امریکہ،ورجنیا میں سیاہ فام نوجوان گرفتار، تحقیقات کا حکم
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ مارچ

تلاش کیجئے

امریکہ،ورجنیا میں سیاہ فام نوجوان گرفتار، تحقیقات کا حکم

واشنگٹن(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔20 مارچ۔2015ء)امریکی ریاست ورجنیا میں ایک سیاہ فام طالب علم پر تشدد اور گرفتاری پر وہاں کے گورنر نے تحقیقات کرنے کا کہا ہے۔نشہ آور مشروبات کے استعمال کی نگرانی کرنے والے ادارے اے بی سی کے اہلکاروں نے مارٹیز جانسن نامی ایک 20 سالہ سیاہ فام نوجوان کو ایک پب کے باہر سے بدھ کے روزگرفتار کیا تھا۔جس کے بعد سے یونیورسٹی آف ورجنیا میں احتجاج ہو رہے ہیں۔جانسن کی خون میں لت پت اور زمین پر گھسیٹے جانے کی وڈیوز اور تصاویر ہر جگہ گردش کر رہی ہیں۔

اے بی سی کے اہلکار کا کہنا ہے کہ ’جانسن بحث کر رہے تھے اور بہت جارحانہ ہو رہے تھے۔‘تاہم یونیورسٹی آف ورجنیا کے ایک طالب علم بیوبرن کا جنھوں نے جانسن کی گرفتاری کی تصاویر لی تھیں کہنا ہے کہ پولیس نے طاقت کا بلا جواز استعمال کیا۔بیوبرن نے یونیورسٹی کے مقامی اخبار کیوالیر ڈیلی کو بتایا’ اسے قابو کرنے کی کوئی ضرورت نہیں تھی کیونکہ وہ بلکل جارحانہ نہیں ہو رہا تھا۔‘اے بی سی کی جانب سے جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ’ یونیفارم پہنے اے بی سی کے اہلکاروں نے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

20-03-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان