چیف جسٹس نے لاڑکانہ لیڈیز کلب کو لینڈ مافیا کے حوالہ کرنے کا نوٹس لے لیا،کیس عدالت ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
اتوار فروری

مزید قومی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-15
تاریخ اشاعت: 2015-02-15
تاریخ اشاعت: 2015-02-15
تاریخ اشاعت: 2015-02-15
تاریخ اشاعت: 2015-02-15
تاریخ اشاعت: 2015-02-15
تاریخ اشاعت: 2015-02-15
تاریخ اشاعت: 2015-02-15
تاریخ اشاعت: 2015-02-15
تاریخ اشاعت: 2015-02-15
تاریخ اشاعت: 2015-02-15
- مزید خبریں

اسلام آباد

تلاش کیجئے

چیف جسٹس نے لاڑکانہ لیڈیز کلب کو لینڈ مافیا کے حوالہ کرنے کا نوٹس لے لیا،کیس عدالت کے روبرو پیش کرنے کا حکم

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔ 15فروری۔2015ء) چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ناصر الملک نے لاڑکانہ لیڈیز کلب کا ایک حصہ لینڈ مافیا کو دینے کی خبروں کا ازکود نوٹس لیتے ہوئے معاملہ کو انسانی حقوق کیس کے طور پر عدالت کے روبرو پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔سپریم کورٹ سے جاری کردہ پریس ریلیز کے مطابق یہ عمارت 1934ء میں تعمیر کی گئی تھی جسے قانونی طور پر سندھ کا عظیم ورثہ قرار دیا گیا تھا،مذکورہ خبر میں کہا گیا ہے کہ لیدیز کلب لاڑکانہ ورثہ کا اہم حصہ ہے اور مسہور مہمانوں کی میزبانی کر چکا ہے اور تقسیم سے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

15-02-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان