یوکرائن میں ہلاکتیں چھ ہزار سے زائد، اقوام متحدہ رپورٹ،فریقین نسک معاہدے کی پابندی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل مارچ

مزید بین الاقوامی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-03-03
تاریخ اشاعت: 2015-03-03
تاریخ اشاعت: 2015-03-03
تاریخ اشاعت: 2015-03-03
تاریخ اشاعت: 2015-03-03
تاریخ اشاعت: 2015-03-03
تاریخ اشاعت: 2015-03-03
تاریخ اشاعت: 2015-03-03
-

تلاش کیجئے

یوکرائن میں ہلاکتیں چھ ہزار سے زائد، اقوام متحدہ رپورٹ،فریقین نسک معاہدے کی پابندی اور بلااشتعال گولہ باری سے اجتناب برتیں کیونکہ اس سے عام شہریوں کو غیرمعمولی پریشانیوں اور نقصانات کا سامنا ہے،زید رعد الحسین ،یوکرائن تنازعہ، عالمی رہنماوٴں کے مابین رابطے

نیویارک،ماسکو(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔3 مارچ۔2015ء)اقوام متحدہ کے کمشنر برائے انسانی حقوق زید رعد الحسین نے کہا ہے کہ مشرقی یوکرائن میں گزشتہ برس اپریل سے جاری مسلح تنازعہ میں ہلاک شدگان کی تعداد چھ ہزار سے تجاوز کر چکی ہے۔ پیر کے روز رعد الحسین کی جانب سے جاری کردہ ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مشرقی یوکرائن میں عام شہریوں کی زندگیوں اور علاقے کے انفراسٹرکچر کو شدید نقصانات کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

یوکرائن کے تنازعے کے حوالے سے اقوام متحدہ کی اس نویں رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ رواں برس کے آغاز سے اس مسلح تنازعے میں ’سنجیدہ نوعیت کی تیزی‘ دیکھی گئی ہے۔اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے انسانی حقوق رعد الحسین نے پیر کے روز اپنے ایک بیان میں کہا، ”ایک سال سے کم عرصے میں مشرقی یوکرائن میں چھ ہزار سے زائد افراد کی جانیں جا چکی ہیں۔“ انہوں نے فریقین سے اپیل کی کہ وہ مِنسک معاہدے کی پابندی کریں اور بلااشتعال گولہ باری سے اجتناب برتیں کیوں کہ اس سے عام شہریوں کو غیرمعمولی پریشانیوں اور نقصانات کا سامنا ہے۔

جنیوا میں یوکرائن کے حوالے سے یہ تازہ رپورٹ جاری کرتے ہوئے اقوام متحدہ کی نائب سیکرٹری جنرل برائے انسانی حقوق اِیوون سیمونووِچ نے کہا، ”عام شہریوں کو گھات لگا کر نشانہ بنانا ممکنہ جنگی جرم ہو سکتا ہے اور اگر یہ منظم انداز سے بڑے پیمانے پر کیا گیا، تو اسے انسانیت کے خلاف جرم تصور کیا جائے گا۔“اقوام متحدہ کے ان دونوں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

03-03-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان