” ای او بی آئی کرپشن کیس“،سپریم کورٹ نے پانچ تخمینہ ساز کمپنیوں کو پندرہ روز میں ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ فروری

مزید قومی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-18
تاریخ اشاعت: 2015-02-18
تاریخ اشاعت: 2015-02-18
تاریخ اشاعت: 2015-02-18
تاریخ اشاعت: 2015-02-18
تاریخ اشاعت: 2015-02-18
تاریخ اشاعت: 2015-02-18
تاریخ اشاعت: 2015-02-18
تاریخ اشاعت: 2015-02-18
تاریخ اشاعت: 2015-02-18
تاریخ اشاعت: 2015-02-18
- مزید خبریں

اسلام آباد

اسلام آباد شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:36 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:38 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:39 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 10:35:10 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:41 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:41 اسلام آباد کی مزید خبریں

تلاش کیجئے

” ای او بی آئی کرپشن کیس“،سپریم کورٹ نے پانچ تخمینہ ساز کمپنیوں کو پندرہ روز میں تمام خریدی گئی جائیدادوں کی رپورٹ دینے کا حکم دے دیا ،غریب عوام کے خون پسینے کی کمائی کو خوردبرد کرنے کی اجازت نہیں دے سکتے‘ تخمینہ ساز کمپنیاں کوائف کے مطابق اس کا تخمینہ لگائیں،جسٹس میاں ثاقب نثار کے ریمارکس

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔ 18فروری۔2015ء) سپریم کورٹ نے ای او بی آئی کرپشن کیس میں پانچ تخمینہ ساز کمپنیوں کو پندرہ روز میں تمام خریدی گئی جائیدادوں کی رپورٹ دینے کا حکم دیا ہے۔ جسٹس میاں ثاقب نثار نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے عوام کا پیسہ ہے اور غریب عوام کے خون پسینے کی کمائی کو خوردبرد کرنے کی اجازت نہیں دے سکتے‘ تخمینہ ساز کمپنیاں کوائف کے مطابق اس کا تخمینہ لگائیں اگر کسی چیز میں شک ہوا تو اس کا دوبارہ بھی تخمینہ لگوایا جاسکتا ہے۔

انہوں نے یہ ریمارکس منگل کے روز دئیے۔ جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے ای او بی آئی کرپشن کیس کی سماعت کی۔ اس دوران مختلف تخمینہ ساز کمپنیوں کی جانب سے تخمینہ کے قواعد و ضوابط اور فیس کے معاملات

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

18-02-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان