تکریت میں داعش کی شکست کے بعد مکانات نذرآتش،امریکا کا انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
ہفتہ مارچ

مزید بین الاقوامی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-03-14
تاریخ اشاعت: 2015-03-14
تاریخ اشاعت: 2015-03-14
تاریخ اشاعت: 2015-03-14
تاریخ اشاعت: 2015-03-14
تاریخ اشاعت: 2015-03-14
تاریخ اشاعت: 2015-03-14
تاریخ اشاعت: 2015-03-14
تاریخ اشاعت: 2015-03-14
تاریخ اشاعت: 2015-03-14
تاریخ اشاعت: 2015-03-14
- مزید خبریں

تلاش کیجئے

تکریت میں داعش کی شکست کے بعد مکانات نذرآتش،امریکا کا انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی تصدیق سے انکار

واشنگٹن(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔14 مارچ۔2015ء)امریکی فوج نے عراق کے شمالی شہر تکریت میں شیعہ ملیشیا کی جانب سے مکانوں کو نذرآتش کیے جانے کی اطلاعات پر تشویش کا اظہار کیا ہے لیکن امریکیوں نے دولت اسلامی (داعش) کے جنگجووٴں کے خلاف بڑی کارروائی کے دوران انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور شہریوں سے ناروا سلوک کی تصدیق نہیں کی ہے۔امریکی حکام کا کہنا ہے کہ وہ تکریت سے موصول والی اطلاعات اور انٹرنیٹ پر پوسٹ کی گئی ویڈیو کا جائزہ لے رہے ہیں۔

سوشل میڈیا کے ذریعے منظرعام پر آنے والی اس ویڈیو میں مکانوں کو نذرآتش دکھایا گیا ہے لیکن ایران کی حمایت یافتہ شیعہ ملیشیا اور داعش کے جنگجووٴں دونوں پر مکانوں کو نذرآتش کرنے کا الزام عاید کیا گیا ہے۔ایک امریکی عہدے دار کا اپنی شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر کہنا تھا کہ ''ہم جو بات جانتے ہیں،یہ کہ مکانوں کو آگ لگ ہوئی تھی''۔عراقی فورسز اور ان کی معاون ایران کی حمایت یافتہ شیعہ ملیشیائیں بدھ کو تکریت میں داخل ہوئی تھیں اور انھوں نے جمعرات کو شہر کے مرکز میں پہنچ کر داعش کی شکست اور اپنی فتح کا اعلان کیا تھا۔

امریکا کی مسلح افواج کے سربراہ جنرل مارٹن ڈیمپسی نے اسی ہفتے کانگریس کے روبرو بیان دیتے ہوئے کہا تھا کہ انھیں اس بات میں کوئی شک نہیں کہ ایران کی حمایت یافتہ ملیشیا اور عراقی سکیورٹی فورسز تکریت کا دوبارہ کنٹرول حاصل

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

14-03-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان