پشاور سمیت صوبے بھرکے تین ہزار سے زائد خواتین اورمرداساتذہ نے اسلحہ کے لائسنس ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر مارچ

مزید قومی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
تاریخ اشاعت: 2015-03-30
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

تلاش کیجئے

پشاور سمیت صوبے بھرکے تین ہزار سے زائد خواتین اورمرداساتذہ نے اسلحہ کے لائسنس کے حصول کے لئے درخواستیں دینے کاعمل شروع

پشاور (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔30 مارچ۔2015ء) پشاور سمیت صوبے بھرکے تین ہزار سے زائد خواتین اورمرداساتذہ نے اسلحہ رکھنے کے حوالے سے لائسنس کے حصول کے لئے درخواستیں دینے کاعمل شروع کردیا ہے ۔ صوبائی حکومت کی جانب سے امن وامان کی صورتحال کی بہتری کے لئے اساتذہ کو بھی اسلحہ رکھنے کی اجازت دی ہے ۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق پشاور سمیت صوبے بھرکے پرائمری ،مڈل ،ہائی ،ہائیر سکینڈری ، کالجز ، یونیورسٹیوں میں اس وقت چالیس ہزار اساتذہ کے پاس ذاتی اسلحہ موجود ہیں جن کے پاس نہ صرف صوبائی سطح کے بلکہ قومی سطح کے ا سلحہ کے لائسنسز موجود ہیں۔

جبکہ

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

30-03-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان