اٹھا رہویں ترمیم کے بعد سندھ میں گو رنر راج لگنا مشکل ، اگر گو رنر راج لگا تو پورے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
اتوار مارچ

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-03-22
تاریخ اشاعت: 2015-03-22
تاریخ اشاعت: 2015-03-22
تاریخ اشاعت: 2015-03-22
تاریخ اشاعت: 2015-03-22
تاریخ اشاعت: 2015-03-22
تاریخ اشاعت: 2015-03-22
تاریخ اشاعت: 2015-03-22
تاریخ اشاعت: 2015-03-22
تاریخ اشاعت: 2015-03-22
تاریخ اشاعت: 2015-03-22
پچھلی خبریں - مزید خبریں

سکھر

سکھر شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

تلاش کیجئے

اٹھا رہویں ترمیم کے بعد سندھ میں گو رنر راج لگنا مشکل ، اگر گو رنر راج لگا تو پورے ملک میں لگے گا،خو رشید شاہ ،ہم پر توانائی بحران ختم نہ کر نے کی تنقید کرنے والے میاں صاحب اپنا پرانا ریکار ڈ نکال لیں یہ بحران بھی ان کا ہی پیدا کر دہ ہے،کرا چی میں آپریشن ایم کیو ایم کی مرضی اور مطالبے پر ہوا ہے اور فوج نے جو کچھ کیا ہے وہ سب کے سا منے ہے،صو لت مرزا اورعذیر بلوچ کے کیسز الگ الگ ہیں ،جو ڈیشل کمیشن کے معاملے پر اتفاق اچھی با ت ہے کیو نکہ جھگڑوں سے مسائل حل نہیں ہو تے، پنجاب کے مقا بلے میں سندھ میں امن و امان کی صو رتحال کا فی بہتر ہے،سکھر میں میڈیا سے گفتگو

سکھر(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔22 مارچ۔2015ء) قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خو رشید احمد شاہ نے کہا ہے کہ اٹھا رہویں ترمیم کے بعد سندھ میں گو رنر راج لگنا مشکل ہے، اگر گو رنر راج لگا تو صرف سندھ میں نہیں پورے ملک میں لگے گا،ہم پر توانائی بحران ختم نہ کر نے کی تنقید کرنے والے میاں صاحب اپنا پرانا ریکار ڈ نکال لیں یہ بحران بھی ان کا ہی پیدا کر دہ ہے،کرا چی میں آپریشن ایم کیو ایم کی مرضی اور مطالبے پر ہوا ہے اور فوج نے جو کچھ کیا ہے وہ سب کے سا منے ہے،صو لت مرزا اورعذیر بلوچ کے کیسز الگ الگ ہیں ،جو ڈیشل کمیشن کے معاملے پر اتفاق اچھی با ت ہے کیو نکہ جھگڑوں سے مسائل حل نہیں ہو تے ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے سکھر میں اپنی رہا ئش گا ہ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہو ئے انہوں نے مزید کہا کہ وہ آج جن پر اجیکٹ کا دعویٰ کر رہے ہیں وہ ہما رے ہی لا ئے گئے تھے ملک میں سرکولر ڈیڈ ختم ہو نے اور چا ر سو اسی ارب روپے دینے کے با وجود بجلی کا بحران ختم نہیں ہوا اب میاں صاحب کو لا ہور میں کیمپ لگا کر بیٹھ جا نا چا ہیئے ان کا کہنا تھاکہ پنجاب کے مقا بلے میں سندھ میں امن و امان کی صو رتحال کا فی بہتر ہے یہاں پر بہتر صو رتحال میاں صاحب کو پتہ نہیں کیو ں نظر نہیں آتی گو رنر کی تبدیلی وفاق کا کام ہے اور وہ وفا ق کا ہی نما ئندہ ہے سندھ میں اٹھا رہویں ترمیم کے بعد سندھ میں گو رنر راج لگنا بڑا مشکل ہے ان کا کہنا تھا کہ عذیر بلوچ کا بیاں دینا اس کا حق بنتا ہے کیو نکہ سندھ حکو مت نے ان کا رہنا مشکل کر دیا تھا اور اس کے لیے دھرتی ہی تنگ کر دی تھی تو پھر اس کی جانب سے کیا بیان آسکتا تھا پیپلز پا رٹی نے ہمیشہ دہشت گر دی کا مقابلہ کیا ہے وہ جمہو ری جما عت ہے اور وہ جمہو

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

22-03-2015 :تاریخ اشاعت