سپریم کورٹ نے ریلوے سکریپ چوری کیس میں نیب سے اڑتالیس گھنٹوں میں جواب طلب کرلیا، ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل فروری

مزید قومی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-17
تاریخ اشاعت: 2015-02-17
تاریخ اشاعت: 2015-02-17
تاریخ اشاعت: 2015-02-17
تاریخ اشاعت: 2015-02-17
تاریخ اشاعت: 2015-02-17
تاریخ اشاعت: 2015-02-17
تاریخ اشاعت: 2015-02-17
تاریخ اشاعت: 2015-02-17
تاریخ اشاعت: 2015-02-17
تاریخ اشاعت: 2015-02-17
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

تلاش کیجئے

سپریم کورٹ نے ریلوے سکریپ چوری کیس میں نیب سے اڑتالیس گھنٹوں میں جواب طلب کرلیا، آئین کے مطابق شہریوں کی آزادی پر سمجھوتہ نہیں کرسکتے‘ نیب دوسروں کا احتساب کرتا ہے کیوں نہ ہم اس کا احتساب کریں،جسٹس میاں ثاقب نثار کے ریما رکس

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔ 17فروری۔2015ء) سپریم کورٹ نے ریلوے سکریپ چوری کیس میں ذمہ داروں کیخلاف ریفرنس دائر نہ ہونے پر نیب سے اڑتالیس گھنٹوں میں جواب طلب کرلیا‘ جسٹس میاں ثاقب نثار نے سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ریمارکس دئیے کہ آئین کے مطابق شہریوں کی آزادی پر سمجھوتہ نہیں کرسکتے‘ نیب دوسروں کا احتساب کرتا ہے کیوں نہ ہم اس کا احتساب کریں‘ کسی کو بھی شہریوں کی آزادی پر قدغن لگانے کی اجازت نہیں دیں گے‘ نیب آئین اور قانون کے مطابق کارروائی کا پابند ہے۔

انہوں نے یہ ریمارکس پیر کے روز دئیے۔ جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے سماعت شروع کی تو عدالت کو بتایا گیا کہ ذمہ داران کیخلاف تاحال کوئی کارروائی نہیں ہوسکی اس حوالے سے ریفرنس بھی تیار نہیں ہوا اس پر عدالت نے سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے نیب سے جواب طلب کیا ہے اور سماعت (کل) 18 فروری تک ملتوی کردی۔

17-02-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان