پرویز الٰہی حکومت نے منڈی بہاؤالدین میں ریلوے اراضی کمشنر گوجرانوالہ کی بیوی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ مارچ

مزید قومی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-03-18
تاریخ اشاعت: 2015-03-18
تاریخ اشاعت: 2015-03-18
تاریخ اشاعت: 2015-03-18
تاریخ اشاعت: 2015-03-18
تاریخ اشاعت: 2015-03-18
تاریخ اشاعت: 2015-03-18
تاریخ اشاعت: 2015-03-18
تاریخ اشاعت: 2015-03-18
تاریخ اشاعت: 2015-03-18
تاریخ اشاعت: 2015-03-18
- مزید خبریں

اسلام آباد

اسلام آباد شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:14 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:15 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:18 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:19 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:59:54 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:59:56 اسلام آباد کی مزید خبریں

تلاش کیجئے

پرویز الٰہی حکومت نے منڈی بہاؤالدین میں ریلوے اراضی کمشنر گوجرانوالہ کی بیوی کو غیر قانونی طریقہ سے الاٹ کردی،پی اے سی میں انکشاف، ریلوے اسٹیشن پر غیر قانونی قبضہ کو واگزار کرایا جائے،کمیٹی کی ریلوے کو ہدایت

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔18 مارچ۔2015ء)پبلک اکاؤنٹس کمیٹی میں انکشاف کیا گیا ہے کہ پنجاب میں چوہدری پرویز الٰہی حکومت نے منڈی بہاؤالدین میں ریلوے کی زمین کمشنر گوجرانوالہ کی بیوی کو غیر قانونی طریقہ سے الاٹ کردی جس نے ریلوے کی زمین پر غیر قانونی قبضہ کرکے سی این جی اسٹیشن قائم کردیا۔پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا اجلاس ایم این اے عاشق گوپانگ کی صدارت میں ہوا جس میں ریلوے کی آڈٹ رپورٹ2007-08ء کا جائزہ لیا گیا۔

رپورٹ میں اربوں روپے کی کرپشن اور ریلوے کی زمینوں پر ناجائز قبضہ بارے ہولناک انکشاف سامنے آئے۔پبلک اکاؤنٹس کمیٹی نے ریلوے کو ہدایت کی کہ وہ ناکارہ قرار دئیے گئے ریلوے ٹریک کی اوپن نیلامی کریں اور بھاری رقوم حاصل کریں۔انہوں نے کہا کہ ریلوے اسٹیشن پر غیر قانونی قبضہ کو واگزار کرایا جائے۔اجلاس میں یہ فیصلہ ہوا کہ لاہور خانیوال الیکٹرک ریلوے ٹریک کی شفاف نیلامی کی جائے ۔ریلوے آفیسر کلب کراچی میں پاکستان ریلوے کو93.18ملین روپے کا نقصان برداشت کرنا پڑا،اس حوالے سے سیکرٹری آغا پروین کو کارروائی کیلئے کہا گیا ۔

سیکرٹری ریلوے نے بتایا کہ صرف242ملین کی ریکوری ہوسکی ہے۔کمیٹی کو مزید بتایا گیا کہ لاہور میں ایک پرائیویٹ کمپنی کو36 ہزار سکیرفٹ کی زمین میں 63.360 ملین روپے کا نقصان برداشت کرنا پڑا،کراچی میں48 بل بورڈ مختلف جگہوں پر لگائے گئے تھے جن میں سے32 کو ہٹا دیا گیا اور 16بورڈ لگے رہے اور ان کی کوئی فیس موصول نہیں کی گئی جس کی صورت میں9.946ملین روپے کا خسارہ برداشت کرنا پڑا،اسی طرح بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں سینے کے امراض سے متعلق ہسپتال سردار بہادر خان انسٹیٹیوٹ کو خواتین کی یونیورسٹی بنانے کا اعلان کیا گیا تھا اس میں35فیصد بلوچستان حکومت اور 65فیصد ریلوے انتظامیہ دے گی لیکن معاہدہ عمل میں نہیں لایا گیا جس کی وجہ سے550ملین روپے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

18-03-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان