حکومت پاکستان نے نئی ٹیکسٹائل پالیسی کا اعلان کر دیا ،شعبہ ٹیکسٹائل کے لئے 65ارب ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل فروری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-10
تاریخ اشاعت: 2015-02-10
تاریخ اشاعت: 2015-02-10
تاریخ اشاعت: 2015-02-10
تاریخ اشاعت: 2015-02-10
تاریخ اشاعت: 2015-02-10
تاریخ اشاعت: 2015-02-10
تاریخ اشاعت: 2015-02-10
تاریخ اشاعت: 2015-02-10
تاریخ اشاعت: 2015-02-10
تاریخ اشاعت: 2015-02-10
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

تلاش کیجئے

حکومت پاکستان نے نئی ٹیکسٹائل پالیسی کا اعلان کر دیا ،شعبہ ٹیکسٹائل کے لئے 65ارب روپے مختص

اسلام آباد( اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔10فروری۔2015ء) حکومت پاکستان نے نئی ٹیکسٹائل پالیسی کا اعلان کر دیا گیا شعبہ ٹیکسٹائل کے لئے 65ارب روپے مختص کر دئیے گئے جبکہ شعبے سے وابستہ صنعتکاروں کو نرم شرائط پر قرضوں کی فراہمی کے لئے 40ارب مختص کر دئیے گئے کاٹن اور یارن کی بجائے ویلیو ایڈ ڈسیکٹر کی برآمدات کے اضافے پر توجہ دی جائے گی برآمدی ہدف 26ملین ڈالر مقرر کیا گیا ہے ٹیکسٹائل یونیورسٹی کا قیام نوجوانوں کو ہنر مند بنانے کے منصوبے اور ٹیکسٹائل نمائشوں کا انعقاد کیا جائیگا وفاقی وزیر ٹیکسٹائل سینٹر عباس خان افرید ی نے اپنے دفتر میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ حکومت نے ٹیکسٹائل کے شعبے کو خصوصی توجہ دی ہے کیونکہ اس وقت ٹیکسٹائل کے شعبے کی برآمدات پاکستان میں سب سے زیادہ ہیں انہوں نے کہاکہ اس شعبے کو درپیش مسائل اور مشکلات کم کرنے کیلئے اقدامات شروع کیے گئے ہیں ٹیکسٹائل شعبے کو گذشتہ سال کی نسبت اس سال زیادہ گیس اور بجلی فراہم کی گئی تھی جس کی وجہ سے ہماری برآمدات میں خاطر خواہ اضافہ ہوا ہے اور صنعتکاروں کی بداعتمادی کا خاتمہ ہو نے کے ساتھ ساتھ خامیوں پر قابو پایا گیا ہے انہوں نے کہا کہ تاجروں اور ایف بی آر کے مابین ٹیکس ریفنڈ کے معاملات کو ختم کرنے کے لئے بھی خصوصی اقداما ت کئے گئے ہیں انہوں نے کہا کہ ٹیکسٹائل انڈسٹری سے ایک کروڑ افراد کا روزگار وابستہ ہے اور ٹیکسٹائل کا شعبہ پاکستان میں روزگار فراہم کرنے کا سب سے سستا ذریعہ ہے انہوں نے کہاکہ ہم برانڈ ڈیویلپمنٹ سکل ڈیویلپمنٹ اور ٹیکسٹائل کی نمائش کو نئی پالیسی میں خصوصی توجہ دے رہے ہیں اس کے ساتھ ساتھ ایک ہزار یونٹس کا اڈٹ بھی کرایا جائے گا جبکہ پالیسی کے تحت ایک لاکھ 20ہزار افراد کو ٹریننگ فراہم کریں گے اور دوران ٹریننگ انہیں اعزازیہ اور

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

10-02-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان