شیخ الازھر کے بیان پر عراق میں مصری سفیر کی دفتر خارجہ طلبی ،فوجی آپریشن کے دوران ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات مارچ

مزید بین الاقوامی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
تاریخ اشاعت: 2015-03-19
-

تلاش کیجئے

شیخ الازھر کے بیان پر عراق میں مصری سفیر کی دفتر خارجہ طلبی ،فوجی آپریشن کے دوران سْنی مسلک کے شہریوں کے قتل عام کے الزام میں کوئی صداقت نہیں، بغداد حکومت

قاہرہ( اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔19 مارچ۔2015ء )مصر کی سب سے بڑی دینی درسگاہ جامعہ الازھر کے سربراہ الشیخ احمد الطیب کے ایک بیان پرعراقی وزارت خارجہ نے بغداد میں متعین مصری سفیرکو طلب کر کے ان سے سخت احتجاج کیا ہے۔العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مصری وزیرخارجہ احمد درویش کو بغداد دفتر خارجہ میں طلب کیا گیا جہاں اْنہیں ایک احتجاجی یادداشت پیش کی گئی۔ بغداد حکومت کا کہنا ہے کہ جامعہ الازھر کے سربراہ الشیخ احمد الطیب نے دولت اسلامیہ داعش کے خلاف جاری فوجی آپریشن کے دوران سْنی مسلک کے شہریوں کے قتل عام کا الزام عائد کیا ہے جس میں کوئی صداقت نہیں ہے۔

خیال رہے کہ حال ہی میں جب عراقی فوج نے شیعہ ملیشیا کے ہمراہ سنی اکثریتی شہر تکریت میں داعش کے خلاف زمینی آپریشن شروع کیا تو شیخ الازھر نے ایک بیان میں کہا تھا کہ شیعہ عسکریت پسندوں کے ہاتھوں تکریت میں انسانی حقوق کی سنگین پامالیاں کی جا رہی ہیں۔ داعش کے خلاف آپریشن کی آڑ میں مقامی سنی آبادی پر مظالم ڈھائے جا رہے ہیں۔عراقی وزارت خارجہ نے شیخ الازھر کے اس بیان

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

19-03-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان