دہشت گردی ، فرقہ واریت اور انتہا پسندی کے خاتمہ کیلئے نیشنل ایکشن پلان پر اس کی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل مارچ

مزید قومی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-03-10
تاریخ اشاعت: 2015-03-10
تاریخ اشاعت: 2015-03-10
تاریخ اشاعت: 2015-03-10
تاریخ اشاعت: 2015-03-10
تاریخ اشاعت: 2015-03-10
تاریخ اشاعت: 2015-03-10
تاریخ اشاعت: 2015-03-10
تاریخ اشاعت: 2015-03-10
تاریخ اشاعت: 2015-03-10
تاریخ اشاعت: 2015-03-10
-

کوئٹہ

کوئٹہ شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

تلاش کیجئے

دہشت گردی ، فرقہ واریت اور انتہا پسندی کے خاتمہ کیلئے نیشنل ایکشن پلان پر اس کی روح کے مطابق عملدرآمد کیا جا رہا ہے، عبدالمالک بلوچ،جمہوریت کے ثمرات عوام کو پہنچائے بغیر جمہوریت مستحکم نہیں ہو سکتی، بلوچستان کو پانی کے ذخائر کی تعمیر کیلئے عالمی اداروں کے تعاون اور امداد کی ضرورت ہے، وزیر اعلیٰ بلوچستان

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔10 مارچ۔2015ء )وزیر اعلیٰ بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ نے کہا ہے کہ دہشت گردی ، فرقہ واریت اور انتہا پسندی کے خاتمہ کے لیے نیشنل ایکشن پلان پر اس کی روح کے مطابق عملدرآمد کیا جا رہا ہے، جمہوریت کے ثمرات عوام کو پہنچائے بغیر جمہوریت مستحکم نہیں ہو سکتی، بلوچستان کو پانی کے ذخائر کی تعمیر کے لیے عالمی اداروں کے تعاون اور امداد کی ضرورت ہے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے یورپی یونین کے پاکستان کے سفیر Mr. Lars Gunnar Wigemark سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر صوبائی وزیر اطلاعات عبدالرحیم زیارتوال بھی موجود تھے۔

وزیر اعلیٰ بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ نے کہا کہ ہمارا خطہ تنازعات کی زد میں ہے ، ہمیں دہشت گردی، انتہا پسندی، فرقہ واریت، بلوچ مزاحمت قبائلی تنازعات اور غربت جیسے سنگین مسائل کا سامنا ہے، دہشت گردی اور انتہا پسندی سے نجات کے لیے نیشنل ایکشن پلان پر اس کی روح کے مطابق عمل کیا جائیگا، جبکہ بلوچ مزاحمت کاروں سے مذاکرات کا اختیار وفاقی حکومت نے مجھے سونپ دیا ہے، انہوں نے کہا کہ عوام جمہوریت سے روزگار ، ترقی و خوشحالی اور امن کی امیدیں رکھتے ہیں جمہوریت کے استحکام کے لیے غربت کا خاتمہ ضروری ہے، انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے تعلیم کی بہتری کے لیے تعلیم کا بجٹ 4فیصد سے بڑھا کر 26فیصد کر دیا اور اس سلسلے میں تعلیمی شعبے میں وسیع اصلاحات کا آغاز کر دیا گیا ہے، موجودہ حکومت صوبے میں 3نئے میڈیکل کالجز اور 6یونیورسٹیاں قائم کر رہی ہے، صحت کے بجٹ میں 4سو فیصد اضافہ، تمام ضلعی ہسپتالوں میں گائناکالوجسٹ کی تعیناتی کے علاوہ مریضوں کو طبی سہولیات کی فراہمی کے لیے اقدامات اٹھائے گئے ہیں، پیدائش کے وقت زچہ و بچہ کے اموات میں کمی، پولیو کے خاتمہ کے لیے موثر منصوبہ بندی اور ٹھوس اقدامات کئے جا رہے ہیں، وزیر اعلیٰ نے کہا کہ بلوچستان ملک کا واحد صوبہ ہے جہاں پربلدیاتی انتخابات شفاف، پر امن اور جماعتی بنیادوں پر منعقد کئے گئے ، صوبائی حکومت اختیارات کی نچلی سطح پر منتقلی پر یقین رکھتی ہے، تعلیم، صحت اور پانی کی فراہمی کے شعبے بلدیاتی اداروں کو منتقل کریں گے، تاکہ عوام کے مسائل نچلی سطح پر ہی حل ہوں اور مذکورہ شعبوں کی کارکردگی بہتر بنائی جا سکے۔



اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

10-03-2015 :تاریخ اشاعت