ملائیشیا، ذرائع ابلاغ سے منسلک پانچ کارکن گرفتار
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ اپریل

تلاش کیجئے

ملائیشیا، ذرائع ابلاغ سے منسلک پانچ کارکن گرفتار

کوالالمپور(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔1اپریل۔2015ء) ملائیشیا میں حکام نے ایک نجی نیوز ویب سائٹ کے پانچ کارکنوں کو گرفتار کر کے ان کے خلاف بغاوت کی تحقیقات شروع کر دی ہیں۔"دی ملائیشین انسائڈرز" کا کہنا ہے کہ تین مدیروں، ایک ناشر اور ایک چیف ایگزیکٹو کو گرفتار کیا گیا اور بظاہر یہ شائع کی گئی اس حالیہ رپورٹ کا ردعمل ہے جس میں دعویٰ کیا گیا تھا کہ حکومت نے سخت اسلامی سزاوٴں کی اجازت سے متعلق ایک تجویز کو مسترد کر دیا ہے۔

پولیس نے اس ویب سائیٹ کے دفاتر پر پیر کو دیر گئے چھاپہ مارا اور وہاں سے کمپیوٹرز اور دیگر آلات قبضے میں لے کر مدیر اعلیٰ لیونل موریاس، فیچر ایڈیٹر ذولکفلی سولونگ اور ملائی نیوز ایڈیٹر امن اسکندر کو گرفتار کر لیا۔"انسائڈر" کے مطابق ناشر ہو کے ٹاٹ اور چیف ایگزیکٹو جبار صادق کو منگل کی صبح اس وقت حراست میں لیا گیا جب وہ وضاحت کے لیے پولیس اسٹیشن حاضر ہوئے۔ان افراد سے نو آبادیاتی دور کے بدنام زمانہ بغاوت ایکٹ کے تحت تفتیش کی جارہی ہے۔

اگر ان پر الزام ثابت ہوتا ہے تو انھیں تین سال قید کی سزا ہوسکتی ہے۔سرکاری خبر رساں ایجنسی "برناما" نے بھی تین مدیروں کی گرفتاری کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان پر "چھوٹی خبریں" شائع کرنے کا شبہ ہے۔ تاحال یہ واضح نہیں کہ خبر کے کونسے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

01-04-2015 :تاریخ اشاعت