مسلم لیگ (ن) نے ملک کو تباہی کے دہانے پر پہنچا دیا ہے ، عمران خان ،ملک میں تبدیلی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
ہفتہ فروری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-28
تاریخ اشاعت: 2015-02-28
تاریخ اشاعت: 2015-02-28
تاریخ اشاعت: 2015-02-28
تاریخ اشاعت: 2015-02-28
تاریخ اشاعت: 2015-02-28
تاریخ اشاعت: 2015-02-28
تاریخ اشاعت: 2015-02-28
تاریخ اشاعت: 2015-02-28
تاریخ اشاعت: 2015-02-28
تاریخ اشاعت: 2015-02-28
پچھلی خبریں -

اسلام آباد

تلاش کیجئے

مسلم لیگ (ن) نے ملک کو تباہی کے دہانے پر پہنچا دیا ہے ، عمران خان ،ملک میں تبدیلی تب آتی ہے جب عوام اپنے حقوق کی خاطر اٹھ کھڑے ہوں،موجودہ حکومت لوڈشیڈنگ کا خاتمہ نہیں کر سکتی بلکہ مزید اضافہ ہو گا،گلگت بلتستان میں دھاندلی نہیں ہونے دوں گا ،جوڈیشل کمیشن نہ بنا تو تحریک چلاؤں گا،حیران ہوں (ن) لیگ کو ڈیڑھ کروڑ ووٹ کونسے کارنامے کی بنیاد پر ڈالے گئے ،پیسے لگا کر آنے والے شخص کو سینیٹ میں نہیں آنے دوں گا ،دہشت گردی کی جنگ میں ملک کو بڑا نقصان پہنچا ہے،خیبر پختونخواہ میں سرمایہ کاری لا رہا ہوں،موجودہ حکمرانوں جیسانہیں بنناچاہتا،مقابلہ کرکے دکھاوٴں گا، تبدیلی پہلے ذہنوں میں پھرزمین پرآتی ہے ،پیسہ خرچ کرکے سینٹ میں آنے والے خدمت نہیں کرپشن کرنے آئیں گے ،مجھے 15کروڑکی آفرہوئی ،جوٹھکرادی ،پہلی بارسینٹ انتخابات میں حصہ لے رہے ہیں ،پیسہ نہیں چلنے دیں گے،چیئرمین تحریک انصاف کی گفتگو،

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔ 28فروری۔2015ء)تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ مسلم لیگ (ن) نے ملک کو تباہی کے دہانے پر پہنچا دیا ہے ،موجودہ حکومت کے ہوتے ہوئے لوڈشیڈنگ کا خاتمہ نہیں ہو گا بلکہ جب حکومت جائے گی تو ملک میں لوڈشیڈنگ مزید اضافہ ہو چکا ہوگا،حیران ہوں کہ مسلم لیگ (ن) نے کونسا کارنامہ انجام دیا ہے کہ عام انتخابات میں ڈیڑھ کروڑ ووٹ ملے ،حکومت نے 70 لاکھ جعلی ووٹ ڈلوائے ،جوڈیشل کمیشن نہ بنا تو تحریک چلاؤ ں گا،گلگت بلتستان میں دھاندلی کے منصوبے بنانے والوں کو بتادینا چاہتا ہوں کہ عمران خان دھاندلی نہیں ہونے دے گا ،میڈیا رپورٹس کے مطابق تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ تبدیلی تب آتی ہے جب عوام اپنے حقوق کی خاطر کھڑے ہو جائیں ،دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کو بڑا نقصان ہوا ہے اور اس سے بڑی تباہی آئی ہے ،2013 کے عام انتخابات میں مسلم لیگ (ن) نے بڑے پیمانے پر دھاندلی کی ہے اور 70 لاکھ ووٹ جعلی ڈالے گئے ہیں، میں حیران ہوں کہ مسلم لیگ (ن) نے آخر کیا کارنامہ انجام دیا ہے کہ ان کو ڈیڑھ کروڑ ووٹ کیسے ڈالے گئے۔

عمران خان نے کہا کہ حکومت گلگت بلتستان میں دھاندلی کرنے جارہی ہے لیکن حکومت کو کہتا ہوں کہ عمران خان گلگت بلتستان میں دھاندلی نہیں ہونے دے گا ،ن لیگ اور پیپلز پارٹی نے پہلے مک مکا کرلیتے تھے لیکن اب ایسے نہیں ہونے دوں گا ،عمران خان نے کہا کہ این اے122 میں دھاندلی کی گئی ہے جس کے ثبوت ہمارے پاس موجود ہیں، این اے122 کی تحقیقات نادرا سے کرانا چاہتا ہوں ،انہوں نے کہا کہ اگر جوڈیشل کمیشن نہ بنا تو ملک میں تحریک چلاؤں گا ،عمران خان نے کہا کہ پیپلز پارٹی حکومت نے جاتے جاتے 480 ارب کے گردشی قرضے چھوڑ کر چلی گئی اور مسلم لیگ(ن) حکومت کبھی بھی لوڈشیڈنگ کو ختم نہیں کر سکے گی بلکہ مسلم لیگ (ن) کی حکومت جب ختم ہو گی تو لوڈشیڈنگ میں مزید اضافہ ہو چکا ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) نے ملک کو تباہی کے دہانے پر پہنچا دیا ہے ، حکومت سینیٹ انتخابات میں بولی لگا رہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ ایک صاحب نے سینیٹ الیکشن لڑنے کیلئے ٹکٹ دینے پر 15 کروڑ روپے شوکت خانم ہسپتال کو دینے کی پیشکش کی ہے جو میں نے ٹھکرا دی ہے ،جو شخص پیسے لگا کر سینیٹ میں آئے گا تو وہ عوام کی خدمت کیسے کرے گا ،ایسے افراد کو سینیٹ میں نہیں آنے دوں گا ،عمران خان نے کہا کہ خیبر پختونخواہ میں سرمایہ کاری لا رہا ہوں ،صوبے کو دوسرے صوبوں سے بہتر بنا کر دکھاؤں گا ،دہشت گردی سے خیبر پختونخواہ سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے جس کی وجہ سے سرمایہ کار یہاں آنے سے کترا رہے ہیں۔

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہاہے کہ موجودہ حکمرانوں جیسانہیں بنناچاہتا،مقابلہ کرکے دکھاوٴں گا،تبدیلی پہلے ذہنوں میں پھرزمین پرآتی ہے ،پیسہ خرچ کرکے سینٹ میں آنے والے خدمت نہیں کرپشن کرنے آئیں گے ،مجھے 15کروڑکی آفرہوئی ،جوٹھکرادی ،پہلی بارسینٹ انتخابات میں حصہ لے رہے ہیں ،پیسہ نہیں چلنے دیں گے ۔نجی ٹی کودیئے گئے انٹرویومیں عمران خان نے کہاکہ 2013ء کے انتخابات میں بڑے پیمانے پردھاندلی ہوئی ہے ،اورآج گلگت میں دھاندلی کی تیاریاں ہورہی ہیں ۔

انہوں نے کہاکہ جوڈیشل کمیشن نہ بناتوسڑکوں پرآئیں گے ،جوڈیشل کمیشن دھاندلی کے ذمہ داروں کاتعین کریگا۔عمران خان نے کہاکہ میں موجودہ حکمرانوں جیسانہیں بنناچاہتا،مجھے افتخارچوہدری پراعتمادتھالیکن دھوکہ دیامیں مقابلہ کرکے دکھاوٴں گا،مئی سے پہلے بہت کچھ ہونے والاہے ا۔نہوں نے کہاکہ تبدیلی پہلے ذہن میں آتی ہے اورپھرزمین پرآتی ہے میں سیاست کے ذریعے عوام کی خدمت کرناچاہتاہوں ۔انہوں نے کہاکہ مخصوص لوگوں نے اقتدارپرقبضہ کیاہواہے ،ایم پی اے کی منڈی لگی ہوئی ہے ،پیسہ خرچ کرکے سینٹ میں آنے والے خدمت نہیں کرپشن کرنے آئیں گے ،سینٹ الیکشن میں بیس سال سے پیسہ چل رہاہے ،لیکن کسی نے آوازنہیں اٹھائی ۔

انہوں نے کہاکہ مجھے ایک شخص نے 15کروڑروپے کی آفردی ،میں نے کہاکہ پارلیمنٹ کے انتخابات میں حصہ لے رہے ہیں ،پیسہ نہیں چلنے دیں گے ،پرویزرشیدکوسینٹ میں چلنے والاپیسہ کیوں نظرنہیں آتا۔عمران خان نے کہاکہ معاشی تباہی سے پہلے اخلاقی تباہی آتی ہے ،ہم اخلاقی طورپرتباہ ہوچکے ہیں ،سینٹ انتخابات میں پیسے کااستعمال ملک کی تباہی ہے ۔انہوں نے کہاکہ ن لیگ کی حکومت میں لوڈشیڈنگ کم نہیں ہوگی ،بلکہ بڑھے گی ،ن لیگ نے سیاست کومنڈی بنایاہواہے ،ن کاخوداپنے ارکان پرکنٹرول نہیں ،ن لیگ سے درخواست ہے کہ مجھ پرکوئی احسان نہ کرے ۔انہوں نے کہاکہ باہرسے لوگ پاکستان میں سرمایہ کاری کے لئے تیاربیٹھے ہیں ،میں خیبرپختونخواہ میں اتناپیسہ لاکردکھاوٴں گاکہ اس ملک کوقرضے کی ضرورت نہیں پڑیگی،سرمایہ کاروں کوہم پراعتمادہے

28-02-2015 :تاریخ اشاعت