داعش نے عراق کے شہر موصل میں دریائے دجلہ کے کنارے تاریخی جامع مسجد کو بارود سے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
ہفتہ فروری

مزید بین الاقوامی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-28
تاریخ اشاعت: 2015-02-28
تاریخ اشاعت: 2015-02-28
تاریخ اشاعت: 2015-02-28
تاریخ اشاعت: 2015-02-28
تاریخ اشاعت: 2015-02-28
تاریخ اشاعت: 2015-02-28
تاریخ اشاعت: 2015-02-28
-

تلاش کیجئے

داعش نے عراق کے شہر موصل میں دریائے دجلہ کے کنارے تاریخی جامع مسجد کو بارود سے شہید کر دیا

بغداد(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔ 28فروری۔2015ء)شام اور عراق میں انسانیت سوز مظالم میں ملوث دہشت گرد تنظیم دولت اسلامی”داعش“ نے ایک جانب غلبہ اسلام اور پوری دنیا میں اسلامی خلافت کی جنگ شروع کر رکھی ہے اور دوسری جانب اس تنظیم کے ہاتھوں اسلام کے مقدس ترین مقامات حتیٰ کہ مساجد اور انبیاء کرام کے مزارات تک محفوظ نہیں ہیں، ”داعشی“ دہشت گردوں نے شمالی عراق کے شہر موصل کے جنوب میں دریائے دجلہ کے کنارے ایک تاریخی جامع مسجد کو بارود سے اڑا دیا جس کے نتیجے میں مسجد ملبے کے ڈھیر میں تبدیل ہوگئی۔

ذرائع کے مطابق دہشت گردوں نے پہلے جامع مسجد ”الخضر“ کا گنبد اتار اور اسے نامعلوم سمت میں لے گئے۔ اس کے بعد مسجد کے اندر بارود رکھ کر اسے دھماکے سے اڑا دیا جس کے نتیجے میں تاریخی مسجد شہید ہو گئی۔ تاریخی روایات کے مطابق یہ مسجد سنہ 09 ھجری

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

28-02-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان