بریفنگ، آپریشن ضرب عضب کے شہداء کیلئے فاتح خوانی بھی کی گئی

افغانستان میں نئی حکومت کے آتے ہی خصوصی وفد افغانستان بھیجا جائے،جنرل راحیل شریف کا وزیر ا عظم کومشورہ،آپریشن ضرب عضب بڑی کامیابی کی طرف جاری ہے، فوج زیادہ دیر تک شمالی وزیرستان میں قیام نہیں کریگی،ابھی مسلح افواج کو اور بھی آگے بڑھنا ہے ۔ شوال میں فوج کو مزاحمت کا سامنا ہے لیکن جلد شوال کو بھی کلیئر کردینگے ۔ ہماری کوشش ہے جو علاقے پاک فوج نے کلیئر کردیئے ہیں وہاں پر آئی ڈی پیز کوبھجوا دیا جائے ،آرمی چیف کا قومی سلامتی کے اجلاس میں اظہار خیال،سیاسی جماعتوں کا عسکری قیادت کو جمہوریت کا ساتھ دینے کا اصرار، قبائلی روایات کے مطابق مہمان داری کے دوران بھی کئی بے گناہ لوگوں کو مشکوک سمجھ کر پکڑ لیا جاتا ہے اس کی روک تھام کی جائے ، مولانا فضل الرحمان، سراج الحق،آرمی چیف کی تحقیقات کرنے کی یقین دہانی

پنجاب میدان جنگ بنا رہا ، مختلف شہروں میں عوامی تحریک کے کارکنوں اور پولیس میں تصادم، عوامی تحریک کے کارکنوں کے تشدد اور فائرنگ سے 3پولیس اہلکار جاں بحق، درجنوں پولیس اہلکار و کارکن زخمی ، متعدد گاڑیاں جلا دی گئیں، طاہر القادری و کارکنوں کیخلاف مقدمات درج

عوام تحریک کے زیر اہتمام یوم شہداء آج منایا جائے گا

طاہر القادری بیانات بدلتے رہے ، کارکنوں کو لاہور آنے سے روکا ، پھر لاہور آنے کی ہدایت کر دی ،یوم شہداء کو روکنے کے لئے ظلم کی انتہائی ہوگئی،طاہر القادری ،بہت کچھ ہو چکا اب برداشت نہیں کریں گے ہمارے ہزار سے زائد کارکنوں کو زخمی کیا گیا ہے ،میڈیا سے گفتگو

عمران خان نے دسمبر میں نئے عام انتخابات کی پیشنگوئی کردی، حکومت کی طرف سے مذاکرات کی پیشکش کو مسترد کر دیا، وزیر اعظم سے ملاقات چودہ اگست کے بعد ہوگی، عمران خان ،جمہوری لیڈر ہوں نوازشریف کی بادشاہت کا درباری نہیں جو ان سے بات کروں، مجھے کچھ ہوا تو کارکنوں شریف برادران کو نہ چھوڑیں ، تحریک انصاف کے چیئرمین کی میڈیا سے گفتگو

وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات کا عمران خان اور خیبر پختونخواہ کے وزیراعلیٰ کی قومی سلامتی کانفرنس میں عدم شرکت پر سخت افسوس کا اظہار ، عمران خان کی کانفرنس میں عدم شرکت پر تو سوال اٹھ سکتے ہیں، اس کانفرنس کے مقاصد سے ان کا دور ہوجانا ایک سوالیہ نشان ہیں ، پرویز رشید ،محاذ آرائی اور کشمکش کو ختم کرنے کیلئے حکومت لچک دکھانے کو تیار ہے مگر خدا کیلئے عمران خان یوم آزادی اور قوم کی خوشیوں کو برباد نہ کریں ، طاہر القادری اگر کارکنوں کو تشدد پر اکسانے کے بیانات واپس لیں تو ان کیلئے بھی ہم لچک دکھا دینگے ، عمران خان بتائیں کہ وہ کہاں دھرنا دینگے تاکہ سکیورٹی او دیگر انتظامات کئے جاسکیں،حکومت کی حکمت عملی سے آج ہم روزمرہ کے حادثات سے محفوظ ہوئے ہیں،طویل عرصہ بعد پہلی عید کسی بڑے حادثے سے محفوظ رہی ہے اور اچھے دن دیکھنے کو ملے ہیں ، اتحاد اور یکجہتی کی ضرورت ہے ، ۔ قومی سلامتی کانفرنس کے بعد میڈیا سے گفتگو

بھارت نے تین روز قبل پکڑے جانے والے پاکستانی شہری کی لاش پاکستان کے حوالے کردی

پنجاب حکومت نے طاہر القادری اور پولیس پر حملہ کرنے والے کارکنوں کیخلاف دہشتگردی اور بغاوت کا مقدمہ درج کرنے کا فیصلہ کر لیا‘وزیرقانون پنجاب،چند سیاسی یتیم مل کر پاکستان کو کمزور کرنا چاہتے ہیں، رانا مشہود،پاکستان کے عوام غیرملکی ایجنٹوں کو ایسا کرنے کی ہرگز اجازت نہیں دیں گے، عمران خان نے لاہور کے لوگوں کی محبت تو دیکھی ہے ، انہیں مجبور نہ کیا جائے کہ وہ اپنا غصہ بھی دکھائیں،جھوٹ کی بنیاد پر لانگ مارچ کا ارادہ ترک نہ کیا تو لاہور کے لاکھوں عوام زمان پارک کا گھیراؤ کریں گے، صوبائی وزیر قانون

سانحہ ماڈل ٹاؤن ، انکوائری ٹربیونل نے اپنی رپورٹ حکومت پنجاب کے حوالے کردی

پاکستان بیش بہا قربانیوں کے نتیجے میں معرض وجود میں آیا ہے،بعض عناصر ملک کو عدم استحکام سے دو چار کرنا چاہتے ہیں:شہبازشریف،قوم اس سال اپنا68واں یوم آزادی منا رہی ہے،افسوس کی بات ہے کہ یوم آزادی کو متنازعہ بنایا جارہا ہے ،کچھ سیاسی اور کچھ غیر سیاسی عناصر اپنے مذموم مقاصد کی تکمیل کیلئے ملک کو اندھیروں میں دھکیلنے کی کوشش کررہے ہیں،عوام ان کا ساتھ نہیں دیں گے، قوم جاننا چاہتی ہے کہ لانگ مارچ اور دھرنے کے پیچھے اصل مقاصد کیا ہیں؟ لانگ مارچ اور دھرنا دینے والے نہیں چاہتے کہ ملک ترقی کی راہ پر گامزن ہو،دور آمریت میں غریب عوام کی کمائی لوٹنے والے انقلاب کے نعرے لگارہے ہیں،18کروڑ عوام ملک کی ترقی کے خلاف سازشوں کو دفن کردیں گے،یہ وقت منفی سیاست کا نہیں بلکہ دہشت گردوں کے خلاف برسرپیکار پاک فوج کے افسروں اور جوانوں کا حوصلہ بڑھانے کا ہے،وزیراعلیٰ کی مختلف وفود سے گفتگو

وزیراعظم نے ایک مرتبہ پھر جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق کو عمران خان کو مذاکرات پر راضی کرنے کا ٹاسک دیدیا

پنجاب حکومت کا طاہر القادری کی کینڈین شہریت منسوخ کرانے کیلئے خط تیار

امریکہ نے اپنے شہریوں کیلئے سفری انتباہ جاری کردیا ،شہری پاکستان کا غیر ضروری سفر نہ کریں ،پاکستان میں مقیم شہری بڑ ے اجتماعات ، مظاہروں اور ریلیوں سے دور رہیں ، امریکی سفارتخانہ اور قونصلیٹ اپنے شہریوں کو خدمات فراہم کریں ، بیان

عمران خان عوامی تحریک کے یوم شہدا میں شرکت نہیں کریں گے،شیریں مزاری

عمران خان نے حکومتی مذاکراتی ٹیم سے ملنے سے صاف انکار کردیا ،خورشید شاہ ،محمود خان اچکزئی ، میر حاصل بزنجو حکومتی مذاکراتی ٹیم میں شامل ، جماعت اسلامی کے ذریعے عمران خان سے ملنے کی خواہش ، آئین کے اندر رہتے ہوئے تمام مطالبات حل کرنے کی یقین دہانی، حکومت نے لانگ مارچ میں کھڑی رکاوٹیں ختم کرنے کا بھی فیصلہ کیا ہے ، ذرائع

تحریک انصاف کی طرف سے اسلام آباد انتظامیہ کو ابھی تک وفاقی دارالحکومت میں جلسے کی اجازت کے لئے درخواست موصول نہیں ہوئی، کامران چیمہ،سلام آباد میں ابھی مکمل طور پر فوج تعینات نہیں کی گئی تاہم حساس مقامات و عمارتوں کی سیکیورٹی فوج کو دی گئی ہے۔ درخواست ملنے کے بعد عمران خان کو زیرو پوائنٹ یا فیض آباد میں جلسے کی اجازت دی جا سکتی ہے،اسٹنٹ کمشنر اسلام آباد

14اگست کو صرف مارچ ہوگا، مارچ کے سوا کچھ نہیں ہوگا ،شاہ محمود قریشی،مارچ سے قبل کسی راہنما، پارٹی یا حکومت کے ساتھ مذاکرات نہیں ہونگے،آزادی مارچ کے زریعے فوج کو دعوت دینا ہمارا ایجنڈا نہیں ،حکومت ہمارے خلاف فوج کو استعمال کرنا چاہتی ہے لیکن 1977کی طرح اب کی بار بھی فوج استعمال نہیں ہوگی ، خورشید شاہ کو چاہیے کہ وہ حکومت کا ساتھ دینے کے بجائے اپوزیشن کا کردار ادا کریں ،تحریک انصاف کو اگر اسلام آباد آنے سے روکا گیا تو حالات مزید خراب ہوں گے، ہم آئین کے دائرہ کے اندر رہ کر پرامن احتجاج کریں گے ۔ اسلام آباد میں صحافیوں کے ساتھ غیر رسمی ملاقات کے موقع پر گفتگو

عمران خان مذاکرات کا راستہ بند نہ کریں،جمہوریت پسند شخص ایسی باتیں نہیں کرتا،سید خورشید شاہ، کیا عمران خان بندوق کی طاقت سے اقتدار میں آئیں گے، خدانخواستہ کچھ ہوا تو کسی کے ہاتھ کچھ نہیں آئے گا، حکومت کوپہلے بھی کہا اور اب بھی کہتا ہوں عمرا ن خان کو آنے دیا جائے،آپریشن ضرب عضب پر بریفنگ 20یا25دن پہلے دی جاتی تو اچھے نتائج نکلتے ، آج کے حالات میں بریفنگ کا تاثر مختلف ہے،۔ قومی سلامتی کانفرنس کے حوالے سے میڈیاسے گفتگو

عمران اورطاہرالقادری میں سے جوقوم سے غداری کرے گا وہ نیست ونابود ہوجائے گا،شیخ رشید، حکومت کی قومی سلامتی کانفرنس صرف ایک فوٹو سیشن تھا جسے وزیراعظم کی حفاظتی کونسل کی میٹنگ بنا کر پیش کیا گیا ، سربراہ عوامی لیگ ، اس وقت پورے پنجاب میں آگ لگی ہوئی ،حکمرانوں نے ظلم کی انتہا کردی ، ناجانے کیوں عدلیہ اس کا نوٹس نہیں لے رہی، چوہدری پرویز الہی

انقلاب و آزادی مارچ کے پیش وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کو مکمل طور پر سیل کر دیا گیا ،فیض آباد سمیت دارالحکومت کی تمام داخلی و خارجی راستوں پر پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری تعینات کر دی گئی ، وفاقی پولیس کے دس ہزار، آزاد کشمیر کے ایک اور پنجاب پولیس کے چار ہزار اہلکاروں سمیت مجموعی طور پر 15ہزار سے زائد سیکیورٹی اہلکار اسلام آباد بھر کی سیکیورٹی پر مامور ہونگے،جدید امریکی کٹس،اسلحہ، ربڑ کی گولیاں، آنسو گیس کے شیل،ہلمٹ،ڈنڈے و دیگر ساز و سامان سے لیس کر دیا گیا، آج دارالحکومت کی فضائی نگرانی بھی شروع کر دی گئی

شمالی وزیرستان آپریشن کو جلد از جلد ختم کیا جائے۔سراج الحق،14اگست ایک قومی دن ، اسکو مکمل عزت ملنی چاہئے، حکومت سہولیات فراہم کرنے کا اعلان کردے تو یہ ایک بڑے پن کا مظاہرہ ہوگا، امیر جماعت اسلامی

حکمرانوں کے خلاف فیصلہ کن جنگ کی تیاری کر چکے ہیں ، عمران خان ،ملک میں جمہوریت رہے گی یا شریف خاندان کی بادشاہت، قائد تحریک انصاف

عمران خان اور تحریک انصاف نے آزادی مارچ کے لئے غلط وقت کا انتخاب کیا،59فیصد پاکستانیوں کی رائے،نواز شریف اور ان کی حکومت نے ملک کو مذاق بنا رکھا ہے ،38فیصد کا خیال، پیس کور کا سروے،طاہر القادری کے انقلاب پروگرام کو71فیصد پاکستانیوں نے ملک کے خلاف سازش قرار دیدیا

کوئی طرم خان یا بادشاہ بن کر ملک چلائے تو یہ ممکن نہیں، شاہد آفریدی

اہم خبریں -قومی خبریں -بین الاقوامی خبریں -کھیل -

حالیہ تبصرے

ندیم احمد 26-03-2017 11:37:12

محترم : بصد احترام ۔ اسلامی اتحادی فوج کے سربراہ نہ بن کر کون سی مزید ترقی ہوگی

  مزید
کاشف 26-03-2017 08:47:37

اس خبر میں "اعزاز حاصل ہو گیا " کے الفاظ پر اعترض ہے ..... یہ بدکاری کے نتیجے میں پیدا ہونے والا بچہ ہے جس پر مقدّمہ بھی بن گیا ... الفاظ کا چناؤ سوچ کر کرنا چاہیے

  مزید
انورزیب 25-03-2017 21:52:34

میں تمہیں بہت پسند کرتا ہوں اور میں اپ کے ساتحہ شادی کرنا چاہتا ہوں

  مزید
اشفاق احمد 24-03-2017 21:14:20

ذرا نم ہو تو یہ مٹی بڑی زرخیز ہے ساقی

  مزید
عبدالباسط 23-03-2017 13:27:11

بہت اچھا ہے۔ مزید بہتری کی ذرورت ہے۔ خبر کو خوبصورت بنانے کے لیے حقاق ذروری ہیں۔

  مزید
Ashraf 22-03-2017 23:15:21

wrong, 1st is ABL wo offer

  مزید

ہماری ای میل لسٹ میں شامل ہوں

آج کا سوال

آج کا سوال
جوں جوں 14 اگست قریب آ رہی ہے۔ آزادی مارچ، انقلاب کے حوالے سے ملکی سیاست گرم ہوتی جا رہی ہے۔ دونوں اطراف سے رابطے جاری ہیں۔ آپ کے خیال میں کیا 14 اگست یا اس سے قبل کوئی تبدیلی پیش آ‌سکتی ہے؟
آپ اس سوال پر ووٹ دینے کے علاوہ اپنا تبصرہ بھی شامل کر سکتے ہیں۔
آزادی مارچ یا انقلاب ہوگا ہی نہیں، عمران خان اور طاہر القادری حکومت سے مفاہمت کر لیں گے۔
طاہر القادری اور عمران خان ملک میں نئی تبدیلی کا پیش خیمہ ثابت ہوں گے، 14 اگست سے قبل یا بعد میں تبدیلی ضرور آئے گی۔
نتائج
سوال پر رائے دیجئے۔

دوسرے قارئین کی رائے پڑھئیے۔