مولانافضل الرحمن نے22ویں ترمیم لانے کیلئے مشاورتی عمل تیز کردیا، مذہبی جماعتوں ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر فروری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
پچھلی خبریں -

اسلام آباد

تلاش کیجئے

مولانافضل الرحمن نے22ویں ترمیم لانے کیلئے مشاورتی عمل تیز کردیا، مذہبی جماعتوں کے بعد سیاسی جماعتوں سے بھی بات چیت شروع، نجی محفلوں میں بھی معاملہ عروج پرپہنچ گیا،مولانافضل الرحمن کی چودھری شجاعت ، مولانا سمیع الحق سے مشاورت،ملک کو موجودہ بحرانی کیفیت سے نکالنے کیلئے مل کر چلنے پر اتفاق ، قائد مسلم لیگ ق نے سربراہ جمعیت علمائے اسلام (ف) کو ہرممکن تعاون کی یقین دہانی کرادی، ذرائع

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔9فروری۔2015ء)مولانافضل الرحمن نے22ویں ترمیم لانے کیلئے مشاورتی عمل تیز کردیا، مذہبی جماعتوں کے بعد سیاسی جماعتوں سے بھی بات چیت شروع، نجی محفلوں میں بھی معاملہ عروج پرپہنچ گیا،مولانافضل الرحمن کی چودھری شجاعت ، مولانا سمیع الحق سے مشاورت،ملک کو موجودہ بحرانی کیفیت سے نکالنے کیلئے مل کر چلنے پر اتفاق کیاگیا۔ گزشتہ روز جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سینیٹراور قائمہ کمیٹی برائے داخلہ سینیٹ کے چیئرمین طلحہ محمود کے بیٹے کی دعوت ولیمہ اس وقت سیاسی اجتماع میں تبدیل ہوگئی جب جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانافضل الرحمن، مسلم لیگ ق کے سربراہ چودھری شجاعت حسین، جنرل (ر)حمید گل، جمعیت علمائے اسلام (س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق، وزیر مملکت پوسٹل سروسز مولانا عبدالغفور حیدری ، مولانا محمد امجد ، سمیت سینیٹرز ، اراکین قومی اسمبلی اور بیوروکریٹس کی ایک بڑی تعداد ایک تلے جمع تھی۔

دعوت ولیمہ میں سب سے زیادہ گہما گہمی

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

09-02-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان