لاہور،پولیس لائنز کے قریب خود کش دھماکہ،5 افراد جاں بحق ،متعدد زخمی ،زخمیوں میں ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ فروری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-18
تاریخ اشاعت: 2015-02-18
تاریخ اشاعت: 2015-02-18
تاریخ اشاعت: 2015-02-18
تاریخ اشاعت: 2015-02-18
تاریخ اشاعت: 2015-02-18
پچھلی خبریں -

لاہور

تلاش کیجئے

لاہور،پولیس لائنز کے قریب خود کش دھماکہ،5 افراد جاں بحق ،متعدد زخمی ،زخمیوں میں 5 افراد کی حالت تشویشناک ،مزید ہلاکتوں کا خدشہ ،بم دھماکہ خود کش تھا،دہشت گرد کا دھڑاور سر مل گیا،اصل ہدف پولیس لائنزتھا،دھماکے سے11 گاڑیاں اور30 سے زائد موٹر سائیکلوں کو نقصان پہنچا،ڈسی او ،سی پی اولاہور،بم ڈسپوزل سکواڈ نے تلاشی کے بعد ہسپتال کو کلیئر قرار دیدیا،وزیر اعظم نے پنجاب حکومت سے فوری طور پر رپورٹ طلب کر لی، زخمیوں کو بہترین طبی امداد فراہم کرنے کی بھی ہدایت

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔ 18فروری۔2015ء)لاہور کے علاقے پولیس لائنزقلعہ گجر سنگھ کے قریب خود کش دھماکہ سے 5افراد جاں بحق جبکہ متعدد زخمی ہوگئے ،زخمیوں میں5 افراد کی حالت تشویشناک ،ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ،لاہورکے ہسپتالوں میں ایمر جنسی نافذ کر دی گئی ۔ تفصیلات کے مطابق منگل کے روزپولیس لائنز کے علاقے قلعہ گجر سنگھ کے باہر خود کش دھماکے سے 5 افراد جاں بحق جبکہ متعدد زخمی ہوگئے ۔دھماکے سے قریبی کھڑی گاڑیوں کو آگ لگ گئی جبکہ درجنوں موٹر سائیکلوں کو بھی شدید نقصان پہنچا ،دھماکے کے بعد علاقے میں کالے دھوئیں کے بادل اٹھتے دکھائی دیئے۔

ریسکیوٹیمیں جائے وقوعہ پر پہنچ گئیں،شہریوں نے بھی اپنی مدد آپ کے تحت میو اور گنگا رام ہسپتالوں میں منتقل کیا ۔دھماکے کے بعد پولیس کی بھاری نفری جائے وقوعہ پر پہنچ گئی اور علاقے کو گھیرے میں لے لیااور جائے وقوعہ پر خاردار تاریں لگا کر شواہد اکٹھے کرنا شروع کر دیئے۔ہسپتال انتظامیہ نے 4 افراد کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ دھماکے میں درجنوں افراد زخمی ہوئے ہیں جن کی حالت تشویشناک ہے ،جنہیں طبی امداد دی جارہی ہے ۔

واقعہ کے بعد شہر کے داخلی اور خارجی راستوں پر سکیورٹی سخت کر دی گئی ۔پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے پولیس لائنز کے اطراف میں سرچ آپریشن شروع کر دیا۔ڈی سی او اور سی پی او لاہور نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ پولیس لائنز دھماکہ ایک خود کش دھماکہ تھا ، جائے وقوعہ سے دہشت گرد کا سر اور دھڑ مل گیا ہے جنہیں پولیس نے اپنی تحویل میں لے لئے ہیں اور تحقیقات کیلئے فرانزک رپورٹ کیلئے ہسپتال منتقل کر د یا ہے ۔

انہوں نے مزید بتایا کہ حملہ آور کا اصل ہدف پولیس لائن تھا لیکن سکیورٹی کے بہترین انتظامات کی وجہ سے خود کش حملہ آور پولیس لائن داخل نہیں ہو سکا۔انہوں نے کہا کہ دھماکے میں 11 گاڑیوں اور 30 سے زائد موٹر سائیکلوں کو نقصان پہنچا ہے۔ادھر واقعہ کے بعد میو ہسپتال کے بچہ وارڈ میں بم کی اطلاع پر ہسپتال میں شدید خوف و ہراس پھیل گیا جس کے بعد ہسپتال انتظامیہ نے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

18-02-2015 :تاریخ اشاعت