قطر سے ہونے والا 21ارب ڈالر کا مبینہ معاہدہ قوم کے سامنے لایا جائے ،ڈاکٹر طاہر القادری ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل فروری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-24
تاریخ اشاعت: 2015-02-24
تاریخ اشاعت: 2015-02-24
تاریخ اشاعت: 2015-02-24
تاریخ اشاعت: 2015-02-24
تاریخ اشاعت: 2015-02-24
تاریخ اشاعت: 2015-02-24
تاریخ اشاعت: 2015-02-24
تاریخ اشاعت: 2015-02-24
تاریخ اشاعت: 2015-02-24
تاریخ اشاعت: 2015-02-24
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

تلاش کیجئے

قطر سے ہونے والا 21ارب ڈالر کا مبینہ معاہدہ قوم کے سامنے لایا جائے ،ڈاکٹر طاہر القادری ،منگلا،تربیلا سے 11پیسے یونٹ لاگت والی بجلی16روپے میں بیچنے کی عدالتی تحقیقات کی جائیں، 6ماہ میں 651ارب کے قرضے معیشت کی بربادی ہے ، قومی شاہرات اور آئندہ تیار ہونے والی فصلیں بھی گروی رکھ دی گئیں ، عوام کو لوٹنے والے جب خود کو خادم کہتے ہیں تو دل دکھتا ہے ،مرکزی میڈیا سیل سے ٹیلی فون پر گفتگو

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔ 24فروری۔2015ء)پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا ہے کہ قطر سے 21ارب ڈالر کا مبینہ معاہدہ قوم کے سامنے لایا جائے اس کے ساتھ ساتھ منگلا اور تربیلا ڈیم سے 11پیسے کی لاگت سے فی یونٹ پیدا ہونے والی بجلی صارفین کو 16روپے میں فروخت کرنے کے جرم کی عدالتی تحقیقات کروائی جائے اور بجلی کے بلوں کے ذریعے لوٹی گئی رقم بجلی کے بلوں کے ذریعے واپس کی جائے ۔

عوام کو نت نئے طریقوں سے لوٹنے والے جب خود کو خادم کہتے ہیں تو دل دکھتا ہے ۔سینیٹ اور گلگت بلتستان کے انتخابات میں دھاندلی کے حوالے سے الیکشن کمیشن کی خاموشی پر افسوس ہے ۔چیف الیکشن کمشنر ضرور بدلالیکن دھاندلی کا نظام نہیں بدلا۔گذشتہ روز مرکزی میڈیا سیل سے ٹیلی فون پر گفتگو کرتے ہوئے سربراہ عوامی تحریک نے کہاکہ وزیر اعلیٰ پنجاب قطر کے ہنگامی خفیہ دورے کرتے رہے اس لئے ایل این جی کے معاہدے کی چھان بین ضروری ہو گئی ہے اگر یہ قومی معاہدہ ہے تو سندھ،بلوچستان اور خیبرپختونخواہ کے وزرائے اعلیٰ قطر آتے جاتے کیوں نہیں دیکھے گئے؟ ڈاکٹر طاہر

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

24-02-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان