بھارتی سیکرٹری خارجہ کی وزیراعظم نوا ز شریف، مشیر خارجہ سرتاج عزیز، پاکستانی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ مارچ

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-03-04
تاریخ اشاعت: 2015-03-04
تاریخ اشاعت: 2015-03-04
تاریخ اشاعت: 2015-03-04
تاریخ اشاعت: 2015-03-04
تاریخ اشاعت: 2015-03-04
تاریخ اشاعت: 2015-03-04
پچھلی خبریں -

اسلام آباد

تلاش کیجئے

بھارتی سیکرٹری خارجہ کی وزیراعظم نوا ز شریف، مشیر خارجہ سرتاج عزیز، پاکستانی ہم منصب سے ملاقاتیں، پاک بھارت تعلقات ،مسئلہ کشمیر سمیت خطے کی مجموعی صورت حال پر تبادلہ خیال ،پاک بھارت کا ملکر کام کرنے پر اتفاق، پاک بھارت تصفیہ طلب مسائل باہمی تعاون اور بات چیت کے ذریعے حل کرنے ہوں گے،وزیر اعظم ، پاکستانی ہم منصب کے ساتھ انتہائی خوشگوار ماحول میں بات ہوئی ہے ،ملاقات میں سرحدی کشیدگی کو ختم کرنے پر زور دیا گیا ہے،ایس جے شنکر ،پاکستان اگلی بار سارک کانفرنس کی سربراہی کرے گا ۔ سارک کے حوالے سے اپنی قیادت کا پیغام پاکستانی قیادت تک پہنچایا ہے ،بھارتی سیکریٹری خارجہ کی ملاقات کے بعد میڈیاسے گفتگو

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔4 مارچ۔2015ء )بھارت کے سیکریٹری خارجہ ایس جے شنکر نے منگل کو دو روزہ دورے پر پاکستان آمد کے بعد اسلام آباد میں اپنے پاکستانی ہم منصب سے ملاقات کی، سرکاری ٹی وی کے مطابق ایس جے شنکر اور پاکستان کے سیکریٹری خارجہ اعزاز احمد چوہدری کی ملاقات اسلام آباد میں دفترِ خارجہ میں ہوئی ہے۔ اسلام آباد میں بھارتی سیکریٹری خارجہ جے شنکر دفترخارجہ پہنچے تو سیکریٹری خارجہ اعزاز احمد چوہدری نے ان کا استقبال کیا۔

جس کے بعد دونوں کے درمیان ملاقات کا باقاعدہ آغاز ہوا، ملاقات میں دو طرفہ تعلقات اور جنوبی ایشیائی ممالک کی تنظیم سارک سے متعلقہ امور پر بات ہوئی۔،ملاقات میں پاک بھارت تعلقات ،مسئلہ کشمیر سمیت خطے کی مجموعی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا گیا بات چیت میں دوطرفہ مذاکرات کی بحالی کا معاملہ بھی زیرِ غور آیا۔پاک بھارت سیکریٹری خارجہ ملاقات کے دوران دوطرفہ تعلقات اور باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

مذاکرات کے دوران پاکستانی کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا کہ پاکستان بھارت سے جامع مذاکرات بحال کرنے کا خواہش مند ہے، اس سلسلے میں جامع مذاکراتی عمل بھارت کی جانب سے معطل کیا گیا تھا جسے بحال کرنا بھی اسی کی ذمہ داری تھی۔ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بھارتی سیکرٹری خارجہ نے کہا ہے کہ پاکستانی ہم منصب کے ساتھ انتہائی خوشگوار ماحول میں بات ہوئی ہے ،ملاقات میں سرحدی کشیدگی کو ختم کرنے پر زور دیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان سارک ممالک کا آئندہ چیئرمین ہوگا،انہوں نے کہا کہ پاکستان ہم منصب کے ساتھ ملاقات میں پاک بھارت نے ملکر کام کرنے پر اتفاق ہوا ہے ۔پاکستان اگلی بار سارک کانفرنس کی سربراہی کرے گا ۔انہوں نے کہا کہ سارک کے حوالے سے اپنی قیادت کا پیغام پاکستانی قیادت تک پہنچایا ہے ۔ پاکستانی ہم منصب سے ہونے والی ملاقاتیں نہایت ہی خوشگواراور کامیاب ملاقاتیں رہیں۔انہوں نے کہا کہ سرحد پار دراندازی کے معاملے پر تشویش کا اظہار کیا ہے ان کا کہنا تھا کہ ممبئی حملہ کیس اور سرحد پار خلاف ورزیوں سے متعلق موقف کا اعادہ کیا گیا ہے۔

بھارت نے گذشتہ برس دہلی میں پاکستانی ہائی کمشنر عبدالباسط کی کشمیری حریت رہنماوٴں سے ملاقات کو جواز بنا کر پاکستان سے سیکریٹری سطح کے مذاکرات معطل کرنے کا اعلان کیا تھا۔اس اقدام کے بعد پاکستان کے وزیرِ اعظم نواز شریف نے کہا تھا کہ دو طرفہ مذاکرات کی بحالی بھارت کی ذمہ داری ہے کیونکہ یہ عمل اسی نے معطل کیا ہے۔بھارت نے گذشتہ برس اگست میں پاکستان سے سیکریٹری سطح کے مذاکرات معطل کرنے کا اعلان کیا تھا۔

ایس جے شنکر کے اس دور ہ پاکستان کی اطلاع 13 فروری کو بھارت کے وزیرِاعظم نریندر مودی نے پاکستانی وزیرِ اعظم کو ٹیلیفونک بات چیت میں دی تھی۔خیال رہے کہ بھارت میں قوم پرست جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کے اقتدار میں آنے کے بعد سے پاکستان اور بھارت کے تعلقات میں تلخی آئی ہے،اگرچہ وزیراعظم نواز شریف نے بے جی پی کے رہنما نریندر مودی کے وزارتِ عظمیٰ کی حلف برداری کی تقریب میں خصوصی طور پر شرکت کی تھی لیکن بات پھر آگے نہیں بڑھ سکی۔

گذشتہ برس دونوں ممالک کے درمیان لائن آف کنٹرول اور ورکنگ باوٴنڈری پر جھڑپوں کے متعدد واقعات پیش آئے جس کی وجہ سے کشیدگی میں مزید اضافہ ہوا تھا،۔ادھروزیراعظم محمد نوازشریف نے کہا ہے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان تمام تصفیہ طلب مسائل باہمی تعاون اور بات چیت کے ذریعے حل کرنے ہوں گے، تاکہ دونوں ملکوں کی عوام کو قریب لاکر ان کی خوشحالی اوربہتری کیلئے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

04-03-2015 :تاریخ اشاعت