نیٹو افواج کا اسلحہ ان کے دفاتر سے نکلا ہے جنہوں نے کراچی کو برسوں سے یر غمال بنایا ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ مارچ

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-03-20
تاریخ اشاعت: 2015-03-20
تاریخ اشاعت: 2015-03-20
تاریخ اشاعت: 2015-03-20
تاریخ اشاعت: 2015-03-20
تاریخ اشاعت: 2015-03-20
تاریخ اشاعت: 2015-03-20
تاریخ اشاعت: 2015-03-20
تاریخ اشاعت: 2015-03-20
تاریخ اشاعت: 2015-03-20
تاریخ اشاعت: 2015-03-20
- مزید خبریں

لاہور

تلاش کیجئے

نیٹو افواج کا اسلحہ ان کے دفاتر سے نکلا ہے جنہوں نے کراچی کو برسوں سے یر غمال بنایا ہوا ہے‘ سراج الحق،کراچی کے عوام کے حقوق کے لیے سینیٹ میں آواز بلند کروں گا جس کے ساتھ ظلم ہوگا میں اس کا وکیل بنوں گا ،کراچی کے عوام اور تاجر مل کر عدلیہ ،میڈیا اور شہر کو دہشت گردوں سے آزاد کرنے کی جدو جہد کریں،عوامی جرگہ سے خطاب

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔20 مارچ۔2015ء) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ حکومت پختونوں اور ڈاڑھی والوں کودہشتگرد قرار دیتی ہے مگر نیٹو افواج کا اسلحہ تو ان کے دفاتر سے نکلا ہے جنہوں نے کراچی کو برسوں سے یر غمال بنایا ہوا ہے ۔کراچی کے عوام کے حقوق کے لیے سینیٹ میں آواز بلند کروں گا جس کے ساتھ ظلم ہوگا میں اس کا ساتھ دوں گا اور اس کا وکیل بنوں گا ۔کراچی کے عوام اور تاجر مل کر عدلیہ ،میڈیا اور شہر کو دہشت گردوں سے آزاد کرنے کی جدو جہد کریں ۔

جماعت اسلامی کے مرکزی میڈیا سیل منصورہ سے جاری کردہ پریس ریلیز کے مطابق ان خیالات کا اظہار انہوں نے سہراب گوٹھ میں منعقدہ عوامی جرگہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔جرگے کا اہتمام کراچی میں رہائش پذیر پختون آبادی کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں اور ماورائے عدالت قتل کے خلاف عوامی احساسات و و جذبات کی ترجمانی کے لیے کیا گیا تھا جس میں قبائیلی عمائدین اور پختونوں کی بڑی تعدادنے شرکت کی ۔جرگے سے نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان اسد اللہ بھٹو ،صوبہ بلوچستان کے امیرعبد المتین اخونزادہ ، امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔

عوامی جر گے میں عوامی مسائل کے حل کے لیے ایک قرار داد بھی منظور کی گئی۔ سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ آج کا عوامی جر گہ حکمرانوں سے انصاف کے حصول اور آئین و قانون کی بالا دستی کا مطالبہ کرتا ہے ،پاکستان کا آئین اس بات کی اجازت نہیں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

20-03-2015 :تاریخ اشاعت