پرویز مشرف ایم کیو ایم کے خلاف آپریشن کے بعد اپنی پارٹی کو فعال کرنے کیلئے سرگرم ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر مارچ

مزید قومی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-03-16
تاریخ اشاعت: 2015-03-16
تاریخ اشاعت: 2015-03-16
تاریخ اشاعت: 2015-03-16
تاریخ اشاعت: 2015-03-16
تاریخ اشاعت: 2015-03-16
تاریخ اشاعت: 2015-03-16
تاریخ اشاعت: 2015-03-16
پچھلی خبریں -

اسلام آباد

تلاش کیجئے

پرویز مشرف ایم کیو ایم کے خلاف آپریشن کے بعد اپنی پارٹی کو فعال کرنے کیلئے سرگرم ، متحدہ کے متعدد رہنماؤں نے حمایت کا یقین دلا دیا،مسلم لیگ ن‘ ق لیگ‘ پیپلزپارٹی کے سینئر رہنماؤں نے بھی ساتھ دینے کی حمایت کردی

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔16 مارچ۔2015ء) سابق صدر پرویز مشرف ایم کیو ایم کے خلاف آپریشن کے بعد اپنی پارٹی کو فعال کرنے کیلئے سرگرم ہو گئے۔ متحدہ قومی موومنٹ کے متعدد رہنماؤں نے حمایت کا یقین دلا دیا۔ مسلم لیگ ن‘ ق لیگ‘ پیپلزپارٹی کے سینئر رہنماؤں نے بھی ساتھ دینے کی حمایت کر دی ہے۔ خبر رساں ادارے کو اے پی ایم ایل ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ سابق صدر پرویز مشرف ایک بار پھر پارٹی کو فعال بنانے کے لئے متحرک ہو گئے ہیں۔

سابق صدر نے گزشتہ 3 ماہ سے مختلف سیاسی جماعتوں کے نامور رہنماؤں سے پس پردہ ملاقاتوں کا سلسلہ شروع کیا ہوا تھا۔ ذرائع کے مطابق پرویز مشرف کو ایم کیو ایم کا سربراہ بنانے کی ایک بار پہلے بھی افواہیں گردش کرتی رہیں مگر بعد ازاں اے پی ایم ایل نے خبر رساں ادارے کو بتاتے ہوئے کہا کہ سابق صدر پرویز مشرف ایم کیو ایم کی قیادت نہیں سنبھال رہے ہیں بلکہ ایک متحدہ مسلم لیگ کیلئے کوششیں کی جا رہی ہیں اور اس سلسلہ میں ایم کیو ایم سمیت دیگر سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں سابق صدر پرویز مشرف سے ملاقاتیں ہو رہی ہیں اور توقع کی جا رہی ہے کہ متحدہ مسلم لیگ جلد وجود میں آجائیگی۔



اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

16-03-2015 :تاریخ اشاعت