تحریک انصاف بھی میری ثا لثی کی پیشکش پر رضا مند ہو گئی ہے ،آج اسحاق ڈار سے بات کروں ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر فروری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
تاریخ اشاعت: 2015-02-09
پچھلی خبریں -

سکھر

تلاش کیجئے

تحریک انصاف بھی میری ثا لثی کی پیشکش پر رضا مند ہو گئی ہے ،آج اسحاق ڈار سے بات کروں گا،خورشید شاہ ، ہما رے دو سنئیر رہنما جو قا نوں دان بھی ہیں ان کے درمیان بیٹھ کر بیچ کا راستہ نکا لیں گے، پھر چیزیں پا رلیمنٹ میں آئیں گی، دو نوں جما عتیں پیپلز پا رٹی کے کردار سے مطمئن ہیں،چاہتے ہیں عمران خان واپس پا رلیمنٹ میں آئیں اور پا رلیمنٹ میں معاملات پر بات ہو، سینٹ انتخابات میں پیپلز پارٹی کامیاب ہوگی پیپلز پارٹی کے خلاف بننے والے اتحاد کچھ نہیں بگاڑ سکتے ،میڈیا سے گفتگو

سکھر(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔9فروری۔2015ء)قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلا ف سید خورشید احمد شا ہ نے کہا ہے کہ تحریک انصاف بھی ان کی ثا لثی کی پیشکش پر رضا مند ہو گئی ہے اس لیے اس حوا لے سے آج اسحاق ڈار سے بات کروں گا اور پھر ہما رے دو سنئیر رہنما جو قا نوں دان بھی ہیں ان کے درمیان بیٹھ کر بیچ کا راستہ نکا لیں گے اور پھر چیزیں پا رلیمنٹ میں آئیں گی، دو نوں جما عتیں پیپلز پا رٹی کے کردار سے مطمئن ہیں چاہتے ہیں کہ عمران خان واپس پا رلیمنٹ میں آئیں اور پا رلیمنٹ میں معاملات پر بات ہو ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ شب سکھر کے پبلک اسکول میں اساتذہ کی خدمات کے اعتراف میں منعقدہ تقریب میں شر کت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہو ئے انہوں نے مزید کہا کہ نجکاری کے خلاف ہیں اور نہیں چا ہتے کہ کسی کی منشا پو ری ہو اور پھر ملک میں با ئیس خا ندان پیدا ہوں ہم مزدوروں کے ساتھ کھڑے ہیں رہیں گے ایم کیو ایم اور پیپلز پا رٹی میں اتحا د اور سندھ حکو مت میں ایم کیو ایم کی وا پسی کے حوا لکے سے پو چھے جا نے وا لے سوا لا ت کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ مجھے اس با رے میں کچھ معلوم نہیں اور نہ مجھے اس با رے میں اعتماد میں لیا گیا ہے جب وہ واپس آجا ئیں گے تو پا رتی سے پو چھوں گا کہ کیسے آئے پھر کچھ کہوں گا کہ اچھا ہوا یا بر ا ان کا کہنا تھا کہ جب ایم کیو ایم والے روٹھ جا تے ہیں تو میں اس کو سنجیدگی سے نہیں لیتا اور میں کہتا ہوں کہ ووہ واپس آجا ئیں گے کبھی ان پر تنقید نہیں کی کیو ن کہ آنا جانا چلتا رہتا ہے سا نحہ بلدیہ ٹا ؤں کے حوا لے سے پو چھے گئے سوال کے جواب میں کہنا تھا کہ اس قسم کے واقعات میں بلا تفریق کا روائی ہو نی چا ہیئے اور اس میں کسی قسم کی سیا سی وا بستگی نہیں دیکھنی چا ہیئے کیو نکہ سیا سی وابستگی کسی کو سرٹیفکیٹ نہیں دیتی کہ وہ قتل کرتا پھرے یا دہشت گر دی کرتا رہے میں تو سمجھتا ہوں کہ اس کے سا تھ بھی وہی سلوک ہوناچا ہیئے جو ایک مجرم کے ساتھ ہو تا ہے رینجرز رپورٹ کے منظر عام پر آنے کے حوا لے سے سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ایسی چیزیں چھپی

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

09-02-2015 :تاریخ اشاعت