ملتان میں اپنے آباؤاجداد کی جائیداد پر نواز شریف ایگریکلچرل یونیورسٹی اور میڈیکل ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات فروری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-19
تاریخ اشاعت: 2015-02-19
تاریخ اشاعت: 2015-02-19
تاریخ اشاعت: 2015-02-19
تاریخ اشاعت: 2015-02-19
تاریخ اشاعت: 2015-02-19
تاریخ اشاعت: 2015-02-19
تاریخ اشاعت: 2015-02-19
تاریخ اشاعت: 2015-02-19
تاریخ اشاعت: 2015-02-19
تاریخ اشاعت: 2015-02-19
- مزید خبریں

ملتان

تلاش کیجئے

ملتان میں اپنے آباؤاجداد کی جائیداد پر نواز شریف ایگریکلچرل یونیورسٹی اور میڈیکل یونیورسٹی منظور کرائی مگر صوبائی وزیر عبدالوحید آرائیں وزیراعلی شہباز شریف کی پالیسیوں کو ماننے کی بجائے ناکام بنارہے ہیں،مخدوم جاویدہاشمی ،عبدالوحید آرائیں وزیراعلی شہباز شریف کو بدنام کررہے ہیں یہ یونیورسٹیاں بننے میں رکاوٹ ہے۔ وزیراعلی پنجاب عبدالوحید آرائیں کے نام پر ہی یونیورسٹیاں بنادیں میں اس کے پیچھے کھڑا ہونے کو تیار ہوں۔ پریس کانفرنس سے خطاب

ملتان(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔ 19فروری۔2015ء) سینئر سیاستدان اور مسلم لیگ (ن) و تحریک انصاف کے سابق صدر مخدوم جاویدہاشمی نے کہا ہے کہ میں نے وزیراعلی پنجاب شہباز شریف سے ملتان میں اپنے آباؤاجداد کی جائیداد پر نواز شریف ایگریکلچرل یونیورسٹی اور میڈیکل یونیورسٹی منظور کرائی مگر صوبائی وزیر عبدالوحید آرائیں وزیراعلی شہباز شریف کی پالیسیوں کو ماننے کی بجائے ناکام بنارہے ہیں اور وزیراعلی شہباز شریف کو بدنام کررہے ہیں اور یہ یونیورسٹیاں بننے میں رکاوٹ ہے۔

میری وزیراعلی پنجاب شہباز شریف‘ حمزہ شہباز اور عبدالوحید آرائیں سے درخواست ہے کہ وہ عبدالوحید آرائیں کے نام پر ہی یونیورسٹیاں بنادیں میں اس کے پیچھے کھڑا ہونے کو تیار ہوں۔ یہ بات انہوں نے بدھ کے روز اپنی رہائشگاہ پر پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ میں نے اپنے آبائی قصبہ مخدوم رشید میں اپنے آباؤ اجداد کی جائیدادوں پر کالجز’ سکولز اور ہیلتھ سنٹر بنوادئیے اور اب یہ یونیورسٹیاں بنوانا چاہتا ہوں جس کی وجہ سے میرے مخدوم رشید میں عزیزواقارب بھی مجھ سے ناراض ہیں تاہم مجھے ان کی ناراضگی منظور ہیں لیکن میں یہ یونیورسٹیاں بنواکر رہوں گا۔

انہوں نے کہا کہ یہ رقبہ میرے رشتہ داروں کا تھا اوقاف کا نہیں۔ انہوں نے کہاکہ باقی رقبے پر سکول‘ کالجز بن چکے ہیں جبکہ پچاس ایکڑ رقبہ پر یہ دو یونیورسٹیاں بننی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس جائیداد کے بارے میں مقدمہ بازی عدالتوں میں جاری ہے اور 19 فروری کو بھی ایک عدالت میں پیشی ہے۔ انہوں نے کہاکہ مخدوم رشید کا رقبہء ہمارا ذاتی رقبہ ہے جس پر میں نے میاں شہباز شریف سے اچھے وقتوں میں میڈیکل اور زرعی یونیورسٹیاں منظور کروائیں اور ان یونیورسٹیوں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

19-02-2015 :تاریخ اشاعت