لوڈشیڈنگ میں کمی،موسم گرما سے پہلے 1500 میگاواٹ بجلی سسٹم میں لانے کی تیاریاں مکمل،اقدامات ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر فروری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-16
تاریخ اشاعت: 2015-02-16
تاریخ اشاعت: 2015-02-16
تاریخ اشاعت: 2015-02-16
تاریخ اشاعت: 2015-02-16
تاریخ اشاعت: 2015-02-16
تاریخ اشاعت: 2015-02-16
تاریخ اشاعت: 2015-02-16
تاریخ اشاعت: 2015-02-16
تاریخ اشاعت: 2015-02-16
تاریخ اشاعت: 2015-02-16
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

اسلام آباد شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 22/02/2017 - 11:01:42 وقت اشاعت: 22/02/2017 - 11:05:17 وقت اشاعت: 22/02/2017 - 11:05:21 وقت اشاعت: 22/02/2017 - 11:05:23 وقت اشاعت: 22/02/2017 - 11:05:27 وقت اشاعت: 22/02/2017 - 11:05:29 اسلام آباد کی مزید خبریں

تلاش کیجئے

لوڈشیڈنگ میں کمی،موسم گرما سے پہلے 1500 میگاواٹ بجلی سسٹم میں لانے کی تیاریاں مکمل،اقدامات وزیراعظم کی خصوصی ہدایت پر کئے جارہے ہیں،اگلے دو ماہ میں 800 میگاواٹ سے زائد پیداوار متوقع ہے‘ نندی پور پاور پلانٹ کے فرنس آئل پر آنے سے پیداوار میں اضافہ ہو گا،ذرائع،پن بجلی کے پلانٹس سے بھی زیادہ سے زیادہ بجلی حاصل کرنے کی منصوبہ بندی تیار

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔ 16فروری۔2015ء) حکومت نے موسم گرما سے پہلے 1500 میگاواٹ بجلی سسٹم میں لانے کی تیاریاں مکمل کر لی ہیں جس کے باعث گرمیوں میں لوڈشیڈ نگ میں کمی ہو سکتی ہے۔یہ اقدامات وزیراعظم محمد نوازشریف کی خصوصی ہدایت پر کئے جارہے ہیں۔ وزارت پانی و بجلی کے ذرائع کے مطابق اگلے دو ماہ میں 800 میگاواٹ سے زائد پیداوار متوقع ہے۔ نندی پور پاور پلانٹ کیفرنس آئل پر آنے سے بجلی کی پیداوار میں اضافہ ہو گا۔

جبکہ گرمیوں میں پن بجلی کے پلانٹس سے بھی زیادہ سے زیادہ بجلی حاصل کرنے کی منصوبہ بندی کو حتمی شکل دی جا رہی ہے۔ وزارت پانی و بجلی کے ذرائع نے آمدہ موسم گرما کے حوالے سے تیاریوں کے بارے میں خبر رساں ادارے کو بتایا کہ وزارت 1500 میگاواٹ سسٹم میں لانے کے لئے دن رات محنت کر رہی ہے۔ ہائیڈرل پاور پلانٹس اور نندی پور پاور پروجیکٹ‘ نیلم جہلم پروجیکٹ کے مکمل ہونے پر لوڈشیڈنگ میں کمی متوقع ہے۔

ذرائع کے مطابقآنے والے موسم گرما میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کم ہو گی کیونکہ وزارت اس وقت مستعدی سے کام کر رہی ہے تاہم تقسیم کار کمپنیوں کی کارکردگی کو مسلسل دیکھ رہی ہیں اور ان کو عالمی معیار پر لانے کیلئے ہر ماہ ان کا معیار چیک کیا جاتا ہے۔ ایل این جی پر نئے پاور پلانٹ بھی آنے والے قلیل وقت میں کام کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ وزارت نے اب تک کے الیکٹرک کو 650 میگاواٹ بجلی بند کرنے کا کوئی فیصلہ نہیں کیا۔

وزارت پانی و بجلی 1500 میگاواٹ نیشنل گرڈ میں شامل کرنا چاہتی ہے تاکہ لوڈشیڈنگ ختم کی جا سکے۔ ذرائع کے مطابق رینٹل پاور پلانٹ‘ ریشماں‘ گف اور پنجاب میں بند ہونے والی آئی پی پیز سے تین سال کے لئے ٹیک اینڈ پے کی بنیاد پر بجلی خریدی جائے گی۔ ان پاور پلانٹس کو بجلی پیدا نہ کرنے کی صورت میں کیپسٹی پیمنٹ نہیں کی جائے گی۔ ان تمام پلانٹس سے پیشگی ٹیرف منظور ہونے کے بعد تین سال تک بجلی خریدی جائے گی۔

دوسری طرف پنجاب میں ایل این جی پر لگنے والے پاور پلانٹس کے لئے 10 روپے 54 پیسے فی یونٹ پیشگی ٹیرف مقرر کرنے کی پیشکش کر دی ہے۔ نیپرا نے پیشگی ٹیرف کی درخواست سماعت کے لئے منظور کر لی ہے۔ ایل این جی کے پاور پلانٹس کے لئے ٹیرف 30 سال کے لئے نافذ ہو گا۔ ایل این جی پر لگنے والے پاور پلانٹس پر 15 فیصد منافع کی پیشکش کی گئی ہے۔ نیپرا نے تمام سٹیک ہولڈرز سے 22 فروری تک آراء طلب کی ہیں۔ نیپرا پیشگی ٹیرف کی منظوری کے لئے 23 فروری کو سماعت کرے گا۔

16-02-2015 :تاریخ اشاعت