خزانہ خالی:ایرا نی حکومت کو سنگین بحران کا سامنا ،خزانے میں رقم نہ ہونے کے نتیجے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر فروری

مزید بین الاقوامی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-23
تاریخ اشاعت: 2015-02-23
تاریخ اشاعت: 2015-02-23
تاریخ اشاعت: 2015-02-23
تاریخ اشاعت: 2015-02-23
تاریخ اشاعت: 2015-02-23
تاریخ اشاعت: 2015-02-23
تاریخ اشاعت: 2015-02-23
تاریخ اشاعت: 2015-02-23
-

تلاش کیجئے

خزانہ خالی:ایرا نی حکومت کو سنگین بحران کا سامنا ،خزانے میں رقم نہ ہونے کے نتیجے میں حسن روحانی کو بجٹ پورا کرنے میں سنگین مشکلات کا سامنا ہے ، ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای کے دفتر کے انسپکٹر جنرل کا دعویٰ

تہران (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔ 23فروری۔2015ء)ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ کے دفتر کے انسپکٹر جنرل ناطق نوری نے دعویٰ کیا ہے کہ سرکاری خزانہ مکمل طور پرخالی ہو چکا ہے۔ خزانے میں رقم نہ ہونے کے نتیجے میں صدر حسن روحانی کی حکومت کو بجٹ پورا کرنے میں سنگین مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔خبر رساں ایجنسی”ایرنا“ کیمطابق مصالحتی کونسل کے رکن اور خامنہ ای کے دفتر کے انسپکٹر جنرل مسٹر ناطق نوری کا کہنا ہے کہ پیش آئند اکیس مارچ سے جو بجٹ طے کیا گیا تھا وہ قدرتی تیل کی فی بیرل 74 ڈالر قیمت کو سامنے رکھ کر بنایا گیا تھا لیکن اس وقت عالمی منڈی میں ایرانی تیل کی قیمت فی بیرل صرف 40 ڈالر ہے۔

انہوں نے کہا کہ سابق حکومتوں کی غلط پالیسیوں کے نتیجے میں آج قومی خزانہ خالی پڑا ہے۔ تاہم ایران کے معاشی امور نگاہ رکھنے والے ماہرین کا کہنا ہے کہ تہران کو بجٹ خسارے کا سامنا محض اس لیے نہیں کرنا پڑا کہ ماضی میں حکومتیں کرپشن کرتی رہی ہیں بلکہ

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

23-02-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان