سلیکشن کمیٹی کے کام میں دخل نہیں دیتا ،معین ‘ وقار ‘ مصباح الحق اور ٹور کمیٹی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر فروری

لاہور

تلاش کیجئے

سلیکشن کمیٹی کے کام میں دخل نہیں دیتا ،معین ‘ وقار ‘ مصباح الحق اور ٹور کمیٹی نے حفیظ کے متبادل کے طور پر ناصر جمشید کا نام پیش کیا ‘ چیئرمین پی سی بی،سلیکشن کمیٹی سے کہا آپ کے پاس موقع ہے سعید اجمل کو لے سکتے ہیں لیکن اوپننگ بلے باز کی جگہ متبادل کے طور پر اوپننگ بلے باز ہی مانگا ،سعید اجمل کی ” دوسرا “ سمیت تمام ڈلیوریز کلیئر ہو گئی ہیں،ٹور کمیٹی انہیں ورلڈ کپ کھلانا چاہے تو مجھے کوئی اعتراض نہیں، پاکستانی ٹیم اگر ہار رہی ہے تو جیتی بھی ہے ،ہار جیت کا مجھ سے کوئی تعلق نہیں ،انجریز کے مسائل پاکستانی ٹیم کو ہی نہیں دیگر ٹیموں کو بھی درپیش ہیں،شہر یار خان کی قذافی اسٹیڈیم میں میڈیا سے گفتگو

لاہور( اُردو پوائنٹ اخبارتاز ترین ۔ 8فروری 2015ء) پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین شہر یار خان نے کہا ہے کہ سلیکشن کمیٹی کے کام میں بالکل دخل نہیں دیتا ،معین خان ‘ وقار یونس ‘ مصباح الحق اور ٹور کمیٹی نے محمد حفیظ کے متبادل کے طور پر ناصر جمشید کے نام پر اتفاق کے بعد مجھ سے رابطہ کیا جسکی منظوری دیدی ہے ، محمد حفیظ کی انجری کے بعد سلیکشن کمیٹی سے کہا کہ آپ کے پاس موقع ہے سعید اجمل کو لے سکتے ہیں لیکن انہوں نے کہا کہ اوپننگ بلے باز کی جگہ متبادل کے طور پر اوپننگ بلے باز ہی چاہیے ،سعید اجمل کی ” دوسرا “ سمیت تمام ڈلیوریز کلیئر ہو گئی ہیں،پاکستانی ٹیم اگر ہار رہی ہے تو جیتی بھی ہے البتہ ہار جیت کا مجھ سے کوئی تعلق نہیں ،کھلاڑیوں کے زخمی ہونے کی خبریں صرف پاکستانی ٹیم سے نہیں آرہی دیگر ٹیمیں بھی اس کا شکار ہو رہی ہیں ۔

قذافی اسٹیڈیم میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے چیئرمین پی سی بی نے کہا کہ انٹر نیشنل کرکٹ کونسل ابھی محمد حفیظ کی انجری کا تکنیکی جائزہ لے گا جسکے بعد حتمی طور پر بتایا جائے گا لیکن محمد حفیظ کی انجری کی رپورٹ آنے کے بعد ناصر جمشید کا متبادل کے طور پر فیصلہ کر لیا گیا ہے اور وہ آئندہ چند روز میں ٹیم کو جوائن کر لیں گے ۔ ناصر جمشید کیلئے ویزے کا کوئی مسئلہ نہیں صرف راحت علی کا مسئلہ تھا جسکے لئے آسٹریلن ہائی کمشنر سے بات کی اور انہوں نے یقین دہانی کرائی کہ چوبیس گھنٹوں میں ویزے کے معاملات مکمل کر لئے جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ سعید اجمل کا ایکشن کلیئر ہونا خوشی کی بات ہے اور سعید اجمل نے بہت بڑا کام کیا ہے ۔بالنگ ایکشن کی درستگی میں انکے ایڈوائزرز خصوصاً ثقلین مشتاق‘ محمد مشتاق اور محمد اکرم نے بڑی محنت کی اور میں نے ثقلین مشتاق کو ٹیلیفون کر کے ان کا شکریہ ادا کیا ہے لیکن مجموعی طور پر اس کا سہرا سعید اجمل کے سر ہے جنہوں نے اپنے ایکشن کو کلیئر کرانے کے لئے دن رات محنت کی ۔ انہوں نے کہا کہ سعید اجمل نے بتایا کہ وہ فیصل آباد جارہے ہیں جہاں وہ ایک ،دو کلب کے میچز کھیلیں گے اسکے بعد دیگر مقابلوں میں بھی حصہ لیں گے تاکہ ان کا نیا بالنگ ایکشن جلد سیٹ ہو سکے اور انہیں مستقبل میں کسی پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے ۔

سعید اجمل کا ایکشن کلیئر ہونا پاکستان اورپاکستان کرکٹ کی بڑی کامیابی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ سعید اجمل نے ٹیسٹ میں ”دوسرا “سمیت تمام ورائٹیز کلیئر کر الی ہیں بلکہ انہوں نے چند نئی ورائٹیزبھی ایجاد کی ہیں جو انتہائی خوش آئند ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ ورلڈ کپ کے بعد ہم نے انگلینڈ ‘ بھارت اور غالباً بنگلہ دیش سے کھیلنا ہے اور تینوں سیریز میں ٹیم کو سعید اجمل کی بہت ضرورت ہو گی ۔



اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

09-02-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان