مقتول عبیرہ اغواء مقدمہ میں ملوث ملزمہ نے پولیس کی جانب سے اسے گناہ قرار دینے پر ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات مارچ

مزید قومی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
- مزید خبریں

لاہور

تلاش کیجئے

مقتول عبیرہ اغواء مقدمہ میں ملوث ملزمہ نے پولیس کی جانب سے اسے گناہ قرار دینے پر دائر درخواست ضمانت واپس لے لی،3ملزمان نے درخواست ضمانت دائر کردی

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔19 مارچ۔2015ء) ایڈیشنل سیشن جج رفاقت علی قمر کی عدالت میں مقتول عبیرہ کو اغواء کرنے کے مقدمہ میں ملوث خولا عرف سدرہ نے پولیس کی جانب سے اسے رپورٹ میں بے گناہ قرار دینے پر دائر درخواست ضمانت واپس لے لی ۔گزشتہ روز عدالت میں پولیس نے پیش ہوکر موقف اختیار کیا کہ تفتیش کے دوران مذکورہ ملزمہ اس مقدمہ میں ملوث نہیں پائی گئی ہے جس کے بعد ملزمہ نے عدالت میں دائر کی جانے والی درخواست ضمانت واپس لے لی ۔

واضح رہے کہ ملزمہ کے خلاف تھانہ وحدت کالونی پولیس نے عبیرہ کے بھائی زوہیب اقبال بھٹی کی رپورٹ پر اغواء کا مقدمہ درج کیاجس میں زوہیب اقبال نے موقف اختیار کیا کہ اس کی بہن عبیرہ کو ماڈل بننے کا شوق تھا وہ وحدت کالونی کے ایک ہوسٹل میں رہتی تھی جہاں سے اسے اغوا کرلیاگیاجن افراد نے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

19-03-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان