کراچی میں آپریشن تمام جماعتوں کی مشاورت سے کیا گیا ، وزیر اعظم نوا زشریف ،کراچی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
ہفتہ مارچ

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-03-21
تاریخ اشاعت: 2015-03-21
تاریخ اشاعت: 2015-03-21
تاریخ اشاعت: 2015-03-21
تاریخ اشاعت: 2015-03-21
تاریخ اشاعت: 2015-03-21
تاریخ اشاعت: 2015-03-21
تاریخ اشاعت: 2015-03-21
پچھلی خبریں -

اسلام آباد

اسلام آباد شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:14 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:15 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:18 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:19 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:59:54 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:59:56 اسلام آباد کی مزید خبریں

تلاش کیجئے

کراچی میں آپریشن تمام جماعتوں کی مشاورت سے کیا گیا ، وزیر اعظم نوا زشریف ،کراچی کو جرائم سے پاک شہر بنائیں گے جہاں معاشی سرگرمیاں فروغ پائیں گی،آپریشن سے کراچی میں جرائم کی شرح میں کمی آئی،حکومت سنبھالتے ہی پہاڑ جیسے مسائل کا سامنا کرنا پڑا ۔ محدود وسائل کے باوجود چیلنجز پر قابو پانے کی پوری کوشش کی، اقتصادی ترقی پر توجہ دے رہے ہیں، دو سال میں ملکی معیشت میں بہتری آئی ،اراکین اسمبلی سے گفتگو ،نیشنل ایوی ایشن پالیسی 2015ء کے اجراء کے موقع پر خطاب

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔21 مارچ۔2015ء) وزیر اعظم میاں محمد نوا زشریف نے کہا ہے کہ پاکستان کو دہشت گردی اور توانائی بحران کے چیلنج کا سامنا ہے چیلنجز کا مقابلہ کرنے کے لئے اقتصادی ترقی پر توجہ دے رہے ہیں کراچی میں آپریشن تمام جماعتوں کی مشاورت سے کیا گیا ہے ۔ ٹارگٹ آپریشن سے کراچی میں جرائم کی شرح میں کمی آئی ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کے روز سرگودھا سے تعلق رکھنے والے اراکین اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔

انہوں نے کہا کہ حکومت سنبھالتے ہی پہاڑ جیسے مسائل کا سامنا کرنا پڑا ۔ محدود وسائل کے باوجود چیلنجز پر قابو پانے کی پوری کوشش کی ہے انہوں نے کہا کہ ہمیں مسائل حل کرنے کا شدت سے احساس اور ادراک ہے نیک نیتی اور خلوص نیت سے کام کیا جائے تو کامیابی قدم چومتی ہے ۔ مسلم لیگ ( ن ) کی حکومت نے دو سال میں اہم اہداف حاصل کئے ۔ انہوں نے کہا کہ درپیش چیلنجز سے نمٹنے کے لئے اقتصادی ترقی پر توجہ دے رہے ہیں ۔

پوری قوم کو ملک کی معاشی ترقی کے لئے کردار ادا کرنا چاہئے ۔ ملک کی معیشت میں ترقی پاکستان کو بحرانوں سے نکال سکتی ہے ۔ دو سال میں ملکی معیشت میں بہتری آئی ہے اور کئی مسائل کو حل کیا جا چکا ہے انہوں نے کہا کہ سیاستدان ماضی کی غلطیوں سے سبق سیکھیں اور جمہوریت کی مضبوطی کے لئے کردار ادا کریں ۔ جمہوریت کی مضبوطی سے ہی پاکستان ترقی یافتہ ممالک کی صف میں شامل ہو سکتا ہے ۔ جمہوری طریقے سے انتقال اقتدار سے جمہوریت مضبوط ہوتی ہے انہوں نے کہا کہ ہم نے تمام معاملات کو افہام و تفہیم سے حل کرنے کی کوشش کی ہے طالبان سے بھی مذاکرات کے ذریعے معاملات حل کرنے کی کوشش کی ۔

مذاکرات کی ناکامی کے بعد دہشت گردی کے خاتمے کے لئے آپریشن ضرب عضب شروع کیا گیا ہے ۔ ضرب عضب سے دہشت گردوں کی کمر توڑ دی ہے اور دہشت گردی کے واقعات میں کمی آئی ہے اور کراچی کے شہریوں نے ازخود تسلیم کیا ہے۔ انہوں نے کہ اکہ شہر قائد سمیت پورے ملک میں امن کے لئے امن کے لئے پرعزم ہیں اور پاکستان کو پرامن ملک بنا کر دم لیں گے انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ( ن ) کی حکومت نے دو سال میں اہم اہداف حاصل کئے ہیں اور دوسال میں حکو مت کے خلاف کرپشن کا ایک بھی الزام سامنے نہیں آیا ۔

وزیراعظم پاکستان محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ پی آئی اے کو ایک بار پھر دنیا کی بہترین سروس بنائیں گے،تونائی کے شعبے میں نئے منصوبے اگلے سال سے شروع ہوجائیں گے مسلم لیگ (ن) کی حکومت مواصلات سمیت تمام شعبوں میں تیز رفتار ترقی کیلئے کام کر رہی ہے، نئی نیشنل ایوی ایشن پالیسی 15 سال کے وقفے کے بعد پیش کی گئی ہے، پرانی پالیسیوں پر نظرثانی کے ساتھ ساتھ موجودہ حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے نئی پالیسیاں بھی بنا رہے ہیں، کراچی کو جرائم سے پاک شہر بنائیں گے جہاں معاشی سرگرمیاں فروغ پائیں گی، دہشت گردی کے خلاف آپریشن ضرب عضب کے مثبت نتائج سامنے آ رہے ہیں، پاکستان کو درپیش مسائل پر قابو پاتے ہوئے اسے خوشحال ملک بنائیں گے۔

جمعہ کو یہاں نیشنل ایوی ایشن پالیسی 2015ء کے اجراء کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ ایوی ایشن کے شعبہ پر ماضی میں بھرپور توجہ نہیں دی گئی، ہماری حکومت نے اس شعبے کو نظرانداز نہیں کیا، پوری معیشت کی ترقی اس سے جڑی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جنوبی ایشیاء میں ایوی ایشن کے شعبہ کی ترقی کی شرح 8.4 فیصد ہے جبکہ پاکستان میں یہ شرح 0.001 فیصد ہے اس صورتحال کو موزوں قرار نہیں دیا جا سکتا، یہی وجہ ہے کہ ایوی ایشن کے شعبہ کی ترقی کے لئے آج نئی پالیسی کا اجراء کیا جا رہا ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ انہیں بتایا گیا ہے کہ پالیسی کی تیاری میں ایوی ایشن ماہرین اور دیگر شراکت داروں سے بھی رائے لی گئی ہے اس کی تیاری میں جدید اصولوں کو مدنظر رکھا گیا ہے اور یہ ایک آزاد اور ترقی پر مبنی پالیسی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائنز کو جدید اور فعال ایئر لائن بنانا ہے اس مقصد کے لئے تمام ضروری وسائل کی فراہمی کے ساتھ ساتھ موجود کمزوریوں کو بھی دور کرنا ہو گا، ہمیں اپنے ہوائی اڈوں کو جدید بنانا ہے جبکہ نئے ہوائی اڈے بنانا بھی ملک کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ پی آئی اے کے سنہری دور کی بحالی کے لئے کام جاری ہے اسے دنیا کی بہترین ایئر لائن بنائیں گے اس مقصد کے لئے پی آئی اے کے 26 فیصد حصص سٹریٹجک پارٹنرشپ کے تحت نجی شعبہ میں دیئے جائیں گے، اس تمام عمل میں ملازمین کے مفادات

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

21-03-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان