حساس اداروں نے وفاقی پولیس کے چرسی پولیس اہلکاروں کا ڈیٹا اکٹھا کرنا شروع کردیا، ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر مارچ

مزید قومی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
- مزید خبریں

اسلام آباد

تلاش کیجئے

حساس اداروں نے وفاقی پولیس کے چرسی پولیس اہلکاروں کا ڈیٹا اکٹھا کرنا شروع کردیا، منشیات فروشی کی کثرت اور جرائم میں ممکنہ اضافے کو روکنے کے لیے 11ہزار 9سو پولیس اہلکاروں کے بارے مکمل معلومات جمع کی جائیں گی، ذرائع

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔30 مارچ۔2015ء )وفاقی وزارت داخلہ کی ہدایات حساس اداروں نے وفاقی پولیس کے چرسی پولیس اہلکاروں کا ڈیٹا اکٹھا کرنا شروع کردیا ، وفاقی دارالحکومت میں دیگر صوبوں کی نسبت منشیات فروشی کی کثرت اور جرائم میں ممکنہ اضافے کو روکنے کے لیے 11ہزار 9سو پولیس اہلکاروں کے بارے مکمل معلومات جمع کی جائیں گی۔ ذرائع،سچ تو یہ ہے کہ وفاقی پولیس کی مدد کے بغیر منشیات کافروخت اور استعمال ممکن نہیں ہو سکتا کیا کریں اپنے پیٹ سے پردہ اٹھانے والی بات ہے ۔

آئی جی اسلام آبادپولیس کے اعلیٰ افسر کا انکشاف ۔خبر رساں ادارے کو ذرائع سے حاصل مصدقہ معلومات کے مطابق سیکرٹریٹ بلاک کے داخلی راستوں پر پولیس وردی میں منشیات کی فروخت کی اطلاعات کے بعد اس بات کا فیصلہ کیا گیا ہے کہ وفاقی پولیس کو منشیات سے پاک اور جرائم پر قابو پانے کے لیے نئے سرے سے تیار کیا جائے گا ۔ ابتدائی معلومات کے مطابق حساس اداروں کی ٹیمیں اسلام آباد کے 19تھانوں سمیت داخلی ،خارجی ناکوں اور پولیس رہائشی گاہوں پر پوچھ گچھ کے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

30-03-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان