لاپتہ ملائیشین طیارے کی عبوری رپورٹ جاری، کوئی نیا اشارہ نہیں ملا
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر مارچ

تلاش کیجئے

لاپتہ ملائیشین طیارے کی عبوری رپورٹ جاری، کوئی نیا اشارہ نہیں ملا

کوالالمپور(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔9 مارچ۔2015ء)ملائیشیا کی ایئر لائنز کی پرواز ایم ایچ 370 کے لاپتہ ہو جانے کے ایک سال بعد جاری ہونی والی غیر حتمی رپورٹ میں اس بات کا کوئی اشارہ نہیں ملتا کہ آخر اس طیارے کو ہوا کیا تھا۔عبوری رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ وہ روشنی جس سے سمندر کے اندر طیارے کے حادثے کے مقام کی نشاندھی ہو سکتی تھی اس کی بیٹری ایک سال پہلے ہی دم توڑ چکی تھی، تاہم رپورٹ میں یہ واضح نہیں ہے کہ آیا اس بیٹری کے ختم ہو جانے سے تلاش کے عمل پر کوئی اثر ہوا یا نہیں۔

طیارے کے لاپتہ ہونے کے ایک سال بعد بھی ملائیشیا اور آسٹریلیا کا دعویٰ ہے کہ وہ اس طیارے کو تلاش کرنے کا مصمم ارادہ رکھتے ہیں۔اتوار کو طیارے میں سوار 239 مسافروں اور عملے کے ارکان کے لواحقین نے اپنے عزیزوں کی یاد میں دعائیہ تقاریب میں شرکت کی۔ملائشیا کی حکومت کی جانب سے جاری کی جانے والی عبوری رپورٹ میں گمشدہ طیارے کے بارے میں بے شمار تکنیکی معلومات کے علاوہ طیارے کی مرمت اور دیکھ بھال کا ریکارڈ، عملے کے ارکان کا پس منظر اور آخری پرواز کے دوران شہری ہوابازی اور فوجی ریڈاروں میں طیارے کی پرواز کا ریکارڈ شامل ہیں۔

بی بی سی کے مطابق رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

09-03-2015 :تاریخ اشاعت