وقت آگیا ہے کہ پاکستان افغان جنگجووں کی مدد بند کر دے ، پرویز مشرف ،حامد کرزئی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
ہفتہ فروری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-14
تاریخ اشاعت: 2015-02-14
تاریخ اشاعت: 2015-02-14
تاریخ اشاعت: 2015-02-14
تاریخ اشاعت: 2015-02-14
تاریخ اشاعت: 2015-02-14
تاریخ اشاعت: 2015-02-14
تاریخ اشاعت: 2015-02-14
تاریخ اشاعت: 2015-02-14
تاریخ اشاعت: 2015-02-14
تاریخ اشاعت: 2015-02-14
- مزید خبریں

اسلام آباد

تلاش کیجئے

وقت آگیا ہے کہ پاکستان افغان جنگجووں کی مدد بند کر دے ، پرویز مشرف ،حامد کرزئی پاکستانی مفادات کے خلاف کام کر رہا تھا‘اشرف غنی خطے میں امن کی آخری امید ہیں ، ان کے ساتھ تعاون کی ضرورت ہے ، سابق صدر ، بھارت میں جموریت ہے نہ انسانی حقوق ،یہی علاقوں میں اگر اچھوت کا سایہ بھی پنڈت پر پڑ جائے تو اس کو قتل کردیا جاتا ہے، انٹرویو

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔ 14فروری۔2015ء ) سابق صدر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف نے کہ اب وقت آ گیا ہے کہ افغانستان میں جنگجووٴں کی مدد بند کر دینی چاہیے۔برطانوی اخبار کو دیے گئے ایک انٹرویو میں پرویز مشرف نے اعتراف کیا کہ جب وہ اقتدار میں تھی تو اس وقت افغانستان میں صدر حامد کرزئی کی حکومت کے خلاف کام کر رہے تھے۔ ان کا کہنا تھا کہ ایسا اس لیے کیا جا رہا تھا کہ حامد کرزئی نے پاکستان کی پیٹھ میں چھرا گھونپنے میں ’بھارت کی مدد کی تھی ،لیکن اب وقت آ گیا ہے کہ اشرف غنی کے ساتھ مکمل تعاون کیا جائے کیونکہ اشرف غنی خطے میں امن کی آخری امید ہیں۔

پرویز مشرف نے کہا کہ ’حامد کرزئی کے دورِ حکومت میں وہ پاکستان کو نقصان پہنچا رہے تھے اسی لیے پاکستان ان کے مفادات کے خلاف کام کر رہا تھا۔یاد رہے کہ صدر اشرف غنی نے اقتدار میں آنے کے بعد نہ صرف بھارت کے ساتھ اسلحے کے تجویز کردہ معاہدے کو ختم کیا ہے بلکہ سکیورٹی فورسز کو مشرقی افغانستان میں پاکستان مخالف جنگجووٴں کے خلاف لڑنے کے لیے بھیجا ہے۔گارڈیئن اخبار سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ صدر غنی کا سب سے اچھا فیصلہ چھ کیڈٹس کو پاکستان ملٹری اکیڈمی تربیت کے لیے بھیجنا ہے۔

پرویز مشرف کا کہنا تھا ’پاکستان

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

14-02-2015 :تاریخ اشاعت